اسلام میں ہجرت کا مقام

میں ہجرت کا مقام

 

مصنف : سید نصیب علی شاہ الہاشمی

 

صفحات: 82

 

خلوص اور وفا داری کا نام ہے۔اور معاشرتی زندگی میں ایک دوسرے کے ساتھ محبت وتعاون کا درس دیتا ہے۔تاکہ ایک دوسرے کے خیر اور غمخواری میں شرکت ہو سکے۔اس کے بغیر ایمان کو نامکمل قرار دیا گیا ہے۔نبی کریم ﷺ کے ارشادات مبارکہ سے معلوم ہوتا ہے کہ ہر اپنے مسلمان بھائی کے لئے بھی وہی پسند کرے جو وہ اپنے لئے پسند کرتا ہے،ورنہ اس کا ایمان مکمل نہیں ہے۔یہ خصوصیات کے علاوہ کسی دوسرے میں موجود نہیں ہیں۔ زیر کتاب ” میں ہجرت کا مقام “سید نصیب علی شاہ ہاشمی صاحب  کی تصنیف ہے۔جو  افغان جنگ کے زمانے میں لکھی گئی۔جب روس نے ظالمانہ طریقے سے افغانستان پر قبضہ کر لیا اور وہاں کے مسلمانوں پر ظلم وستم کے پہاڑ توڑ دئیے۔مسلمانوں نے اپنی عزت وآبرو اور جان ومال کو بچانے کی خاطر افغانستان سے ملحقہ ممالک کی طرف ہجرت کرنا شروع کردی۔تاکہ روس کے ظلم وستم سے بچ سکیں۔جب مہاجرین کی تعداد بڑھنے لگی تو اس سے مختلف پیدا ہونا شروع ہوگئے اور بعض لوگوں نے ان بے بس  مہاجرین کی واپسی کی رٹ لگانا شروع کر دی۔چنانچہ اہل نے لوگوں کو سمجھانا شروع کیا کہ وہ بھی آپ کے بھائی ہیں جن کی مدد کرنا آپ پر فرض ہے۔ یہ کتاب بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے۔ تعالی سے ہے کہ وہ مولف موصوف کی اس کاوش کو قبول فرمائے اوران کے میزان حسنات میں اضافہ فرمائے۔آمین

 

عناوین صفحہ نمبر
پیش لفظ 3
ایمان کا تقاضہ 7
مسلمانوں کا آپس میں ہمدردی و غمخواری 11
ہجرت اور مہاجر کی تعریف 14
ہجرت کا تقاضا اور اخلاص 16
ہجرت کا عند مقام 17
ابتداء میں ہجرت 19
ہجرت کی مختلف صورتیں اور 20
ہجرت کی برکات 27
ہجرت باقاعدہ ہے 35
ہجرت کی فضیلت میں 40
فضیلت مہاجرین 42
خیمہ ام معبد اور 54
ہجرت میں نابیناؤں کا حصہ 67
بچوں کا ہجرت میں حصہ 69
دار الہجرۃ میں مہاجرین کے زرعی 73
افغان مہاجرین ایک ضروری وضاحت 74
مہاجرین کے لیے جاگیریں 75

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
3 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...