میں جانتا ہوں جو تم نہیں جانتے

میں جانتا ہوں جو تم نہیں جانتے

 

مصنف : محمد سرور خان

 

صفحات: 290

 

مجید وہ عظیم الشان کتاب ہے ،جسے تعالی کا کلام ہونے کا شرف حاصل ہے۔اس کو پڑھنا باعث اجر وثواب اور اس پر عمل کرنا باعث نجات ہے۔جو قوم اسے تھام لیتی ہے وہ رفعت وبلندی کے اعلی ترین مقام پر فائز ہو جاتی ہے،اور جو اسے پس پشت ڈال دیتی ہے ،وہ ذلیل وخوار ہو کر رہ جاتی ہے۔یہ کتاب مبین انسانیت کے لئے دستور اور ضابطہ زندگی کی حیثیت رکھتی ہے۔یہ انسانیت کو راہ راست پر لانے والی ،بھٹکے ہووں کو صراط مستقیم پر چلانے والی ،قعر مذلت میں گرے ہووں کو اوج ثریا پر لے جانے والے ،اور شیطان کی بندگی کرنے والوں کو رحمن کی بندگی سکھلانے والی ہے۔اہل نے  عامۃ الناس  کے لئے کے الگ الگ ،متنوع اور منفرد قسم کے اسالیب اختیار کئے ہیں ،تاکہ مخلوق اپنے معبود حقیقی کے کلام سے آگاہ ہو کر اس کے مطابق  اپنی زندگیاں گزار سکیں۔ زیر کتاب ” میں جانتا ہوں جو تم نہیں جانتے ” محترم محمد سرور خان صاحب کی تصنیف ہے ، جس میں انہوں نے مجید  کے کو سامنے رکھ کر مسلمانوں کو عمل کی ترغیب دی ہے۔آپ کی اس پہلے بھی ایک کتاب “کیا تم دیکھتے نہیں”سائٹ پر اپلوڈ کی جا چکی ہے ۔ تعالی مولفین کو اس کاوش پر جزائے خیر عطا فرمائے،ہمیں قرآنی برکات سے استفادہ کرنے کی توفیق دے۔آمین

 

