الیسر شرح طیبۃ النشر فی القراءات العشر

الیسر شرح طیبۃ النشر فی القراءات العشر

 

مصنف : محمد تقی الاسلام دہلوی

 

صفحات: 338

 

مجید     نبی کریم ﷺپر نازل کی جانے والی   آسمانی کتب میں سے  آخری  کتاب ہے۔آپﷺ نے  اپنی زندگی میں    کرام ﷢ کے سامنے  اس کی مکمل تشریح وتفسیر  اپنی  عملی زندگی ،  اقوال  وافعال اور اعمال کے  ذریعے پیش فرمائی اور صحابہ کرام ﷢کو مختلف قراءات میں  اسے پڑھنا  بھی سکھایا۔ صحابہ کرام   ﷢ اور ان کے بعد آئمہ  فن اور قراء نے  ان قراءات کو آگے منتقل کیا۔  کتبِ میں  اسناد احادیث کی طرح  مختلف قراءات کی اسنادبھی موجود ہیں ۔ اس وقت دنیا  بھر میں سبعہ احرف پر مبنی دس قراءات  اور بیس روایات پڑھی اور پڑھائی جارہی ہیں۔اور ان میں سے چار روایات (روایت قالون،روایت ورش،روایت دوری اور روایت حفص)ایسی ہیں جو دنیا کے کسی نہ کسی حصے میں باقاعدہ رائج اور متداول ہیں،عالمِ کے ایک بڑے حصے پر قراءت امام عاصم بروایت حفص رائج ہے، جبکہ مغرب ،الجزائر ، اور شمالی افریقہ میں قراءت امام نافع بروایت ورش  ، لیبیا ،تیونس اور متعدد افریقی ممالک میں روایت قالون عن نافع ،مصر، صومالیہ، سوڈان اور حضر موت  میں روایت دوری عن امام ابو عمرو بصری رائج اور متداول ہے۔ مجلس التحقیق الاسلامی ،لاہور  میں ان چاروں متداول روایات(اور مزید روایت شعبہ) میں مجمع ملک فہد کے مطبوعہ مجید بھی موجود ہیں۔عہد تدوین علوم سے کر آج تک قراءات قرآنیہ کے موضوع پر بے شمار اہل   اور قراء نے   علوم ِقراءات کے موضوع پرسیکڑوں کتب تصنیف فرمائی ہیں  اور ہنوز یہ سلسلہ جاری وساری ہے ۔حجیت قراءات  وفاع قراءات  کےسلسلے میں ’’ جامعہ لاہور الاسلامیہ ، لاہور  کے ترجما  ن مجلہ   ’’ رشد‘‘ کے  تین جلدوں میں خاص نمبر  گراں قد ر ذخیرہ  ہے اور اردو میں اس نوعیت کی اولین علمی کاوش ہے ۔اللہ  تعالیٰ   قراءات   کے  موضوع پر  اس  ضخیم علمی  ذخیرہ کےمرتبین وناشرین کی اس عمدہ کاوش کو قبول فرمائے ۔آمین۔ زیر نظرکتاب’’الیسر شرح طیۃ النشر فی  القرءات العشر‘‘ قراءات عشرہ کی عظیم القدر درسی کتاب ’’ طبیۃ النشر فی  القرءات العشر‘‘ از جزری ﷫ کی  عام فہم اور شافی شرح ہے ۔الیسر  محمد تقی الاسلام دہلوی  کی تالیف ہے موصوف نےاس شرح کا نام  النَّضِير البَصَرُ الضَّبِيعةُ النَّضرُ    رکھا لیکن یہ الیُسر کے نام سے معروف ہے ۔چونکہ طیبۃ النشر فن کی آخری  درسی کتاب  ہےاس  لیےشارح  نے اس شرح میں انتہائی اختصار سے کام لیا ہے۔شرح کا انداز اس طرح کا رکھا ہے کہ جو ہے وہی شرح ہے یعنی تشریحی ترجمہ ہے ۔ جس سے مقصود ومطلب بآسانی اخذ ہوسکے۔ اسی مقصد کےلیے کلمات رمزیہ کو اسماء کے قائم مقام رکھا ہےا ور ان کو ترجمہ میں بطور ِ اسماء کے لیا ہے۔نیز اختصار  کے پیش تکرار سے بچنے کےلیے زیادہ تر ایسا کیا ہے کہ اختلافی کلمہ کا پہلے کیاپھر قیود بیان کی ہیں ۔اور اندازِ شرح کو آسان سےآسان تر کرنے کی حتی الوسع کوشش کی ہے ۔ تاکہ طلباء خود نفسِ  اشعار سے اختلاف اور وجوہ کو سمجھ کر نکالیں۔شائقین تجوید کے لئے یہ ایک مفید اور شاندار کتاب ہے،جس کا تجوید وقراءات کے ہر طالب علم کو مطالعہ کرنا چاہئے۔ تعالیٰ مؤلف مرحوم کی اس کاوش کو قبول فرمائے اور ان کے میزانِ حسنات میں اضافہ فرمائے۔(آمین)

 

عناوین صفحہ نمبر
تہدیہ 7
کلمہ شکر اوراظہار حقیقت 8
اسلوب بیان 10
مقدمة الکتاب 11
باب الاستعاذة 36
باب البسملة 38
سورة ام القرآن 40
باب الادغام الكبير 44
باب هاء الكناية 56
باب المد و القصر 61
باب الهمز المفرد 80
باب السكت علي الساكن قبل الهمز وغيره 91
باب الادغام الصغير 101
باب حروف قربت مخارجها 104
باب مذاهبهم في الراءات 125
باب اللامات 131
باب الوقف على موسوم الخط 134
باب مذاهبهم في الزوائد 148
باب فرش الحروف :سورة البقرة 159
سورة آل عمران 184
سورة النساء 192
سورة المائده 199
سورة الانعام 203
سورة الاعراف 214
سورة الانفال 221
سورة التوبة 226
سورةيونس عليه السلام 230
سورة هود عليه السلام 234
سورة يوسف عليه السلام 238
سورة الرعد و اختيها 240
سورة النحل 244
سورة الاسراء 247
سورة الكهف 251
سورة مريم عليها السلام 257
سورة طه عليه السلام 260
سورة الانبياء عليهم السلام 265
سورة الحج و المؤمنون 267
سورة النور والفرقان 272
سورة الشعراء و اختيها 277
سورة العنكبوت و الروم 282
ومن سورة لقمٰن عليه السلام الى سورة يس ﷺ 285
سورة يس صلواة الله وسلامه عليه وآله 292
سورة الصٰفٰت 295
ومن سورة ص الى سورة الاحقاف 297
سورة الاحقاف واختيها 306
ومن سورة الحجرات الى سورة الرحمٰن عزو جل 309
سورة الرحمٰن عزوجل 316
ومن سورة الواقعه اليٰ سورة التغابن 313
ومن سورة التغابن الىٰ سورة الانسان 317
سورة الانسان و المرسلٰت 322
ومن سورة النبا الىٰ سورة التطفيف 325
ومن سورة التطفيف الىٰ سورة الشمس 327
ومن سورة الشمس الىٰ آخر القرآن 329
باب التكبير 331

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
9.7 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Leave A Reply