منافقین کا کردار اور علامات

منافقین کا کردار اور علامات

 

مصنف : ابو یاسر بن بشیر

 

صفحات: 206

 

انسانی رویہ میں منفی و مثبت رجحانات ایک معمول کی بات ہوتی ہے اور دونوں پہلو اپنے اپنے مقام پر ایک مستقل حیثیت رکھتے ہیں او ردونوں پہلوؤں میں ہر ایک ایک مستقل رویہ ظاہر کررہا ہوتا ہے۔ چاہے وہ  درست ہو یا صحیح۔ لیکن ان دونوں پہلوؤں کو انداز کرتے ہوئے ایسا رویہ اختیار کرنا جس سے آدمی کی شخصیت کا تعین مشکل ہوجائے یہ کسی بھی اور سوسائٹی میں اچھا خیال نہیں کیا گیا۔ میں کفر اور اسلام  وہ اصطلاحات ہیں جو و باطل کے رویہ کو ظاہر کرتی ہیں اسی طرح جو ان دونوں میں سے کسی راہ کو متعین نہ کرپائے بلکہ اس کے قول یا شخصیت سے دونوں پہلوؤں کی آمیزش آئے اس دو رُخے کو اصطلاح میں منافق کہتے ہیں او راس  کی  سزا کفر سے بھی زیادہ ہے۔ مسلمانوں کو نفاق سےبچنے کی تلقین کی گئی ہے اور شارع نے اس کی علامات بھی واضح کردی ہیں۔زیر کتاب انہی علامات نفاق پر مشتمل ہے جو و کےدلائل سے مرتب ہے۔
 

عناوین صفحہ نمبر
مقدمہ 11
نفاق کی تعریف 16
نفاق کی اقسام 17
اعتقادی نفاق 17
عملی نفاق 17
نفاق کے پیدا ہونے والے اسباب 19
جھوٹ بولنا 21
گالی گلوچ کرنا 30
خیانت کرنا 36
راز یا بات کی امانت 39
دھوکہ دینا 43
کی کوتاہیاں 45
کو بھلا دینا 59
وسنت کا مذاق اڑانا 68
بے وبے غیرت ہونا 80
تکبر کرنا 98
کفر کی مدد کرنا 104
کی سمجھ سے محروم رہنا 113
جاسوسی کرنا 122
نافرمان ہونا 136
منافق کا کردار 145
منافقین کی مثالیں 184
قبر میں اس کا معاملہ 189
نفاق سے ڈرٹے رہنا چاہیے 194
آخر دور میں مسلمانوں کا بگڑ جانا 204
مصادر ومراجع 206

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
4.5 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Leave A Reply