صحیح بخاری اور بائبل ایک تقابلی جائزہ

اور ایک تقابلی جائزہ

 

مصنف : محمد حسین میمن

 

صفحات: 522

 

ایک واحد ہے جو آج تک اپنی اصلی حالت میں برقرار ہے دیگر آسمانی کتب صحف آج تبدیل شدہ ہیں پچھلی امتوں نے اپنی کتابوں کے ساتھ جو روش اختیار کی وہ نہ بھولنے والا حادثہ ہے۔ مجید نے ان کی ناپاک کاوشوں کو کھول کھول کر بیان فرمایا ‘ اپنی کتاب میں تحریف‘ گھڑنا‘ جھوٹے مسئلے بتا کر عامۃ الناس کو صراط مستقیم سے گمراہیوں کی گھٹا ٹوپ اندھیروں میں دھکیلنا‘اپنے ہاتھوں سے لکھ کر اسے تعالیٰ کی طرف منسوب کر دیتے تھے جیسا کہ اللہ رب العزت فرماتے ہیں’’ان لوگوں کے لیے ویل ہے جو اپنے ہاتھوں کی لکھی ہوئی کتاب کو اللہ کی طرف کا کہتے ہیں اور اس طرح دنیا کماتے ہیں ان کے ہاتھوں کی لکھائی کو اور ان کی کمائی کو ویل(ہلاکت)اور افسوس ہے۔‘‘ اور یہ بات روزِ روشن کی طرح عیاں ہیں کہ قرآن مجید اور نبویﷺ کے علاوہ باقی تمام مصحف آسمانی میں تحریف ورد وبدل ہوچکا ہے اور غیر مسلم خود اس بات کو تسلیم کرتے ہیں۔ لہذا جب انہوں نے اپنی کتب کو تحریف شدہ پایا تو انہوں نے پر بھی تحریف اور ردوبدل کا الزام لگانا اور اس کا اثبات کرنا شروع کر دیااور پادریوں اور نے ہزاروں کتب نبیﷺ اور کے خلاف لکھ ماری ہیں اور مستشرقین پر تو تحریف کا الزام نہیں لگا سکتے تھے اس لیے انہوں نے کے غیر محفوظ ہونے کا دعوی کیا اور بہت سے اعتراضات کیےکیونکہ ہی قرآن پاک کی تفصیل وتوضیح کا اصل ذریعہ ہے مگر ان کے تمام اعتراضات بے کار ہیں اور ان اعتراضات کو دور کرنے کے لیے بہت سے مضمون اور کتب تالیف کی گئی ہیں جن میں سے ایک زیرِ کتاب ہے۔ اور اس کتاب کی تالیف کا مقصد ڈاکٹر موریس کی کتاب (The the and Science) کے پانچویں باب میں پیش کیے گئے اعتراضات کا جواب ہے جس میں ڈاکٹر موریس نے کی جمع وتدوین‘اس کی حفاظت اور ومسلم کی روایات پر اعتراضات کیے ہیں تو مصنف محمد حسین میمن کو یہ بات ناگوار لگی اس لیے انہوں نے اس کے جواب میں یہ کتاب تالیف کی ہے جس میں ڈاکٹر موریس کے اعتراضات کا جواب ہے جس کا تعلق دفاع کے ساتھ ہےاور ان عیسائیوں اور پادریوں کے وہ اعتراضات جو کے خلاف پیش کرتے ہیں کا بھی جواب ہے‘ اور ان منکرین کا بھی رد ہیں جو کہتے ہیں کہ احادیث صرف ہیں وہ کا مقابلہ نہیں کر سکتیں۔ اور اس کتاب میں چوبیس ابواب قائم کیے گئے ہیں جن میں شریف اور بائبل کی اور روایات کا تقابل پیش کیا گیا ہے‘اور موجودہ دور میں پر کیے جانے والے اعتراضات کے جوابات کافی وشافی دیئے گئے ہیں۔ تعالیٰ اس کتاب کے ذریعے امت کی ہدایت کا فیصلہ فرما دے اور مصنف کے لیے توشۂ بنا دے اور جنت الفردوس میں جگہ عطا فرما دے۔ (آمین)

