معارف الاسماء شرح اسماء الحسنٰی

معارف الاسماء شرح اسماء الحسنٰی

 

مصنف : قاضی سلیمان سلمان منصور پوری

 

صفحات: 259

 

تعالی ٰ کے  بابرکت نام او رصفات جن کی پہچان اصل ہے ،کیونکہ ان صفات کی صحیح معرفت سے  ذاتِ باری تعالیٰ کی معرفت حاصل ہوتی ہے ۔عقیدۂ  توحید کی  معرفت اور اس پر تاحیات قائم ودائم رہنا ہی اصلِ ہے ۔اور اسی پیغامِ توحیدکو پہنچانے اور سمجھانے کی خاطر و رسل کومبعوث کیا گیا او رکتابیں اتاری گئیں۔ تعالیٰ  کےناموں او رصفات کے حوالے سے کی  اس مستقل قسم کوتوحید الاسماء والصفات کہاجاتاہے ۔ قرآن  واحادیث میں اسماء الحسنٰی کوپڑھنے یاد کرنے  کی فضیلت بیان کی گئی ہے ۔ارشاد باری تعالی ہے۔’’ وَلِلَّهِ الْأَسْمَاءُ الْحُسْنَى فَادْعُوهُ بِهَا ‘‘اور تعالیٰ کے  اچھے نام ہیں تو اس کوانہی ناموں سےپکارو۔اور اسی طرح ارشاد نبویﷺ ہے«إِنَّ لله  تِسْعَةً وَتِسْعِينَ اسْمًا مِائَةً إِلَّا وَاحِدًا، مَنْ أَحْصَاهَا دَخَلَ الجَنَّةَ»یقیناً اللہ تعالیٰ کے نناوےنام  ہیں یعنی ایک کم 100 جس نےان  کااحصاء( یعنی پڑھنا سمجھنا،یادکرنا) کیا وہ جنت میں داخل ہوگا۔(صحیح بخاری )اسماء الحسنٰی کے  سلسلے میں اہل نے مستقل کتب تصنیف کی ہیں اور بعض نے ان اسماء کی شرح بھی کی  ہے زیر کتاب ’’معارف الاسماء شرح اسماء الحسنیٰ ‘‘   النبیﷺ پر مقبول عام کتاب رحمۃ للعالمین  کے  مصنف  جناب  قاضی محمد سلیمان منصورپوری﷫ کی تصنیف  ہےجو کہ اللہ  تعالیٰ کے ننانوے ناموں کی  بنظیر شرح ہے ۔مصنف موصوف نے روایات کی روشنی میں  اسماء  الحسنی ٰ کو نقشہ جات  کی صورت میں پیش  کی ہے۔ تعالیٰ   مصنف کتاب کو جنت الفردوس میں اعلیٰ وارفع مقام عطافرمائے (آمین)

عناوین صفحہ نمبر
عرض ناشر 7
خطبہ کتاب 9
یہ مختصر اسماء االلہ لحسنی  کے متعلق ہے 9
اصل اس بارہ میں تعالی کا ارشاد 10
میں ہے 11
میں ہے 11
کی دوسری ہے 12
ترمذی کی ہے 12
ترمذی کی دوسری ہے 13
ابن ماجہ میں ہے 13
طریق دوم 15
طریق سوم 15
نقشہ  روایت اسماءاللہ الحسنی 15
نقشہ انتخاب اسماءاللہ الحسنی 15
بجمع روایات 17
نقشہ دوم 22
فصل۔ 25
نقشہ نودونہ نام پاک عزوجل مندرجہ باب اول 28
شرح 33
باب اول 35
جل جلالہ 35
خواص لفظی 40
2۔ الرحمن 43
3۔الرحیم 47
4۔الملک 51
5۔ القدوس 54
6۔السلام 55
7۔المؤمن 56
8۔المھیمن 58
9۔العزیز 60
10۔الجبار 61
11۔المتکبر 62
12۔الخالق 63
13۔الباری 64
14۔المصور 64
15۔الغفار 66
16۔القھار 67
17۔الو ھاب 68
18۔الرزاق 69
19۔الفتاح 70
20۔العلیم 72
21۔السمیع 75
22۔البصیر 77
23۔اللطیف 78
24۔الخبیر 79
25۔الحلیم 80
26۔العظیم 81
27۔الغفور 83
28۔الشکور 84
29۔العلی 85
30۔الکبیر 87
31الحفیظ 89
32۔المقیت 90
33۔الحسیب 91
34۔الکریم 92
35۔الرقیب 93
36۔القریب 94
37۔المجیب 96
38۔الواسع 97
39۔الحکیم 98
40۔الودود 102
41۔المجید 105
42۔الشھید 106
43۔الحق 108
44۔الوکیل 111
توکل 113
45۔القوی 114
46۔المتین 116
47۔الولی 117
48۔الحمید 119
49۔القیوم 124
50۔الواحد 125
51۔الاحد 131
52۔الصمد 132
53۔القادر 134
54۔المقتدر 135
55۔الاول 136
56۔الاخر 136
57۔الظاھر 136
58۔الباطن 136
59۔الوالی 139
60۔المتعالی 139
62۔البر 141
63۔التواب 142
کا 143
64۔العفو 145
65۔الرؤف 146
66۔الجامع 147
67۔الغنی 148
68۔النور 150
69۔الھادی 153
تعالی کی ہدایت کے چار مراتب 154
70۔البدیع 155
71۔رب 156
72۔مبین 158
73۔القدیر 159
74۔الحافظ 160
تعا لی ہی حافظ ہے 160
اناجیل  کو لیجئے 161
75۔الکفیل 163
76۔الثاکر 163
شکر 164
بزرگان کے بھی شکر  کے متعلق شنیدنی ہیں
77۔الاکرام 165
78۔الاعلی 166
79۔الخلاق 167
80۔المولی 170
81۔النصیر 171
82۔الالہ 174
83۔العلام 175
84۔القاھر 177
85۔الغافر 177
86۔الفاطر 178
87۔الملیک 179
88۔الحفی 180
89۔المحیط 181
90۔المستعان 183
91۔الرفیع 185
92۔الکافی 186
93۔ 188
94۔المنان 191
95۔الجلیل 192
96۔المحی 193
97۔الممیت 194
98۔الوارث 195
99۔الباعث 197
100۔الباقی 198

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
7.5 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...