دعوت دین کی اہمیت اور تقاضے

دعوت کی اہمیت اور تقاضے

 

مصنف :

 

صفحات: 52

 

تعالیٰ  نے انسان  کی فطرت  کے اندر نیکی اور بدی کے پہچاننے کی قابلیت اور نیکی  کے اختیار کرنے  اور بدی  سے  بچنے کی خواہش وودیعت کردی ہے ۔تمام کرام نے   دعوت کے ذریعے پیغام الٰہی کو  لوگوں  تک پہنچایا او ران کو شیطان  سے  بچنے اور رحمنٰ  کے راستے   پر چلنے کی دعوت  دی ۔دعوت اور شرعیہ کی دینا شیوہ پیغمبری ہے ۔تمام و رسل کی بنیادی ذمہ داری اور دعوت وابلاغ ہی رہی ہے،امت مسلمہ کو دیگر امم سے فوقیت بھی اسی فریضہ دعوت کی وجہ  سے  ہے اور دعوت دین ایک اہم دینی فریضہ ہے ،جو اہل اسلام  کی اصلاح ، استحکام دین اور دوام کا مؤثر ذریعہ ہے۔لہذا ہر پر لازم ہے کہ اسے شریعت کا جتنا ہو ، سے جتنی واقفیت ہو اوردین کے جس قدر سے آگاہی ہو وہ  دوسر وں تک پہنچائے۔علماو فضلا اور واعظین و مبلغین   پر مزید ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ فریضہ دعوت کو دینی وشرعی ذمہ داری سمجھیں اور دعوت کے کام کو مزید عمدہ طریقے سے سرانجام دیں۔دین کا پیغام ہر فرد تک پہنچانے  کے لیے ضروری ہے کہ دعوت کے کام کو متحرک کیا جائے، منہج  دعوت  اور اصول  دعوت  کے حوالے  سے   اہل  علم  اور زبان  میں کئی کتب تصنیف کی  ہیں  ۔ان میں سے ڈاکٹر فضل الٰہی ﷾ کی  کتب قابل ذکر ہیں  جوکہ آسان فہم  او ردعوت کا ذوق ،شوق اور دعوتی بیداری پیدا کرنے میں ممد و معاون ہیں۔زیر کتاب  ’’ دعوت کی اہمیت اور تقاضے ‘‘ مولانا  امین احسن اصلاحی  کی تصنیف ہے  جس  میں انہوں نے  دعو ت کی اہمیت وضرورت کو  آسا ن فہم انداز میں  بیان کیا ہے  ۔ ان کی  اس  کاوش کو  قبول فرمائے او راسے عوام الناس کے   نفع بخش بنائے (آمین)

 

عناوین صفحہ نمبر
پیش لفظ 5
کس لیے 7
کی ضرورت 7
کے باب میں الہٰی 8
خاتم الانبیاء کی بعثت 9
آنحضرت ﷺ کی بعثت کے دو پہلو 10
کی حفاظت کے لیے دو خاص انتظام 11
بحیثیت ایک فریضہ رسالت 13
کی شرائط 14
پہلی تا چھٹی شرط 14
مسلمانوں کا فرض منصبی 21
داعی کی ذمہ داری 23
کا طریق تربیت 32
اجتماعی تربیت کی پہلی اصل 33
خلاصہ بحث 48

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
1.8 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Leave A Reply