تعمیر ملت اور دینی ادارے

تعمیر ملت اور دینی ادارے

 

مصنف : رفیق احمد رئیس سلفی

 

صفحات: 128

 

مسلمانوں کے دینی مدارس و تربیت کے ادارے ہیں ۔ یہاں ذمہ دار شہری بنائے جاتے ہیں۔ یہاں سے فارغ ہوکر بچے قوم او رملک کی اپنی سکت اور صلاحیت کے مطابق خدمت کرتے ہیں۔ لیکن ان پر طرح طرح کے الزامات لگائے جاتے ہیں اور شرپسند عناصر مسلمانوں اور تعمیرملت کے دینی اداروں کی خراب کرنے میں شب وروز مصروف ہے۔ دنیا کا ابلیسی نظام مسلمانوں کی بیداری سے ہمیشہ خائف رہتا ہے۔ اس کی پوری کوشش ہے کہ یہ امت کسی طرح اپنے پیروں پر کھڑی نہ ہوسکے۔ چنانچہ اس کے و سائل کو برباد کیا جارہا ہے یا ان کو اپنی جاگیر بنانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ اور مسلمانوں کو ہرجگہ قدامت پرست، متشدد اور دہشت گردقرار دیا جارہا ہے۔ ہمارے سربراہان مملکت اور دینی رہنماؤں کو بات کہنے کی جرأت نہیں ہے بلکہ بہت سے یاب سادہ مزاج، پسند اور مخلص عوام کو مسلسل گمراہ کر رہے ہیں۔ اور لاکھوں مسلمانوں کو خاک وخون میں تڑپانے کی اصل حقیقت سے رورشناس نہیں کراتے۔ زیر کتاب ’’تعمیر ملت اور دینی ادارے‘‘ مولانا رفیق احمد رئیس سلفی کی تصنیف ہے۔ اس میں انہوں نے مسلمانوں کے کئی حساس پر بحث کی ہے۔ خاص طور پر پر کئی پہلوؤں سے روشنی ڈالی گئی ہے اور عالمی سطح پر مسلمانوں پر جو الزامات عائد کیے جاتے ہیں ان کی حقیقت کا جائزہ لیاکیا ہے۔ اور ان کے پس جو ذہنیت کارفرما ہےاسے سمجھنے کی کوشش کی ہے۔ نیز مسلمانوں کی تعلیمی صورت حال کا تجزیہ کیا ہے اور اس پہلو سے ان کی زبوں حالی کو دور کرنےکے لیے چند تجاویز پیش کی گی ہیں۔

 

عناوین صفحہ نمبر
پیش لفظ 5
ملت اسلامیہ ہند مسائل، اور 9
مسلمانوں کے عصری تعلیمی ادارے اور ان کے 17
میں شرعی علوم کی اعلیٰ کی ضرورت، امکانات اور طریقہ کار 22
میں نسواں کی اہمیت 26
نسواں کی وقت کی اہم ضرورت 29
تعلیمی اداروں کی امعیار، ایک لمحہ فکریہ 32
تعمیر انسانیت میں اسلامیہ کا کردار ( کے بعد ایک جائزہ) 40
چند اہم موضوعات پر علمی ایک دینی و ملی ضرورت 50
ملک کی موجودہ صورت حال اور ہماری دینی جماعتیں 58
اہل کی تکفیر، ایک سنگین معاملہ 65
مخلصانہ رہنمائی اور تعاون، ایک ملی ضرورت 70
دینی صحافت کا مزاج اور اس کی ترجیحات 79
علمائے موجودین کی اعتراف اور تعارف 86
انتخابی میں مسلمانوں کی حصہ داری اور نمائندگی 89
مسلمانوں کی علاحدہ سیاسی جماعت احکامات اور اندیشے 94
انصاف اور کے لیے آج دنیا پریشان ہے 98
انصاف کا ترازو جھکنے نہ پائے 103
مسلمانوں پر تشدد پسندی کا بے بنیاد الزام 106
انصاف اور کے لیے آج دنیا پریشان ہے 98
انصاف کا ترازو جھکنے نہ پائے 103
مسلمانوں پر تشدد پسندی کا بے بنیاد الزام 106
کے مظلوم 109
کے نظام سے پریشان کیوں؟ 113
کا رجسٹریشن اور اس کے مضمرات 116

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
4 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...