عناوین صفحہ نمبر
صرف ایک نصیحت سو چئے 1
میں جانتا ہوں جو تم نہیں جانتے 9
اور کا ئتا ت 22
کی شخصیت 32
 ہر نفس اپنےعمل کا ذمہ دار ہے 38
انسا نوں کی تین قسمیں : اس د نیا میں 41
مومن : انسانو ں کی پہلی قسم 52
کافر: انسا نوں کی دوسر ی قسم 57
میری قو م 60
منا فق :  انسانوں کی تیسری قسم 61
انسانو ں کی تین قسمیں  : آخر ت کی زند گی میں 67
نفسیات قر  آ  ن کے آ ئنیے میں 71
کا ش تم ان کو اس  و قت د یکھو  جب یہ  جہنم کے  کنارے کھڑ ے کیے جا ئیں گئے 71
حسد اور د شمنی کے  جذبات  ان کے سینوں سے نکال ڈا لیں  گے 72
جو مشکل حالات میں ہجر ت  کر کے  آئے ان کے د ر جات بلند ہیں 73
جو لوگ ایمان نہیں لاتے  ، اپنا  نقصا ن کر تے ہیں 74
ظالم عذاب  کو  د یکھیں  تو کہیں گئے  ہمیں تھوڑ ی سی مہلت د ی جا ئے 75
ظالم جب عذاب  کو  د یکھ لیں گئے   تو   ان کو  مہلت د ی جا ئے گی 75
اگر ہم رسو ل  بھیجنے  سےپہلے  عذا ب  سے ہلاک  کر د یتے تو کہتے کہ تو نے کوئی رسو ل  کیو ں نہ بھیجا؟ 76
اے ہما رے رب  ہم پر  ہما ری کم بختی غا لب ہو گی اور ہم را ستے سے بھٹک گئے تھے 76
تبا ہی کی آ گ میں جھو نک د ئے جا ئیں  گے تو کہیں گے کہ ہم نے اور اس کے رسو ل  کا حکم مانا ہو تا 77
و ہ آ پس میں ایک دو سر ے  کو مدد کے  لئے چلا ئیں گے  ، لیکن ظلم کر نے و ا لوں کا ساتھ  کو ن دے گا 77
کیا تمہا رے پا س  ہما رے رسو ل نہیں آتے رہے ، لیکن ان کو د نیا کی زندگی  نے  دھو کہ  میں ڈال رکھا تھا 78
ا  ن پر ہم فر شتے بھی اتا رد یتے اور مردے ان سے باتیں کر نے  لگتے، تب بھی یہ ایما ن نہ لا تے 79
ان کو  ان کے  اعمال  کے برے بد لے ملے 79
ان کے پا س نہیں  ، بے سو چے سمجھے باتیں کر تے ہیں 80
ہم کو ا پنے گناہوں  کا اقرار ر ہے تو کیا اس عذاب سے نکلنے  کاکو ئی را ستہ ہے 81
جب تم کو تکلیف  پہنچتی  ہے تو  کے سوا   سب  گم   ہوجاتے ہیں  اور اللہ ہی تم کو ڈو بنے سے بچاتا ہے 82
جب انسان  کو نعمت  دی جاتی ہے  تو منہ پھیر لیتا ہے 83
کہ دو کہ میرے رب کی  کی رحمت کے  خزانے تمہارے ہاتھ میں ہو تے تو خر چ ہو جانے کو  خوف سے با ند ھ  کر رکھتے 83
تکلیف  میں  اللہ  پکا رتے  ہو ، تکلیف دور  ہو جاتی ہے  تو شر ک کر نے  لگتے ہو 84
جو اس دنیامیں اند ھا ہو گا 85
ہی اپنے بندوں  سے خبر دار اور ان کو دیکھنے  والا ہے 85
ہی نے پیدا کیا  اور وہی مو ت د یتا ہے 86
سب سب سے  بڑھ  کر  جھگڑ الو ہے 87
انسا ن بڑا کمزور پیدا ہوا ہے 88
اے قو م کی عبادت کر و 89
قر آن  کے آئینے میں بلا 101
قر آ ن  کے  لئے 107
وہ آیا ت  جس میں تعا لی ٰنے انسانو ں  سے بر اہ را ست خطاب کیا ہے
 اے انسا نوں اپنے رب کی عبادت کر و 109
اے  انسانوں : شیطان کے قدموں  پر نہ چلو 109
اے  انسانوں : اپنے رب سے ڈرو 110
اے  انسانوں :رسو ل پر ایمان لاؤ 110
اے  انسانو :تمہا رے پاس تمہارے رب کی طر ف سے دلیل آچکی 111
اے  انسانو :میں تم سب  کی طر ف کا رسو ل   ہوں 111
اے  انسانو :تمہارے پا س نصیحت آ چکی  ہے 112
اے  انسانو :مجھ کو یہی حکم ہے  کہ  میں ایمان لا  نے والے میں ہو ں 113
اے  انسانو : تمہا رے پا س سے آچکا ہے 114
اے  انسانو :اپنے رب سے ڈرو ، تقوب شعا ری  اختیار کئے رہو 114
اے  انسانو : اگر تم کو مر نے کےبعدجی  ا ٹھنے  میں شک  ہو تو 115
اے  انسانو : میں تو  تم کو کھلم  کھلا نصیحت  کر نے و الا ہوں 116
اے  انسانو : ایک مثال کو غور سےسنو 116
اے  انسانو :اس دن کا  خوف کرو کہ   نہ تو باپ  اپنے بیٹے  کے کچھ کام نہ آئے 117
