شان و شوکت کی ہوس

شان و شوکت کی ہوس

 

مصنف : ڈاکٹر محمد سلیم

 

صفحات: 198

شان وشوکت سے مراد عزت وتکریم اور عالی شان ہوناہے ۔اگر کسی کےپاس عالی شان رہائش، قیمتی گاڑی، فیشن ایبل کپڑے ، جدید موبائل اوردوسرے قیمتی لوازمات  موجود ہوں تو ان کی عزت میں اضافہ ہوگا۔اس شان وشوکت کو عمومی پر سٹیٹس کہاجاتاہے  رشتوں کے لین میں سٹیٹس کو بڑی  اہمیت دی جاتی ہے ۔ پیسے کےبغیر سٹیٹس نہیں بنتا ، توپیسے کی دوڑ کے پیچھے انسانی  ضروریات  سے زیادہ اسی سٹیٹس  کےحصول کی خواہش ہوتی ہے ۔ حقیقتاً یہ سوچ اورطرزِ عمل کے فرمان کے خلاف ہے ۔ کیونکہ ’’ اللہ کے نزدیک زیادہ باعزت وہ جو زیادہ تقویٰ والا ہے ‘‘    اور اللہ تعالیٰ نے یہ بھی واضح کردیا ہے کہ :’’ عزت صرف اللہ  ، اس کے رسول کے لیے  ہے اورایمان والوں کے لیے  ہے  لیکن  منافق لوگ اسے نہیں سمجھتے ۔‘‘ لہذا  کسی بھی کے سٹیٹس  کا معیار اس کا تقویٰ  ہے نہ کہ قیمتی  چیزیں۔اپنی دولت، طاقت، ذات،رنگ یا کسی اور وجہ سے خود کو دوسروں سے زیادہ  اعلی ٰسمجھنا شیطانی فعل ہے کیونکہ شیطان نے صرف اس لیے  آدم کو سجدہ کرنے سےانکار کردیا تھا  کہ وہ آگ سے ہے اور آدم خاک سے ۔ زیر کتاب ’’ شان وشوکت  کی حوس ‘‘ ڈاکٹر محمد سلیم  کی تصنیف ہے فاضل مصنف نے  اس کتاب میں حقیقی اورجعلی سٹیٹس کی تفصیل وتاریخ کے علاوہ دھوکے   گھر (دنیا) اور حقیقی گھر(آخرت) کا موازنہ بھی کیا ہے ۔ یہ کتاب  سوچ کے رخ اورطرزِ عمل میں مثبت تبدیلی لانے میں مدد گار بنےگی۔ ان شاء اللہ 

 

عناوین صفحہ نمبر
تعارف 11
سٹیٹس کی نقاب کشائی
سٹیٹس ہے کیا چیز؟ 17
عزت اور سکون کیسے حاصل ہوں؟ 17
کیا کی عزت مغربی پاسپورٹ میں ہے؟ 19
سکون کیسے حاصل ہو؟ 20
سٹیٹس کی نمائش شیطان کی پیروی ہے 21
حسب پر فخر اور نسب پر طعن کرنا جاہلیت ہے 22
بلند ترین عزت کے رول ماڈل 23
فاروق اعظمؓ کی عزت کے سٹیٹس سمبلز 24
حقیقی عزت کے معیار کو پہچانیے 26
دنیا تو ایک عارضی خیمہ ہے 26
خرابی کی جڑ، نفسانی خواہشات کی پیروی 27
سٹیٹس اور سرکشی کا تعلق 29
میں الملا کے لفظ پر غور کیجیے 30
کے نزدیک ایک غریب نابینا صحابی کا سٹیٹس 33
کے نزدیک چھ غریب کا سٹیٹس 34
غریب اور مخلص مومنوں سے رسول اللہﷺ کو وابستہ رہنے کی ہدایت 35
کے ہاں دنیاوی سٹیٹس کی کوئی حیثیت نہیں 36
ہندوؤں میں انسانوں کی معاشرتی درجہ بندی 36
کے آئین کا آرٹیکل نمبر248 37
میں انسانوں کی درجہ بندی 38
اسلام، معیار زندگی بلند کرنے کی ترغیب دیتا ہے 39
سٹیٹس ٹائی ٹینک کب بنتا ہے؟ 40
سٹیٹس کے دلداہ لوگوں کے لیے سخت تنبیہہ 43
سٹیٹس اور فیس بک کا فتنہ 44
فیس بک پر اپنا سٹیٹس اپ لوڈ کرنے کے نقصانات 45
اپنے آپ کو نمایا کرنے(علو)کا کبیرہ گناہ 45
تعالی کی میں ناپسندیدہ شخصیت 46
فضولیات میں انہماک کا گناہ 47
آبیل مجھے مار 47
فیس بک پر تجسس ایک کبیرہ گناہ 48
ناشکری ایک مہلک کبیرہ گناہ 49
مومن کا حقیقی سٹیٹس علو نہیں ، خبت میں ہے 51
سٹیٹس اور کی چال 53
علو یا  تکبر کی تین حالتیں : مرح، اختال، اور فخر 54
کے سامنے عاجزی(خبت) کی نشانیاں 55
سٹیٹس کی دوسری مذموم خرابی۔ فساد فی الارض 55
خوش حال لوگوں کی پیرویی سے عذابوں کا نزول 58
فساد فی الارض میں ایک کو کیا کرنا چاہیے؟ 59
متکبر لوگوں کی مستقل نشانی۔ مصائب پر بےحسی 61

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
5.7 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...