سانس کی بیماریاں اور علاج نبویﷺ

سانس کی بیماریاں اور علاج نبویﷺ

 

مصنف :

 

صفحات: 382

 

انسا ن کو بیماری کا لاحق ہو نا من جانب ہے اوراللہ تعالی نے ہر بیماری کا علاج بھی   نازل فرمایا ہے جیسے کہ ارشاد نبویﷺ ہے ’’ اللہ تعالی نے ہر بیماری کی دواء نازل کی ہے یہ الگ بات ہے کہ کسی نےمعلوم کر لی اور کسی نے نہ کی ‘‘بیماریوں کے علاج کے لیے معروف طریقوں(روحانی علاج،دواء اور غذا کے ساتھ علاج، سے علاج) سے علاج کرنا سے ثابت ہے۔ روحانی اور جسمانی بیماریوں سےنجات کے لیے ایمان او ر علاج کے درمیان ایک مضبوط تعلق ہے اگر ایمان کی کیفیت میں پختگی ہو گی تو بیماری سے شفاء بھی اسی قدر تیزی سے ہوگی۔ نبی کریم ﷺ جسمانی وروحانی بیماریوں کا علاج جن اور ادویات سے کیا کرتے تھے یاجن مختلف بیماریوں کےعلاج کےلیے آپﷺنے جن چیزوں کی نشاندہی کی اور ان کے فوائد ونقصان کو بیان کیا ان کا ذکر بھی وسیرت کی کتب میں موجو د ہے ۔ کئی اہل نے ان چیزوں ک یکجا کر کے ان کو طب ِنبوی کا نام دیا ہے ۔ان میں امام ابن قیم﷫ کی کتاب طب نبوی قابل ذکر ہے او ردور جدید میں ڈاکٹر خالد غزنوی کی کتب بھی لائق مطالعہ ہیں۔طب کی اہمیت وافادیت کے پیش اس کو بطور پڑھا جاتارہا ہے اور کئی نامور ومحدثین ماہر طبیب بھی ہوا کرتے تھے۔ میں بھی طب کو باقاعدہ مدارس ِ اسلامیہ میں پڑھایا جاتا رہا ہے اور الگ سے   طبیہ کالج میں بھی قائم تھے ۔ اور ہندوستان کے کئی نامور کرام اور شیوخ الحدیث ماہر طبیب وحکیم تھے ۔محدث العصر علامہ حافظ محمد گوندلوی﷫ نے طبیہ کالج سے طب پڑھا اور کالج میں اول پوزیشن حاصل کی ۔کئی علماء کرام نے علم طب حاصل کر کے اسے اپنے روزگار کا ذریعہ بنائے اور کی واشاعت کا فریضہ فی سبیل انجام دیا۔ زیر کتاب ’’سانس کی بیماریاں اور ان کا علاج نبوی ﷺ‘‘ غزنوی خاندان کے معروف ڈاکٹر خالد غزنوی کی تصنیف ہے۔ موصوف نے اس کتاب میں قرآنی اور ارشادات نبویؐ کی روشنی میں سانس کی بیماریوں کا علاج بڑے احسن انداز میں بیان کیاہے ۔ ڈاکٹر صاحب نے میں کی اس آیت مبارکہقَدْ جَاءَتْكُمْ مَوْعِظَةٌ مِنْ رَبِّكُمْ وَشِفَاءٌ لِمَا فِي الصُّدُورِ وَهُدًى وَرَحْمَةٌ لِلْمُؤْمِنِينکی رو سے قرآن مجید کو سینے کے تمام مسائل (خواہ وہ عضوی ہوں یا نفسیاتی) کےلیے شفا کا مظہر قرار دیتے ہوئے کتاب میں اسی آیت مبارکہ کی طبی بیان کی ہے ڈاکٹر خالد غزنوی صاحب اس کتاب کے علاوہ طب کے سلسلے میں تقریبا چھ کتب کے مصنف ہیں۔ اللہ تعالیٰ ان کی کاوشوں کو قبول فرمائے اور ان کی کتب کو عوام الناس کےلیے نفع بخش بنائے۔ آمین

عناوین صفحہ نمبر
باعث تحریر 7
ابتدائیہ 9
باعث تالیف 15
ناک کی بیمایاں 19
ناک کی سوزش (مزمن) 21
ناک کی بدبو دار سوزش 23
ناک کی ہڈی کا ٹیڑا ہونا 26
ناک کی اندے مسے (نوا میرا لانف) 28
نکسیر (رعاف) 31
ناک کی تمام بیاریواں کے لیے علاج نبویﷺ 35
گلے کی بیماریاں 39
التھاب حلق (التھاب لوز تین ) (گلے پڑنا) 41
گلے کی سوزش 47
گلے کا پھوڑا 55
سعال: 67
سعال شدید کھانسی بخار 69
سانس کی نالیوں کی سوزش 69
پرانی کھانسی سعال مزمن 77
نمونیہ (ذات الریہ) 82
سانس کی چھوٹی نالیوں کا نمونیہ 93
سانس کی نالیوں کا پھیل جانا 96
انتفاح الریہ 101
پھیپھڑوں کا پھوڑا 104
پھیپڑوں کا سرطان 119
پلورسی 127
اکسرے کی ذریعے چھاتی کی بیماریوں کی تشخیص 139
متعد بیماریاں اور ان سے بچاؤ کے منصوبے 149
حفاظتی ٹیکوں کا پروگرام 158
کالی کھانسی (سعال الدیکی) 169
خسرہ (حصبہ) 177
خناق 187
انفلوئنزا (جنگی بخار) کھانسی، بخار 198
کن پیڑے 208
نزلہ زکام خشام 216
دمہ: ربو ضیق النفس 234
تپ دق: دق کھانسی 285
بخار تدرن سل
طاعون: (مہاماری) کالی آندھی 347

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
14.8 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...