حیات حضرت امام ابو حنیفہ 

حضرت امام ابو حنیفہ 

 

مصنف : محمد

 

صفحات: 771

 

نعمان بن ثابت الکوفی ﷫ بغیر کسی اختلاف کے معروف اربعہ میں شمار کئے جاتے ہیں، تمام اہل کا آپکی جلالتِ قدر، اور پر اتفاق ہے۔ علی بن عاصم کہتے ہیں: “اگر کے کا انکے زمانے کے لوگوں کے علم سےوزن کیا جائے تو ان پر بھاری ہو جائے گا” آپ کا نام نعمان بن ثابت بن زوطا اور کنیت ابوحنیفہ تھی۔ بالعموم امام اعظم کے لقب سے یاد کیے جاتے ہیں۔ آپ بڑے مقام و مرتبے پر فائز ہیں۔ اسلامی میں حضرت امام اعظم ابو حنیفہ کا پایہ بہت بلند ہے۔ آپ نسلاً عجمی تھے۔ آپ کی پیدائش کوفہ میں 80ہجری بمطابق 699ء میں ہوئی سن وفات 150ہجری ہے۔ اما م موصوف کو کرام سے شرف ملاقات اور کبار تابعین سے استفادہ کا اعزار حاصل ہے آپ اپنے دور میں تقویٰ وپرہیزگاری اور دیانتداری میں بہت معروف تھے اور عباسیہ میں متعدد عہدوں پر فائز رہے ۔ابتدائی ذوق والد ماجد کے تتبع میں تھا۔ لیکن نے ان سے کی خدمت کا کام لینا تھا، لٰہذا تجارت کا شغل اختیار کرنے سے پہلے آپ اپنی کی طرف متوجہ ہوئے۔ آپ نے بیس سال کی عمر میں اعلٰی علوم کی تحصیل کی ابتدا کی۔آپ نہایت ذہین اور قوی کے مالک تھے۔ آپ کا زہد و تقویٰ فہم و فراست اور و دانائی بہت مشہور تھی۔ زیر کتاب ’’ حضرت امام ابو حنیفہ ﷫‘‘ کے معروف مصنف کتب کثیرہ اور سوانح نگار شیخ محمد کی تصنیف ’’ابو حنيفه حياته و عصر ه ارائه وفقهه ‘‘ کا ہے ۔پرو فیسر ابو زہر ہ کی یہ تصنیف اردو میں پیش بہا اضافہ اور اپنے موضوع پر منفرد اور یکتا کتاب ہے ۔ کے حالات علوم ومعارف کے متعلق نادر کا گنجینہ ہے ۔ 1980ء میں مولانا عطاء حنیف ﷫ کے حکم پروفیسر غلام احمدحریری نے اس کا سلیس ورواں کیا۔المکتبہ السلفیہ نےمحنت شاقہ وتوجہ خاصہ سےاس کتاب کو اور بھی مفید تر بنادیا کہ اس میں قرآنیہ کے حوالے دے دیئے اوراحادیث وآثار کی تخریج وتحقیق بھی کردی۔اس کے علاوہ مولانا عطاء حنیف ﷫ نے تنقیح ، وتعلیق اور حواشی سے کتاب کومزین کیا جو مصنف کے متعدد مسامحات کی نشاندہی اور بہت سے تاریخی وتحقیقی مباحث پر مشتمل ہیں۔ان حواشی کا وہ حصہ بالخصوص بڑی اہمیت وافادیت کا حامل ہے جس میں پاک کے متعلق ایسے مغالطوں کا ازالہ کیاگیا ہے جن میں مصنف کے علاوہ عصر حاضرکے بہت سارے لوگ توغلط فہمی سےمبتلا ہیں ۔مگر پسند طبقہ اور منکرین کےلیے وہ چور دروازوں کی حیثیت رکھتے ہیں

 

 

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
17.3 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...