فقہ اسلامی کے ذیلی ماخذ

فقہ کے ذیلی ماخذ

 

مصنف : محمد نعمان

 

صفحات: 363

 

فقہ کا سب سے پہلا اور بنیادی ماخذ کریم ہے‘ قرآن کریم تشریع اسلامی کی بنیاد اور کا اصلِ اصلو ہے‘ بلا فرق وامتیاز تمام انسانوں کے لیے امام وپیشوا ہے‘ قرآن کریم کی حیثیت بنیادی دستور کی ہے‘ اس لیے اس میں وکلیات کے بیان پر اکتفاء کیا گیا ہے اور معاملات کی تفصیلات اور کی فروع وجزئیات سے بحث نہیں کی گئی ہے اور اگر کہیں کی گئی ہے تو بہت کم‘ ایسا ہی ہونا بھی چاہیے تھا اگر مجید میں بالعموم مسائل ومعاملات پر تفصیلی بحثیں کی جاتیں تو پھر طوالت کے باعث اس کی دستوری شان باقی نہیں رہتی‘ اور اگر تک پیش آنے والے اس میں بیان کر دیئے جاتے تو ضخیم کتاب کی شکل میں ہوتا تو اس سے استفادہ دشوار ہو جانا تھا ۔فروعی مسائل کے کے لیے بہت سی کتب تصنیف کی گئی ہیں جن میں کتب کو بنیادی حیثیت حاصل ہے۔زیرِ کتاب بھی کتب میں سے ایک ہے جس میں  فقہ کی مآخذ کو بیان کیا گیا ہے جیسا کہ قرآن‘ اور اجماع تین بڑے بنیادی مآخذ ہیں لیکن ان کے ذیل میں آنے والے موضوعات پر میں قدرے تفصیل کام بہت کم ہے جیسا کہ قیاس‘ استحسان‘ استصحاب حال‘ مصالح مرسلہ‘ عرف وعادت‘ قولِ صحابی‘ سدِّ ذرائع اور شرائع من قبلنا۔اس کتاب میں ان تمام کو قدرے تفصیل اور آسان فہم میں عوام تک پہنچانے کی کوشش کی گئی ہے۔ ہر بات کو باحوالہ اور عبارات نقل کرنے کی بھی کوشش کی گئی ہے تاکہ اہل حضرات اصل مرجع کا خود ہی مطالعہ کریں۔ کتاب کا اسلوب نہایت عمدہ‘سادہ اور عام فہم ہے۔ یہ کتاب’’ فقہ کے ذیلی ماخذ ‘‘مولانا محمد نعمان صاحب کی تصنیف کردہ ہے۔آپ تصنیف وتالیف کا عمدہ شوق رکھتے ہیں‘ اس کتاب کے علاوہ آپ کی درجنوں  کتب اور  بھی ہیں۔ ہے کہ تعالیٰ مؤلف وجملہ معاونین ومساعدین کو اجر جزیل سے نوازے اور اس کتاب کو ان کی میزان میں حسنات کا ذخیرہ بنا دے اور اس کا نفع عام فرما دے۔(آمین)

 