 

عناوین صفحہ نمبر
تقریظ 21
مقدمہ 25
چند معروف کےنام 35
باب :1(اسناد صحیح بخاری /اسناد بائبل )
اسناد صحیح بخاری /اسناد 51
اسناد 51
بن الزبیرالحمید ی﷫ 64
روی عن 64
امام حمیدی ﷫ کےبارےمیں تفصیلات 65
سفیان ﷫ 66
یحییٰ بن سعید الانصاری ﷫ 68
محمد بن ابراہیم التیمی ﷫ 69
علقمہ بن وقاص اللیثی ﷫ 71
سیدنا عمربن خطاب ﷜ 71
اسناد 74
پروٹسینٹ  کاحال 74
یوشع 78
قضات 78
راعوت 79
سموئیل 79
ملوک 79
احبار 79
عزراورنحمیاہ 80
طوبیاہ 80
یہودیت 81
استیر 81
ایوب 82
مزامیر 82
امثال 83
جامع 84
نشید الاناشید 84
85
یشوع بن سیراخ 85
ایسیاہ 86
ارمیا 87
مرثیے 87
باروک 87
حزقیال 87
دانیال 88
صغریٰ 88
مکابیین 89
متی،یوحنا،لوقا،مرقس کی اناجیل 92
باب :2(تعارضات صحیح بخاری /تعارضات بائبل )
تعارضات 101
کی اوران میں تعارضات کی حقیقت 101
میں بظاہر میں تعارض اوران  میں تطبیق کی چند مثالیں 102
طاعون کےمتعلق دوبظاہر متعارض میں تطبیق 103
نحوست کاہونایانہ ہونا 105
بیت الخلاء میں قبلے کی  طرف منہ کرنا یانہ کرنا؟ 107
عورتوں میں کامل اوربہترین عورت کون ہے؟ 109
میں تعارضات 111
میں یسوع مسیح﷤کانسب نامہ 112
لوقا کےمطابق یسوع کانسب نامہ 113
میں تعارض کی دوسری مثال یسوع مسیح ﷤ کون سی جگہ سےاٹھائے گئے 117
میں تعارض کی تیسری مثال چھ دن یاآٹھ دن 118
میں تعارض کی چوتھی مثال مسیح ﷤ صرف بنی اسرائیل کےلیے ہیں؟ 119
میں تعارض کی پانچویں مثال یسوع ﷤ کوکس کےپاس لےجایا گیا؟ 120
میں تعارض کی چھٹی مثال ایک آدمی یادوآدمی؟ 122
باب :3( اوربائبل میں مستقبل کی پیشین گوئیاں)
میں مستقبل کی پیشین گوئیاں 135
میں نبی کریم ﷺ کی بیان کردہ پیشین گوئیاں 136
فاطمہ ؓ کاانتقال 136
نبی ﷺ کاام حرام ؓ کوجنگ میں شرکت اوران کی کی خبر دینا 138
بصرہ سےآگ کانمودارہونا 140
سیدنا عمر﷜ کازندہ رہنا 141
زمانہ قریب ہوگا 142
زمانہ قریب ہوجائےگا 143
قتل عام ہونا 144
حلال  وحرام کو دیکھا جائےگا 144
زلزلوں کاکثرت سےآنا 145
نااہل لوگ عہدے سنبھال لیں گے 145
فلک بوس عمارتیں بنانے میں مقابلے بازی ہوگی 146
لونڈی اپنے مالک کو جنم دےگی 146
اورمستقبل کی پیشین گوئیاں 150
کی بیان کردہ پیشین گوئیاں 150
مسیح ﷤ قبرسے کتنے دن بعد غائب ہوئے 150
مسیح ﷤ کےکانام مسیح ﷤ یاعمانوایل 151
مسیح ﷤ کے انتقال سےقبل دوبارہ دنیا میں آنا 152
بخت نصر کےہاتھوں صور کی تباہی 153
نبوت کاخاتمہ 155
باب :4( اوربائبل میں تعالیٰ کاتصور )
اوراللہ تعالیٰ کاتصور 159
اوراللہ تعالیٰ کاتصور 164
