رویت ہلال فقہ اسلامی کی روشنی میں

رویت کی روشنی میں

 

مصنف : مختلف اہل

 

صفحات: 476

 

ایک ایسا ہے جو زندگی  کے تمام شعبوں کے متعلق رہنمائی فراہم کرتا ہے۔ شروع کرنےاور منانے  کے مسئلے میں شریعت  مطہرہ نے جو معیار مقرر کیا  ہے وہ  یہ  ہے  کہ دیکھ کرعید منائی جائے او رچاند دیکھ کر ہی کی ابتداء کی جائے ۔اور اگر گرد وغبار اور ابر باراں کی وجہ  سے چاند دکھائی نہ دے تو رواں مہینے کےتیس دن مکمل  کر لیے جائیں بالخصوص شعبان اوررمضان المبارک کے ۔ مذکورہ  قاعدہ کلیہ تمام مسلمانوں کیلئے ہے خو اہ وہ ہو یا عجمی  ۔دور حاضر ہو یا دور ماضی ۔ایک وقت تک اس وقاعدہ  کے پابند رہےمگر پھر آہستہ آہستہ فقہائے و مجتہدین اور ان  کے مقلدین کی دینی  کے نتیجے میں امت مسلمہ مختلف آراء میں بٹ گئی ۔اس سلسلے میں دو رائے پائی جاتی ہیں ۔ایک نقطۂ کےمطابق مطالع کا اختلاف معتبر نہیں ہے اور ایک جگہ کی رؤیت پوری دنیا کے لیے  ہے۔اور دوسرے نقطۂ نظر کے حاملین کے نزدیک اختلاف مطالع معتبر ہے  لہٰذا ہر علاقہ کی رؤیت اس علاقہ کے لیے معتبر ہوگی ۔ وحدیث کے وبراہین کے مطابق اختلافِ مطالع معتبر ہونے کی رائے راجح ہے۔  یہ ایک حقیقت ہے کہ موجودہ دور تیز رفتار سیاسی تبدیلیوں،معاشی انقلابات اور وسائل و ذرائع کی ایجادات کا ہے،اس لئے اس عہد میں بھی زیادہ پیش آتے ہیں، چنانچہ ماضی قریب میں مختلف ممالک میں اس مقصد کے لئے اکیڈمیوں کا قیام عمل میں آیا، جدید کو کرنے  میں ان کی بہت ہی عظیم الشان اور قابل تحسین ہیں، اس سلسلہ کی ایک کڑی اسلامک فقہ اکیڈمی ( انڈیا) بھی ہے۔یہ اکیڈمی  مولانا  قاضی مجاہد الاسلام قاسمی کی کوششوں سے 1989ء میں قائم ہوئی ۔مختلف موضوعات پر اب تک بیسیوں کتب شائع کرچکی ہے بالخصوص جدیدفقہی مسائل (کلوننگ،انشورنش، اعضاء کی پیوندکاری ،،مشینی ذبیحہ  وغیرہ ) پر کتب کی اشاعت اورموسوعہ فقہیہ کویتیہ کا لائق تحسین ہے۔ موسوعہ کی بارہ  جلدیں کتاب وسنت  ویب سائٹ پر موجود ہیں ۔ ایفا پبلی کیشنز (اسلامک فقہ اکیڈمی ،انڈیا) اگرچہ مسلکِ کا ترجمان ادارہ ہے لیکن افادیت کے پیشِ نظر اور کچھ احباب کی فرمائش پر جدید فقہی موضوعا ت پرمشتمل  اکیڈمی کی بعض مطبوعات کو  کتاب وسنت  ویب سائٹ پر   پبلش کیا جا رہا ہے جن کےساتھ ادارہ  کا کلّی اتفاق ضروری نہیں ۔ زیر نظر کتاب ’’رویتِ اسلامی  کی روشنی میں‘‘ اسلامک فقہ  اکیڈمی کی طبع شدہ  ہے جو رویتِ ہلال کے موضوع پر اسلامک فقہ اکیڈمی کے ساتویں سیمینار (منعقدہ 30 ؍دسمبر 1994ء دار العلوم ماٹلی والا گجرات) میں تقریبا 30 علمائے کرام  کی طرف سے پیش  کئے گے کا  مجموعہ ہے۔ کتاب کے شروع میں رویتِ ہلال کے حوالے  سے  ایک اہم سوالنامہ بھی  شاملِ اشاعت  ہے۔ تعالیٰ تمام اہل کو کتاب وسنت پر صحیح طور پر عمل پیرا  ہونے کی توفیق  عطا فرمائے ۔اس  سلسلے میں  ویب سائٹ پر مو جود کتب ’’ رؤیت ہلال اور 12 مہینے‘‘ از حافظ صلاح الدین  یوسف، ’’حقیقت اختلاف مطالع ومسئلہ رؤیت ہلال‘‘ از مولانا اور ماہنامہ محدث مارچ 1999ء کا  مطالعہ مفید ہوگا۔

 

عناوین صفحہ نمبر
ابتدائیہ 7
سوالنامہ 10
باب اول تفصیلی 17
رویت یا وجود قمر کا 17
ایک مقام کی رویت کا اعتبار دوسرے مقام کے لیے 29
رؤیت سے متعلق پیدا ہونے والے اور 53
رؤیت میں ہئیت کی حیثیت 89
رؤیت میں اختلاف مطالعہ کا اعتبار 108
رؤیت سے متعلق 126
رؤیت میں جدید آلات و وسائل سے مدد 142
میں اختلاف مطالع کا اعتبار 165
رؤیت سے متعلق کا شرعی 185
رؤیت اور ثبوت کے حدود 194
رؤیت کے ثبوت میں خبر مستفیض کی اہمیت 210
مہینہ رؤیت سے یا حساب سے 222
رؤیت کے 245
رؤیت کا اور اختلاف مطالع کی حدود 260
رؤیت اور مطالع کی تحدید 280
رؤیت اور اعلان کے و ضوابط 294
رؤیت کے شرعی و ضوابط 334
رؤیت موجودہ تناظر میں 349
رؤیت ایک تفصیلی رپورٹ 384
رؤیت کمیٹی 410
باب دوم مختصر تحریریں 423
رؤیت اور ریڈیو کے ذریعہ اعلان 423
رؤیت 430
رؤیت اعلان و 434
رؤیت کے اعلان کا شرعی ضابطہ 444
رؤیت سے متعلق سوالات کے جوابات 446
کب شروع ہو امکانی یا یقینی رؤیت پر 454
رؤیت کا 467
مناقشہ 467

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
8.5 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...