کنوز العرب ترجمہ و تسہیل شرح شذور الذہب

کنوز العرب و تسہیل شرح شذور الذہب

 

مصنف : عبد الناصر

 

صفحات: 515

 

کسی بھی کو سمجھنے کے لیے اس کے بنیادی و قواعد کا جاننا بہت ضروری ہوتا ہے۔کوئی اس وقت تک کسی پر مکمل عبور حاصل نہیں کر سکتا جب تک وہ اس زبان کے بنیادی قواعد میں پختگی حاصل نہ کر لے۔یہ عالم فانی  بے شمار  زبانوں کی آماجگاہ ہےاور اس میں بہت سی زبانوں کا تعلق زمانہ قدیم سے ہے۔موجوہ تمام زبانوں میں سب سےقدیم زبان ہے اس کاوجود اس وقت سے ہےجب سےیہ معرض وجود میں آئی اور  یہی روزِ بنی آدم کی ہوگی۔عربی سے اہل عجم کا شغف رکھنا اہم اور ضروری ہے کیونکہ تعالیٰ کی پاک کلام بھی عربی میں ہے۔اہل کی تمام تر کا ذخیرہ عربی زبان میں مدوّن و مرتب ہے اور ان علوم سے استفادہ عربی گرائمر(نحو و صرف) کے بغیر نا ممکن ہے۔ زیر کتاب”کنوز العرب” جو کہ ابن ہشام انصاریؒ کی کتاب”شذور الذھب” کا و شرح ہے۔ ابن ہشام انصاریؒ عربی گرائمر کے مایہ ناز میں سے ہیں اس کے علاوہ بھی وہ بہت سی کتب کے مصنف بھی ہیں۔ مولانا عبد الناصر صاحب اور مولانا خورشید انور صاحب نے آسان و عام فہم اسلوب کے ساتھ اس کا و شرح کو احاطہ تحریر میں لائے ہے۔ تعالیٰ سے ہے کہ وہ مصنف و مترجمین کو اجر عظیم سے نوازے اور ان کے میزان حسنات میں اضافہ فرمائے۔ آمین

 

عناوین صفحہ نمبر
وصف صریح تعریف اور فعل مضارع سے مشابہت 149
موصول حروفی 155
مالم یکن نفع الخ نہیں ہے اضافت لفظیہ کے جواز کامعیار 161
اور فراء ابن حاجب کااختلاف 161
معارف کی ترتیب 163
حذف فاعل کے سلسلہ میں مصنف کی آراء میں تعارض 172
لیسجننہ کی مختلف تراکیب 174
اسناد ولفظی ومعنوی کی تعریفیں زعموا مطیۃ الکذاب 175
فاعل کے مظہر اور ہونکی صورت میں فاعل کی تذکیرہ تانیث کے بارے میں تین 177
اسم جنس جمعی وافرادی تعریفات وامثلہ 180
تسمع لالمعیدی میں تنی روایتیں 184
ان خی رفخیر کی متعدد توجہیات 192
ارشاد نبوی ان یکنہ کاترجمعہ ابن صیاد کاتعارف 193
قدجعلت شثقنی پر  نحوی اشکال وجواب 194
بین کاضابطہ استعمال شعر محمد نقد اپ رنقد 198
اشرب غیر میں ربع کی توضیح 212
تحدیر (محذر ومخدومنہ )کے طرق استعمال 222
مثل شبہ کی توضیح 223
ماشرطیہ اور ماصولہ کے درمیان فرق 226
تیرہ اسماء معفول مطلق کے قائم مقام ہونے ہیں 230
کفانی لم الطب میں تنازع فعلان نہیں ہے 234
ظرف زمان مبہم کی تعریف 522
تفاعل کو فاعل میں بدلنے کاقاعدہ 228
فصلہ کی تعریف 251
جنس کی تعریف میں اشکال 260
رطل قضیر اور مثقال کی مقدار درہ فارساکی تشریح 264
من جریب صاع کی مقدار 268
الفظ لات کی اصل کیاہے 289
بلن کی اصل کیا ہے 299
اذن کو لکھنے کے چار طریقے 302
لام تعلیلہ کی پہچان 307
فعل منفی لاپر ان کے اظہار واضمار کاحکم 308
لام جحد اور سام اسم کی تعریف 308
حتی کاناصبہ او رغیر ناصبہ ہونیکی 311
فا،واؤ،او رعاطفہ کے بعد ان کے اظہار اوضمار کاجوا بوجواز 315
عرض وتحضیض کی تعریف 338
زیادہ بہترین نہیں قیاسی کہنا چاہیے 361
ماضی ومضارع ہونیکے اعتبار سے شرط وجزاکی چار صورتیں نکلتی ہیں 362
جزا پر دلالت کرنے والے قرائن 375
صفت  مشبہ کے معمول پر نصب میں چار 423
صفت مشبہ کے معمول پر جر کے دخول کی شرائط عدم جواز کی صورتیں 424
لشتان مانین الیزید بن فی اندری کی اصمعی کاناجائز کہنا وجوہات اور ان کی تردید 429
ولاتکونو اا اول کافریہ ب رایک اعتراض او روجوب 439
ھا وم کی گردان او راس کااعراب 445
النحو الوافی سے ایک اسم ضابط 456
نکرہ کے عطف بیان ہونے نہ ہونے میں تین فریق 459
فاعل کے مظہر ہونے کی صورت میں فعل میں علامت تثنیہ وجمع لگائی جائے یانہیں 462
بدل اضراب بدل نسیان بدل غلط کی تعریفات 472
ضمیر مرفوع پر عطف کاعلی الاطلاق جواز 483

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
12.5 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...