باب :5( اوربائبل میں عصمت انبیاء ﷩
اورعصمت انبیاء﷩ 171
آدم ﷤ کاتذکرہ 171
نوح ﷤ کاتذکرہ 172
الیاس ﷤ کاتذکرہ 173
ادریس ﷤ کاتذکرہ 173
ابراہیم اوراسماعیل ﷩ کاتذکرہ 174
اسحاق بن ابراہیم ﷤ کابیان 174
لوط ﷤ کاتذکرہ 174
صالح ﷤ کاتذکرہ 175
یعقوب ﷤ کاتذکرہ 175
یوسف ﷤ کاتذکرہ 176
ایوب ﷤ کاتذکرہ 176
ہارون ﷤ کاتذکرہ 176
موسیٰ ﷤ کاتذکرہ 177
خضر﷤ کاتذکرہ 177
یونس ﷤ کاتذکرہ 178
سلیمان ﷤ کاتذکرہ 179
داؤد ﷤ کاتذکرہ 179
عیسیٰ ﷤ کاتذکرہ 180
اورعصمت انبیاء ﷩ 182
نوح ﷤ کاتذکرہ 182
182
ابراہیم ﷤ کاتذکرہ 183
لوط ﷤ کاتذکرہ 183
183
اسحاق ﷤ کاتذکرہ 183
یعقوب ﷤ کاتذکرہ 183
183
موسیٰ اورہارون ﷤ کاتذکرہ 184
185
داؤد ﷤ کاتذکرہ 185
سلیمان ﷤ کاتذکرہ 186
مسیح ﷤ کاتذکرہ 187
باب :8( تحریفات سےپاک کتا ب ہے جبکہ میں تحریفات کےانبار
تحریفات سےپاک کتا ب ہے 209
میں تحریفات 215
تحریف کی پہلی مثال 217
تحریف کی دوسری مثال 218
تحریف کی چوتھی مثال 220
تحریف کی پانچویں مثال 220
تحریف کی چھٹی مثال 221
تحریف کی ساتویں مثال 222
تحریف آٹھویں مثال 223
تحریف کی نویں مثال 223
تحریف کی دسویں مثال 224
تحریف کی گیارہویں مثال 225
میں تحریف کی بارہویں مثال 225
تحریف کی تیرہویں مثال 226
تحریف کی چودھویں مثال 227
تحریف کی پندرہویں مثال 228
تحریف کی سولھویں مثال 229
باب :9(صحیح بخاری ، اورعلم حیوانات)
اورعلم حیوانات 233
مکھیوں کاذکر 233
سانپ کاذکر 234
بلی کاذکر 234
مرغ اورگدھے کاذکر 235
خرگوش کاذکر 236
چوہے کاذکر 236
سینگ والے  مینڈھوں کاذکر 237
اونٹنی کاتذکرہ 237
میں خچر کاذکر 238
خرگوش کاتذکرہ 239
چیونٹی کاتذکرہ 239
چیونٹیوں کی اقسام 240
سانپ کاتذکرہ 241
باب :10( اوربائبل میں اطلب )
اورعلم الطب 245
برتن میں سانس لینے کی ممانعت 246
انگلیوں کےپوروں پر جراثیم کش پروٹین 247
کتااگرکسی برتن کوچاٹ جائے تواسے سات دفعہ پانی  اورمٹی سے دھونا 248
شہد سےعلاج 253
مسواک کرنا 255
ختنہ کرنا 255
ختنہ نہ کرنے کے نقصانات 256
257
کروانے کےفوائد 258
نہارمنہ عجوہ کھجور کااستعمال 258
عجوہ کھجور کےاستعمال میں فوائد 259
سرمہ کااستعمال 261
اورعلم الطب 263
گھرکوکوڑھ سےبچانے کاطریقہ 263
نفاس کی مدت 264
زناکار کوپہچاننے کاافسانوی ٹیسٹ 265
تعلیمی مقاصد 266
تشریعی مقاصد 266
اجتماعی مقاصد 267
سیاسی مقاصد 268
اورحدیث میں فررق 269
اورحدیث کےوضوابط کاتقابل 270

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
19.1 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...