حرمت ربا اور غیر سودی مالیاتی نظام

حرمت ربا اور غیر سودی مالیاتی نظام

 

مصنف : ڈاکٹر

 

صفحات: 95

 

حرمت ایک بدیہی حقیقت ہے۔ لیکن یہ بھی حقیقت ہے کہ مغربی فکر کے غلبہ کے اس دور میں ہزاروں اذہان ہیں جو پروپیگنڈے کی قوت سے متاثر اور نتیجتاً ذہنی اور روحانی اضطراب میں مبتلا ہو جاتے ہیں۔ ہمارے ملک میں بھی کچھ طبقات سود کے پر پیدا کر رہے ہیں اور ربا اور سود میں تفریق کر کے گمراہی کا دن رات پرچار کر رہے ہیں۔ حالانکہ کتاب و میں سود یعنی ربا کو واضح طور پر ، قطعیت کے ساتھ، بغیر کسی شک و شبہ کے اور بغیر کسی اختلاف رائے کی گنجائش کے حرام قرار دیا  گیا ہے اور یہ حرمت ان ضروریات میں سے ہے جس کے بارے میں کسی قسم کا شک  وشبہ کو ہی سے خارج کر سکتا ہے۔ لہٰذا یہ اتنا نازک معاملہ ہے کہ اس پر اظہار رائے بڑی احتیاط کا متقاضی ہے۔ زیر کتاب میں معروف محقق ڈاکٹر نے ایک طرف کے تصور کو بڑی اور دیانت کے ساتھ بڑے مؤثر کے ذریعہ پیش کیا ہے اور دوسری طرف خطوط پر بچت، قرض اور سرمایہ کاری کا ایک واضح نقشہ پیش کیا ہے۔ طالبان کیلئے اس  مختصر و جامع کتاب میں یقیناً بڑی روشنی اور راہنمائی ہے۔
 

عناوین صفحہ نمبر
پیش لفظ 5
تمہید 7
پاک میں حرمت کی 13
کی قباحتیں 21
اخلاقی قباحتیں 22
معاشرتی قباحتیں 24
معاشی قباحتیں 25
کے اصولوں سے تعارض 33
چندشبہات واعتراضات 41
پاک میں ربا کی تعریف کانہ ہونا 41
حرمت ربا كااضعافاً مضاعفتاً محدود رہونا 43
نئے کی ضرورت 44
کرایہ مکانات پر قیاس 45
اضطرار 46
کسی بلوپرنٹ(مفصل نقشہ کار)کانہ ہونا 47
صرفی اور تجارتی 49
میں حرمت ربا پر اتفاق رائے 51
متبادل شکلیں 59
سروس چارج یا الحدمت 60
قرض حسنہ 61
بیع مرابحہ 62
اجارہ 63
مشارکہ 67
مضاربہ 74
بیع مؤجل 77
بیع بالوفاء(بائی بیک ایگریمنٹ) 79
بیع سلم 81
عقداستصناع 84
مزارعہ 85
وقف کے کااستعمال صرفی قرضوں کے باب میں 87
حواشی 91

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
3 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...