ایمان کے درجات اور شاخیں

ایمان کے درجات اور شاخیں

 

مصنف : عبد اللطیف حلیم

 

صفحات: 194

 

اس دنیا میں سب سے قیمتی دولت ایمان ہے ۔ اس کی حفاظت کے لیے ہجرت تک کو مشروع قرار دیا گیا ہے ۔ یعنی اگر گھر بار ، جائیداد ، رشتہ داری ، دوست واحباب، کاروبار، بیوی ، بچے سب کچھ چھوڑنا پڑے تو چھوڑدیا جائے مگر ایمان کو نہ چھوڑا جائے۔ تعالیٰ نے مجید کے بہت سے مقامات پر کامیابی کامعیار ایمان اور عمل صالح کو قرار دیا۔ ایمان کی حقیقت کوسمجھنا ہر کے لیے انتہائی ضروری ہے اس لیے کہ جب تک ایمان کی حقیقت کو نہیں سمجھا جائے گا اس وقت تک اس کی بنیاد پر حاصل ہونے والی کامیابیوں کا ادراک نہیں ہو سکتا۔اور جس طرح قرآن مجید پر ایمان لانا ضروری ہے اسی طرح رسول ﷺ پر بھی ایمان لانا فرض ہے کیونکہ حدیث رسول ﷺ کے بغیر ہم قرآن کو بھی کما حقہ نہیں سمجھ سکتے۔ اور اس حقیقت سے بھی انکار ممکن نہیں کہ مومن کا ایمان کم اور زیادہ ہوتا رہتا ہے۔ خود کا بیان ہے کہ جب ہم رسول اکرم ﷺ کی مبارک محفل میں ہوتے تو ایمان میں اضافہ ہوتا جبکہ بچوں کے درمیان وہ کیفیت نہ ہوتی ۔ زیر کتاب ’’ایمان کے درجات او رشاخیں‘‘ نوجوان عالم مولانا ابو عکاشہ عبداللطیف حلیم کی کاوش ہے اس کتاب میں انہوں نے لفظ ایمان کی تفصیل اور تشریح رسول ﷺ کی روشنی میں کی ہے اور ایمان کے تمام شعبہ جات کو بڑے اختصار اورانتہائی جامع انداز میں نہایت احسن انداز میں بیان کرتے ہوئے ایک قاری پر رموز اور عقد کو کھول کر سامنے رکھ دیا ہے۔اورایمان پر اٹھائے جانے والے اعتراضات کے بھی بڑے مدلل اور مسکت جوابات دیے ہیں ۔فاضل مؤلف کی یہ کاوش انتہائی قابل تحسین ہے ۔ تعالیٰ ان کے زورِ قلم میں مزید اضافہ فرمائے ۔(آمین)

 

عناوین صفحہ نمبر
تقریظ 7
مقدمہ الکتاب 9
الایمان باللہ ( تعالی پر ایمان لانا) 13
ایمان  بالملائکہ (فرشتوں پر ایمان لانا) 14
ایمان بالکتب (آسمانی کتابوں پر ایمان لانا) 17
ایمان بالرسل (رسولوں پر ایمان لانا) 20
ایمان بالتقدیر ( پر ایمان لانا) 23
ایمان بالاخرۃ ( پر ایمان لانا) 25
تعالی کی محبت 28
کےلیے محبت یابغض 30
نبی کریم ﷺ سےمحبت 32
اعتقاد تعظیم رسول ﷺ 34
اخلاص 37
39
خوف 42
الرجاء ( سےامید رکھنا) 44
الشکر 46
الوفا 48
صبر 50
الرضابالقضاء( پر راضی رہنا) 52
التوکل ( تعالی پر بھروسہ کرنا) 54
الرحمۃ (رحمت ) 57
التواضع (عاجزی اختیار کرنا) 59
ترک الکبر والعجب (تکبر اورخود پسندی ترک کردینا 61
ترک الحسد وترک الحقد (حسد بغض کاترک کرنا) 64
ترک الغضب (غصہ ترک کرنا) 66
التلفظ بالتوحید ( کی گواہی دینا) 71
تلاوۃ القرآن ( مجید کی تلاوت کرنا) 71
تعلم العلم ( حاصل  کرنا) 75
تعلیم ( سکھانا) 77
الدعاء(دعاکرنا) 80
الذکر ( کاذکر کرنا) 83
اجتناب لغو (لغویات سےاجتناب کرا) 89
92
ستر العورۃ (ستر کاڈھانپنا) 95
فرض اونفل 97
فرض اورنفلی صدقہ 102
فک الرقاب (غلام آزاد کرنا) 107
الجود (سخاوت کرنا) 110
فرضی اورنفی روزے 112
وعمرہ 115
الطواف ( کاطواف کرنا) 117
الاعتکاف 120
لیلۃ القدر کی تلاش 122
الفرار بالدین 125
الوفاءبالنذر (نذر کاپورا کرنا) 128
التحری فی الایمان (قسم اٹھانے پر زیادہ بہترعمل اختیار کرنا) 131
اداء اکفار ات (کفارے کااداکرنا) 133
التعغف بالنکاح ( کےذریعے پاکدامنی اختیار کرنا) 136
القیام بحقوق (اہل عیال کےحقوق کی ادائیگی ) 139
برالولدین ( والدین کےساتھ حسن سلوک ) 141
تربیت اولاد 145
صلہ رحمی 147
مالک اورغلام کےحقوق 149
عدل وانصاف پر مبنی حکومت  کاقیام 152
متابعت اجماعت (جماعت کی پیرو ی کرنا) 155
اطاعت اولی الامر (امر وخلفاء کی اطاعت کرنا 156
الاصلاح بین الناس (لوگوں کےدرمیان صلح کروانا) 159
التعاون علی البر (نیکی میں تعاون کرنا) 161
حدو داللہ کاقیام 163
الجہاد 166
ادائے امانت (امانت کو اداکرنا) 168
القرض مع وفاہ (قرض دینا اوواپس لوٹنانا) 171
اکرام الجار (پڑوسی کی عزت کرنا) 173
حسن المعاملۃ (اچھا برتاؤ کرنا) 175
مال کو خرچ کرنا 177
ردالسلام (سلام کا جواب دینا) 180
تشمیت العاطس (چھینک کاجواب دینا) 193
کف لاذی عن الناس (لوگوں کو تکلیف سےمحفوظ رکھنا) 185
اجنتاب لہو (لغویات سےبچنا) 188
اماطۃ الاذی عن الطریق (راستے سےتکلیف  دہ چیز کو ہٹانا 190
بیمار کی خدمت کرنا 191
جامع کلمات 192
ایمان کی ساٹھ شاخیں 193
ایمان کی شاخیں 195

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
4.6 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...