تاریخ ابن کثیرترجمہ البدایہ والنہایہ ۔ جلد7

ابن کثیرترجمہ البدایہ والنہایہ ۔ جلد7

 

مصنف : حافظ عماد الدین ابن کثیر

 

صفحات: 486

 

اس وقت آپ کے سامنے حافظ عماد الدین ابن کثیر کی شہرہ آفاق کتاب ’البدایۃ والنہایۃ‘ کا قالب ’ ابن کثیر‘ کی صورت میں موجود ہے۔ اگر آپ تاریخوں کامطالعہ کریں تو آپ کو صاف طور پر یہ بات معلوم ہو گی کہ مؤرخوں نے اپنی تاریخوں میں تسلسل زمانی کا برابر خیال رکھا ہے ان کی ہر آدم ؑ کی کے ذکر سے شروع ہوتی ہے اور پھر اور بیانات کا سلسلہ ان واقعات تک پہنچتا ہے جن میں ان کا لکھنے والا سانس لے رہا ہے ۔ ابن کثیر کی یہ بھی دوسری تاریخوں کی طرح ابتدائے آفرینش سے شروع ہوتی ہے اور اس کے بعد اور مرسلین کے حالات سامنے آتے ہیں، یہ کئی لحاظ سے اہم ہیں۔ اس سے پہلے جو تاریخیں لکھی گئی ہیں یا اس کے بعد جن تاریخوں کو دریافت کیا گیا ہے ان میں یہ تمام واقعات اساطیری سے لیے گئے ہیں یا ان کو اسرائیلی روایتوں پر اکتفاء کرتے ہوئے آگے بڑھایا گیا ہے اس کے برعکس ابن کثیر نے اپنا تمام مواد ہی سے لیا ہے اور یہ اس کے ایمان اور یقین کے مضبوطی کی علامت ہے ۔ ابن کثیر حضرت آدم سے لے کر عراق و بغداد میں تاتاریوں کے حملوں تک وسیع اور عریض زمانے کا احاطہ کرتی ہے اور غالباً سب سے پہلی تاریخ ہے جس میں ہزاروں لاکھوں سال کی روز و شب کی گردشوں، کروٹوں، انقلابوں اور حکومتوں کومحفوظ کیا گیا ہے۔ پھر ابن کثیر نے جن حالات و واقعات کا حاطہ کیا ہے وہ اس قدر صحیح اور مستند ہیں کہ ان کا مقابلہ کوئی دوسری کتاب نہیں کر سکتی۔

 