عناوین صفحہ نمبر
عرض مولف 22
قیاس کی لغوی 29
قیاس کی اصطلاحی تعریف 29
عبدالجبارمعتزلی کےنزدیک 29
امام ابوہاشم ﷫کےنزدیک 29
امام ابوالحسین بصری ﷫کےنزدیک 30
علامہ آمدی کاامام ہاشم اورعبدالجبارمعتزلی کی تعریفات پررد 30
قاضی بیضاوی ﷫کےنزدیک 31
علامہ تاج الدین سبکی ﷫ کےنزدیک 31
علامہ آمدی اورعلامہ ابن حاجب ﷫کےنزدیک 31
علامہ عبیداللہ بن مسعود﷫کےنزدیک 31
ملاجیون ﷫کےنزدیک 32
امام ابوزہرہ ﷫کےنزدیک قیاس کی جامع تعریف 33
کریم سےدومثالیں 34
رسول سےدومثالیں 35
حجیت قیاس پرچوبیس سے استدلال 36
امام شافعی ﷫حجیت قیاس پرچھ سےاستدلال 38
حجیت قیاس پرامام شافعی﷫کےتین 38
امام شافعی ﷫کےنزدیک قیاس کی تعریف 38
علامہ ابوبکرجصاص ﷫کاحجیت قیاس پراٹھارہ سےاستدلال 39
حجیت قیاس پرچودہ سے استدلال 56
﷫کاحجیت قیاس پرحدیث سےاستدلال 56
علامہ ابوبکرجصاص ﷫کاحجیت قیاس پرسات سےاستدلال 57
آپﷺ سےصراحتاقیاس کاثبوت 63
جن میں مماثلت کی بنیادپراحکام مستنبط کیےگئے 65
نےخلافت کوامامت پرقیاس کیا 68
حجیت قیاس پرحضرت عمر﷜کےقول سےاستدلال 70
حجیت قیاس پرحضرت علی﷜کےقول سےاستدلال 71
علامہ ابوبکرجصاص ﷫کاحجیت قیاس پرآثارصحابہ سےاستدلال 71
کاورقیاس سےاستنباط 72
فقہاءکےہاں قیاس کامقام اورقیاسی استنباط 74
حجیت قیاس کےعقلی 76
علامہ ابوالحسن الکرخی ﷫کاحجیت قیاس پرعقلی استدلال 79
ابوالحسین بصری﷫کاحجیت قیاس پرعقلی استدلال 80
علامہ فخرالاسلام بزدودی ﷫کاحجیت قیاس پرعقلی استدلال 81
امام غزالی ﷫کاحجیت قیاس پرفلسفی اندازمیں استدلال 82
قیاس انسانی فطرت ہے 84
منکرین قیاس کےدلائل اوران کےجوابات 86
کابیان 95
ارکان قیام 95
قیاس کےچارارکان ہیں 95
رکن اول ودوم 96
رکن سوم 96
قیاس کےلیے چارشرائط 96
رکن چہارم 98
علت کی تعریف 98
علت اورحکمت مین فرق 99
شرائط علت 99
متفق علیہ شرائط علت چارہیں 99
وصف مناسب کی اقسام 101
المناسب الموثر 102
المناسب الملانم 102
المناسب المرسل 102
المناسب الملغی 103
قیاس کی اقسام 105
قیاس العکس قیاس الطرد 105
قیاس ظنی ہےیایقینی 105
قیاس اوردلالت النص میں فرق 105
قیاس اوراستحسان میں فرق 106
مسالک العلۃ 107
مشہورمسالک تین ہیں 107
نص 107
اجماع 109
اجتہادوفقہی 109
قیاس اورنصوص کےمابین معارضہ 110
قیاس اروخبرواحد 110
خبرواحدقیاس سےمقدم ہے 111
حناف کےہاں ضعیف قیاس پرمقدم ہے 111
قیاس کاقانونی مقام 115
حدودوتعزیرات اورقیاس 116
قیاس کی استحسان پرترجیح کی بیس (20)مثالیں
سجدہ تلاوت کی رکوع کےذریعہ ادائیگی 118
مسلم فیہ کی مقدارکےبارےمیں 119
سجدہ کی آیت کادورکعتوں میں تکرار 120
مہرمثل کےعوض رہن شدہ چیزکیامتعہ کی جگہ بھی رہن بن سکتی ہے 121
مباشرت فاحشنہ سےنقض 121
زمین کےغاصب پرضمان 122
پڑوسی کسےکہیں گے 122
آبادی میں واقعہ مکان کوتوڑنےکاحکم 123
مستامن کی وکالت کب تک باقی رہےگی 124
تعلیق کاایک 124
شہودواحصان کارجوع 125
متعددلوگوں کاکنویں میں مردہ پایاجانا 126
آدھےمکاتب کی مولی سےخریداری 127
لکڑیاں چننےمیں شرکت کاایک 128
راستہ میں انتقال کرجانےوالےحاجی کی طرف سےحج کیاجائے 129
مسافرگھرواپس آکرروزہ توڑدیےتوکیاحکم ہے؟ 130
قسم کھالی کہ دس روپیہ میں نہیں بیچوں گاپھرلوروپیہ میں بیچ دیا 130
دھلائی کامشترک کاروبارکرنےوالوں پرایک دعوی 131
شک کی وجہ سےقسم نہ ٹوٹےگی 133
معتوہ بیٹےکےلیے والدہ کاباندی خریدنا 133
استحسان
لفظ استحسان کی لغوی 133
استحسان کی اصطلاحی تعریف 135
امام کرخی ﷫کےنزدیک 135
علامہ سرخسی ﷫کےنزدیک 135
علامہ صدرالشریعہ ﷫کےنزدیک 138
علامہ ابن نجیم ﷫کےنزدیک 138
استحسان کاثبوت کریم سے 139
استحسان کاوجودآپﷺ کےکلام میں 141