اے  انسانو : کے احسانات  کو یاد کر و 118
اے  انسانو : کا وعدہ سچا  ہے 118
اے  انسانو :تم سب کےمختاج ہو 119
اے  انسانو :ہم نےتم کوایک کو مرداورایک عورت سےپیدا کیا 119
کیا  انسان  صر ف  ایمان  لانے سےچھوڑ دیا  جائے گا 119
اے  انسانو :اگر تم کو چا ہے تو تم کو فنا  کر دے 120
اور ہم نے کو اپنے ماں باپ کے ساتھ  نیک سلوک  کر نے کاحکم دیا ہے 120
کو تاکید ہے  کہ ماں باپ کا شکر ادا کر ے 121
انسا ن کو ماں باپ کے ساتھ  بھلائی کر نے کا حکم  ہے 121
اے آدم کی اولا د  ہم نے تم پر اتا را 123
اے  آدم کی اولا د !  کھا ؤ پیو اوربے جا نہ اڑاؤ 124
اے بنی آدم ! جو شخص ایمان  لا ئے گا ، خو ف اورغم سے دور رہے گا 124
اے آدم کی اولاد!کیا ہم نے تم سے کہہ نہیں دیا تھا  کہ شیطان  تمہارا  کھلا دشمن  ہے 125
انسا ن اور اس کا شعور 126
ان آیا ت پر غو ر کیجئے 129
قر ض لینے والا  اپنی شرا ئط خود لکھوائے 132
جو لوگ   اپنے آپ پر ظلم  کر تے ہیں 135
یہ کتا ب جو مومنوں پر نا زل ہو ئی ہے 138
احسان  کابد لہ  احسان کےسوا  کچھ   نہیں 139
ایک شخص مر د مومن 142
قر آن حکیم  اور مذہبی  نظریات  کی تر دید 148
انا  بشر مثلکم 150
جان بچانے کے لئے  جھوٹ بو لنا  جائز ہے 154
جو چاہتا  ہے کرتا ہے 157
حضرت عیسیٰؑ اور حضرت  مریم ؑ  کھانا  کھاتے تھے 162
عقل سے کام لو دو لت  کھلا رکھو 171
چند  الفاظ  اور ان کے  معنی
زکو ٰۃ 182
پر ہیز گار   اور  گناہ گار 189
تقو ی شعا ر او ر کتاب 192
کی رضا 199
خو ف 206
سحر 212
ایک عا لم گیر جذبہ 221
قر ٖنی ئیں
اے ہمارے  رب  ہما ری  یہ خد مت  قبو ل فر ما 236
اے رب!ہم کو دنیا میں  بھی نعمت عطا  فرما 236
اے رب! ہم پر  صبر  کے دہانے  کھول  دے 237
اے رب! اگر ہم  سے  بھول چو ک  ہوگی  ہو تو  جو اب  ہو  طلب  نہ کر نا 238
اے رب!ہمارے  دلو ں  میں ٹیڑھا  پن  نہ آجا ئے 238
  اے رب!ہمیں عذاب  النار  سے  محفوظ  رکھ 239
اے رب!تو ہم  کواپنے ماننے  والوں  میں لکھ  رکھ 239
اے رب!ہم  کو ثابت  قد م  رکھ 240
اے رب! ہم  ایمان  لے   آ ئے  ہم  کو د نیا  سے نیک  بندو ں  کے ساتھ  اٹھا 240
اے رب! جن  چیزوں  کے تو نے   وعدے کئے ہیں  وہ ہمیں  عطا  فرما 241
اے رب! ہم  ایمان  لے آ ئے  ہم  کو اپنے  ماننے وا لوں  میں لکھ  ر کھ 241
اے رب!اگر  تو ہم  پر رحم  نہیں  کر ے گا  تو ہم   تبا ہ  ہو جا ئیں  گے 242
اے رب! ہم  کو ظالموں  کے ساتھ  شامل  نہ کر نا 242
اے رب!ہمیں ما رنا  تو مسلمان  ہی  ما رنا 243
اے رب!   ہم کو ظالمو ں  کے ہا تھو ں  آزما ئش  میں نہ  ڈا ل 243
اے رب!جو کچھ ہم چھپاتے  ہیں جو  ظا ہر کر تے ہیں  تو سب جانتا ہے 244
اے رب!حساب  کتا ب کے دن  میری  اور میر ے ما ں با پ کی   اور مو منو ں  کی مغفر ت  کر نا 244
اے رب! ہم پر  رحمت نازل فر ما 244
اے رب! ہما ری مغفرت  کر 245
اے رب!دو زخ کے عذاب  کو ہم  سے دور  ر کِھ 245
اے رب!ہمیں  تقویٰ  شعا ر و ں  کا نام  بنا 246
اے رب!دوزخ کے عذاب  سے دو رر کھ  اور  جنت  میں  داخل کر 246
اے رب!ہما ری  اور ہما رے  بھا ئیو ں  کی مغفرت  کر 247
اے رب!سفر  زند گی  میں ہما را  ہر قدم  تیر ی  اطاعت  گزا ری میں اٹھے 248
اے رب!ہمیں  کافرو ں  کے ہاتھوں  عذاب  نہ لٹا نا 248
اے رب! ہمارا  نو ر (بصیرت ) ہما رے  لئے   پو را کر 249
ان الله و مكلئكته  يصلون  علي  النبي ( شان  رسالت ) 250

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
5.3 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...