عناوین صفحہ نمبر
ہجرت کا تیرہواں سال 15
معرکہ یرموک 18
جنگ یرموک کے بعد شام کی امارت کا حضرت خالد سے حضرت ابوعبیدہ  ؓ کی طرف منتقل ہونا 32
حضرت خالد ؓکے شام آنے کے بعد عراق میں جرت کامعرکہ 33
حضرت عمر بن الخطاب ؓکی 35
فتح دمشق 36
باب
فتح دمشق کے متعلق کا اختلاف 41
باب
چشمہ شہداء 43
معرکہ فحل 43
اس وقت ارض عراق میں جو قتال ہوا 44
النمارق کا معرکہ 45
معرکہ جسرابی عبید اور المسلمین او ربہت سی مخلوق کا قتل 46
البویب کا معرکہ جس میں مسلمانوں نے ایرانیوں سے بدلہ لیا 48
باب
حضرت سعد بن ابی وقاص ؓکا عراق بننا 50
اختلاف کے بعد ایرانیوں کے یزدگرد کے پاس جمع ہونےکا بیان 50
13 ہجری میں ہونے والے 51
حافظ ذہبی کے موافق، حروف ابجد کے مطابق اس سال میں وفات پانے والوں کا ذکر 52
ہجرت کا چودہواں سال 56
جنگ قادسیہ 59
باب
قادسیہ کی حیرت انگیز جنگ 67
اس سال میں وفات پانے والے مشاہیر کا تذکرہ 74
پندرہواں سال 77
حمص کا پہلا معرکہ 78
قنسرین کا معرکہ 78
قیساریہ کا  معرکہ 79
اجنادین کا معرکہ 80
حضرت عمر ؓکے ہاتھوں کی فتح 81
معرکہ نہر شیر 89
حروف ابجد کے مطابق اس سال میں وفات پانے والوں کا ذکر 90
مدائن کی فتح کا بیان 92
معرکہ جلولاء 98
فتح حلوان کابیان 101
تکریب اور موصل کی فتح 101
سرزمین عراق میں ماسبذان کی فتح 102
اس سال میں قرقیسیا اور ھیت کی فتح 103
17 ہجری 105
حمص میں رومیوں کا حضرت ابوعبیدہ کا محاصرہ کرنا اور حضرت عمر کا شام آنا 106
جزیرہ کی فتح 107
طاعون عمواس کے کچھ حالات 109
ایک عجیب                 واقعہ  جس میں حضرت خالد کو قنسرین سے معزول کیا گیا 112
اہواز، نساذر اور نہر تیری کی فتح 115
پہلی دفعہ تستر کا صلح سے فتح ہونا 116
بحرین کی جانب سے بلادفارس کے ساتھ جنگ کا بیان، ابن جریر بحوالہ سیف 117
دوسری دفعہ تستر کے فتح ہونے اور ہرمزان کے قید ہونے اور اسے حضرت عمر ؓکی خدمت میں بھیجے جانے کا بیان 118
فتح سویز 120
18ہجری 124
حضرت الحارث بن ہشام ؓ 129
حضرت شرجیل بن حسنہ ؓ 129
حضرت عامر بن بن الجراح ؓ 129
حضرت الفضل بن عباس بن عبدالمطلب ؓ 130
حضرت معاذ بن جبل ؓ 130
حضرت بن ابی سفیان ؓ 131
حضرت ابوجندل بن سہیل ؓ 132
19ہجری 132
اس سال میں وفا ت پانے والے اعیان کا ذکر 133
20ہجری 133
فتح کی کہانی، کی زبانی 134
نیل کا واقعہ 137
وفات پان ےوالے اعیان کا ذکر 139
حضرت انیس بن مرثد ابی مرثد الغنوی ؓ 140
حضرت ابوبکر کے غلام بن ابی رباح الحبشی المؤذن ؓ 140
حضرت سعید بن عامر بن خذیم ؓ 141
حضرت عیاض بن غنم ؓ 141
حضرت ابوسفیان بن الحارث ؓ 141
حضرت ابوالہیثم بن التیہان ؓ 142
حضرت زینب بنت حجش ؓ 142
رسول صلی اللہ علیہ والہ وسلم کی پھوپھی حضرت صفیہ بنت عبدالمطلب ؓ 143
حضرت عویم بن ساعدہ انصاری ؓ 144
حضرت بشر بن عمرو بن حنش ؓ 144
حضرت ابوخراشہ خویلد بن مرۃ الہذلی ؓ 144
21ہجری 144
معرکہ نہاوند 144
21ہجری میں وفات پانے والوں کا ذکر 155
حضرت خالد بن ولید ؓ 155
حضرت طلیحہ بن خویلد ؓ 161
حضرت عمرو بن معدیکرب ؓ 162
حضرت العلاء بن الحضرمی ؓ 163
حضرت نعمان بن مقرن بن عائذ المزنی ؓ 163
22ہجری 164
اس میں بہت سی فتوحات حاصل ہوئیں جن میں ہمدان کا دوبارہ فتح ہونا بھی شامل ہے پھر اس کے بعد رے اور آذربائیجان فتح ہوئے 165
رے کی فتح 165
قومس کی فتح 165
جرجان کی فتح 166
آذربائیجان کی فتح 166
باب کی فتح 166
ترکوں سے پہلی جنگ 167
سد کا واقعہ 168
سد کے بقیہ حالات 169
یزدگر بن شہریار بن کسری کا واقعہ 171
احنف بن قیس اور خراسان 171
23ہجری 176
حضرت عمر بن الخظاب ؓکی وفات 176
فسا اور دارابجرد کی فتح اور ساریہ بن زنیم کا واقعہ 176
غزوہ اکراد 179
سلمہ بن قیس اشجعی اور اکراد کے حالات 179
آپ کا حلیہ 186
آپ کی بیویوں، بیٹوں او ربیٹیوں کا ذکر 187
آپ کے بعض مراثی کا ذکر

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
12 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...