سرزمین شام قرآن و احادیث کی روشنی میں

سرزمین شام و کی روشنی میں

 

مصنف : اعجاز حسن المدین

 

صفحات: 51

 

شام سریانی کا لفظ ہے جو حضرت نوح ﷤ کے بیٹے حضرت سام بن نوح کی طرف منسوب ہے۔ طوفان نوح کے بعد حضرت سام اسی علاقہ میں آباد ہوئے تھے۔ ۔ مبارک سرزمین پہلی جنگ عظیم تک عثمانی حکومت کی سرپرستی میں ایک ہی خطہ تھی۔ بعد میں انگریزوں اوراہل فرانس کی پالیسیوں نے اس سرزمین کو چار ملکوں (سوریا، لبنان، اور اردن) میں تقسیم کرادیا،لیکن وسنت میں جہاں بھی ملک شام کا تذکرہ وارد ہوا ہے اس سے یہ پورا خطہ مراد ہے جو عصر حاضر کے چار ملکوں (سوریا، لبنان، اور اردن)پر مشتمل ہے۔ قرآن کریم میں بھی ملک شام کی سرزمین کا بابرکت ہونا متعدد میں مذکور ہے  اوراسی مبارک سرزمین کے متعلق نبی اکرمﷺ  کے متعدد ارشادات کی کتابوں میں محفوظ ہیں مثلاً اسی مبارک سرزمین کی طرف حضرت حجاز مقدس سے ہجرت فرماکر قیام فرمائیں گے اور مسلمانوں کی قیادت فرمائیں گے۔ حضرت عیسیٰ ﷤کا نزول بھی اسی علاقہ یعنی دمشق کے مشرق میں سفید مینار پر ہوگا۔ غرضیکہ یہ علاقہ سے قبل کا مضبوط قلعہ و مرکز بنے گا۔ زیر رسالہ ’’سر زمین شام قرآن  واحادیث کی روشنی میں‘‘ مولانا اعجاز حسین المدنی کی کاوش ہے انہوں نے اس میں سرزمین شام کے   متعلق 9؍قرآنی آیات  مع وتفسیر اور  کتب احادیث  سے  15 ؍ مکمل تحقیق  وتخریج  اور فوائد کےساتھ اس میں درج کردی  ہیں۔ تعالیٰ مصنف کی اس کاوش کو قبول فرمائے ۔آمین

 

عناوین صفحہ نمبر
انتساب 2
شام کی موجودہ صورت حال 4
تقریظ 8
تقریظ 9
تقریظ 11
حروف اولین 12
شام کےتناظر میں 15
شام پیغمبرﷺ کی روشنی میں 19
ملک شام کے لیے اہل کاجمع ہونا 20
دنیا کے بہترین لوگوں کا ملک شام ہجرت کرنا 24
ملک شام اور حفاظت  خداوندی 26
بصری ملک شام کے شہر سے آگ کی پیشین گوئی 33
قرب اور شام 35
حوض کوثر اور شام 41
فتوحات شام 42
رسول کریم(ﷺ) کا اور شام 43
شام کے خلاف کاروائیاں اور اہل کی استقامت 44
شام پر فرشتے اپنے پر پھیلائے ہوئے 46
ایمان شام میں 46
نزول عیسیٰ﷤ اور قتل :شام میں 47
دعائےنبوت اور ملک شام 48

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
4.8 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Leave A Reply