حضرات سےاستحسان پرعمل کےنظائر 143
استحسان کاثبوت اجماع امت ہے 146
استحسان کی مثالیں فقہاءکی عبارات میں 147
استحسان کاثبوت سے 149
استحسان کےمنکرین اوران کےدلائل 149
مانعین کےدلائل پرایک 152
استحسان تمام مذاہب میں 153
حنبلی سےاستحسان کےنظائر 156
شافعی سےاستحسان کےنظائر 158
انکاراستحسان کی اہم وجہ 165
استحسان کاعام فقہی تصور 168
معاشرت سےمتعلق 168
تشخیص کواجاگرکرنےوالےاحکام 169
سنن ومستحبات کی پیروی سےمتعلق 169
مکروہات ومشتبہات سےاجتناب کےمتعلق 169
استحسان کی اقسام
استحسان نصی 170
استحسان نصی مثالیں 171
استحسان اجماعی 173
استحسان اجمالی مثالیں 173
استحسان قیاسی 174
استحسان مصلحی 177
استحسان مصلحی کی مثالیں 178
استحسان ضرورت 178
استحسان ضرورت کی مثالیں 179
استحسان  عرفی 180
استحسان عرفی کی مثالیں 181
استحسان کی قیاس پرترجیح کی مثالیں 181
سباع طیورکےجھوٹےکامسئلہ 181
سواری پرنمازجنازہ کامسئلہ 181
تمام مال صدقہ کردینےکی وجہ سےزکوۃ کاسقوط 183
استصحاب حال
استصحاب کالغوی معنی 184
استصحاب کی اصطلاحی تعریف 185
حجیت استصحاب پردلائل 186
کریم سے 187
رسول ﷺ سے 187
اجماع امت سے 188
عقلی 188
استصحاب اورائمہ اربعہ 189
استصحاب کی اقسام 190
اتصحاب البراۃ الاصلیۃ 191
استصحاب مادل الشرع اواقل علی وجودہ 191
استصحاب الحکم 192
استصحاب الوصف 192
استصحاب اجماع 193
اتصحاب کاحکم 195
اتصحاب کی مثالیں 197
شک ناقض وضونہیں 197
ذبائح کی اصل تریم ہے 197
پانی کی اصل طاہراورمطرہے 198
انگورکارس اورنبیذ تمراصلاحال ہے 198
شک کی صورت میں رجعی مانی جائےگ﷫ 199
استحصاب پرمبنی قواعد 199
مصالح مرسہ
مصالح مرسلہ کی تعریف 200
مصالح مرسلہ کی حجیت کےدلائل 200
مصالح مرسلہ کی حجیت سے 201
مصالح مرسلہ کی حجیت رسول ﷺ سے 202
مصالح مرسلہ کی حجیت تعامل سے 203
مصالح مرسلہ کےمعتبرہونےکی شرائط 206
مصلحت کی اقسام 209
ترجیح کاطریقہ 210
مصالح مرسلہ اورائمہ کااختلاف 210
کامسلک 210
شوافع کامسلک 212
مالکیہ کامسلک 213
حنابلہ کامسلک 213
مصالح اورنصوص کاتعارض 214
مصالح مرسیہ پرمبنی مین تبدیلی کاامکان 215
مصلحت وقیاس میں فرق 216
مصالح مرسلہ پردال قواعد 217
عرف وعادت
مشروعیت عرف 217
تشریع میں عرف وعادت کامقام 219
عرف کالغوی معنی 220
عرف کااصطلاحی معنی 222
عادت کالغوی معنی 223
عادت کااصطلاحی معنی 224
عرف کی حجیت سے 225
ایک شبہ کاجواب 226
عرف کی سے 227
عرف کی حجیت اجماع سے 230
عرف کی حجیت قیاس سے 231
عرف کی حجیت اربعہ کےنزدیک 232
عرف وعادت کےدرمیان فرق 234
عرف اوراجماع کےمابین فرق 235
عرف کےمعتبرہونےکی شرائط 236
عرف صحیح وعرف فاسد 238
عرف صحیح 238
عرف فاسد 239
حرف کی اقسام 239
عرف عام 239
عرف خاص 241
حرف عام وخاص کااعتبار 242
حرف عام وعرف خاص مین حکم کےاعتبار سےفرق 243
حرف لفظی کی تعریف 244
حرف عملی کی تعریف 244
حرف لفظی وعمل کی تاثیر 245
حرف عموم نص سےمتعارش ہو 247
حرف کاتعارض نص خاص سے 248
حرف وعادت پرمبنی نصوص 249
حرف کاتصادم قیاس سے 251
قواعدعامہ سےتعارض 252
عرف ظاہرمذہب کےخلاف 252
عرف کےسبب عدول عن المذہب 253
کیاعرف بدلنےسےبارحکم بدلےگا 254
عرف پرفتوی دینےکی اہلیت 254
کےخلاف عرف معتبرنہیں 255
اپنےزمانہ کےعرف کونہ جانےوالامفتی جاہل ہے 255
قضامیں امام ابویوسف ﷫کےقول پرفتوی کی علت 256
﷫کی دعادت شریفہ 256
لوگوں کےحقوق کاخیال رکھاجائےگا 256
فتوی کی تبدیلی عرف کی بناپر 257
عرف کی تبدیلی کااحکام پراثر 258

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
8.4 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...