بدعات اور ان کی ہلاکت خیزیاں

بدعات اور ان کی ہلاکت خیزیاں

 

مصنف : عبد السلام بن صلاح الدین مدنی

 

صفحات: 369

 

دینِ اسلام  ایک سیدھا اور مکمل دستورِ ہے جس کو اختیار کرنے میں  دنیا وآخرت کی کامرانیاں پنہاں ہیں  ۔ یہ ایک  ایسی روشن شاہراہ ہے جہاں رات دن کا کوئی فرق  نہیں  اور نہ ہی اس میں کہیں پیچ خم ہے ۔ اللہ  تعالیٰ نے اس کو انسانیت کے لیے پسند فرمایا اوررسول پاکﷺ کی زندگی  ہی میں  اس کی  تکمیل فرمادی۔عقائد،عبادات ، معاملات، اخلاقیات ، غرضیکہ جملہ شبہائے زندگی میں کتاب وسنت ہی  دلیل ورہنما ہے ۔ کرام    نے کتاب وسنت کو جان سے  لگائے رکھا ا  ن کے معاشرے میں کتاب وسنت کو قیادی حیثیت حاصل رہی  اور وہ  اسی شاہراہ پر گامزن رہ کر دنیا وآخرت کی کامرانیوں سے ہمکنار ہوئے ۔ لیکن جو  ں جوں زمانہ گزرتا  گیا لوگ  کتاب وسنت  سے دور ہوتے گئے  اور بدعات وخرافات نے ہر شعبہ میں اپنے  پاؤں جمانے شروع کردیئے اور  اس  وقت بدعات وخرافات  اور سوء نے پورے  کو  اپنی  لپیٹ میں لے رکھا ہے ۔ دنیا بھر بالخصوص برصغیر پاک وہند کے اندر مروجہ وبدعات وخرافات ایک ایسا کینسر ہے جو ہمارے اعمال کو ہلاک  وبرباد اور غارت کررہا ہے۔جید اہل  نے   بدعات  اور اس  کے  نقصانات  سے  روشناس کروانے کے لیے   اردو  وعربی میں متعدد چھوٹی  بڑی کتب   لکھیں  ہیں جن کے  مطالعہ سے اہل اسلام  اپنے  دامن کو   بدعات سے  خرافات سے بچا سکتے ہیں ۔زیر کتاب’’بدعات اور ان کی ہلاکت خیزیاں‘‘ مولانا عبد السلام صلاح الدین مدنی حفظہ کی    وتحقیقی کاوش ہے ۔ یہ کتاب اپنے موضوع میں ایک کافی اورشافی کتاب ہے فاضل مصنف نے اس کتاب میں وسنت  اور صالحین وائمہ کے کی روشنی میں  اتباع کی اہمیت اوربدعت کی ہلاکت خیزیوں کو اجاگر کرنے کی بھرپور کوشش کی ہے  اور ہمارے معاشرے میں موجود تقریباً تمام بدعتوں کاشرعی پوسٹ مارٹم کرتے ہوئےاسلامی سماج میں رائج بدعات کی  خطرناکیوں اورہلاکت خیزیوں کوتفصیلاً بیان کیا ہے   ۔شیخ احمد مجتبیٰ السلفی المدنی حفظہ  کی نظرثانی اور مراجعت سےکتاب کی  افادیت دوچند ہوگئی ہے۔  اللہ   تعالیٰ مصنف  وناشر کی اس وتحقیقی   کاوش کو قبول فرمائے اور اسے عوام الناس کی اصلاح  کا ذریعہ بنائے (آمین)

 

عناوین صفحہ نمبر
انتساب 3
عرض ناشر 5
تفریظ 8
صریرخامہ 16
امامانِ اور سنتِ رحمت للعالمین صلی علیہ وسلم 22
سببِ تألیف 30
طریقہ تالیف 31
نذرانہ تشکروامتنان 33
آخری گزارش 35
کی لغوی تعریف 37
کی شرعی یا اصطلاحی تعریف 37
کے خطرات اور اس کے برےنائج واثرات 41
کے اسباب 49
(1)جہالت 49
(2)نفس پرستی 51
(3)شخصیت پرستی اور تعصب 51
(4)غیروں کی مشابہت اور ان کی نقالی 59
(5)تعلیمی ادارے اور ارباب جبہ ودستار 61
(6)حب رسول صلی علیہ وسلم 64
امت اسلامیہ وبدعت کے دوراہے پر 72
حب رسول صلی اللہ علیہ وسلم کے تقاضے 72
(1)آپ صلی علیہ وسلم کا احترام اور تعظیم 74
(2)آپ صلی علیہ وسلم کی اطاعت کیشی اور تابعداری (آپ صلی اللہ علیہ وسلم….. 78
(3)شوق دیدار مصطفیٰ ورغبت رفاقت مجتبیٰ صلی علیہ وسلم 88
(4) سے محبت 100
(5)آپ صلی علیہ وسلم کی سے محبت اور اس کا دفاع 102
(6)آپ صلی علیہ وسلم پر درودوسلام 103
اولا: الخیرات 105
ثانیا:درودناری 109
کے برگ وبار 117
(1)خوارج کی 118
(2)فرقہ قدریہ کی 119
(3)فرقہ جبریہ کی 120
(4)بدعتِ اعتزال 121
(5)رافضہ کی 122
(6)تعطیل کی 123
(7)مرجئہ اور وعیدیہ کی 123
(8) کی 124
(الف)فلسفئہ وحدت الوجود،وحدت الشہور،اور فلسفئہ….. 124
صوفیاءاور رقص وسرود 126
اہل اور جنس پرستی 127
رفض وتشیع اور صوبیاء کی تعلیمات 127
(لف)رسالت 127
(ب)کتاب وسنت 128
(ج)عبادت وریاضت 129
ماہ وسال کے موجِ تلاطم میں 132
(1)ماہ ، اور بدعتِ اکھاڑا 133
آئمہ اثنا عشر:(فرقئہ کی میں) 151
(2)ماہ صفر سے بدشگونی لینا 153
(3)جشن میلاد النبی صلی علیہ وسلم 157
(6)’’کرسمس ڈے‘‘کی نقالی اور جشن میلاد النبی صلی علیہ وسلم اور ’’محبت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی حیلہ سازی‘‘ 166
مروجہ میلادالنبی صلی علیہ وسلم کے جواز کے قائلین کے شبہات اور ان کا مختصر جواب 175
(4)جشن شب اسراء ومعراج 181
(5)نماز’’رغائب‘‘ 191
’’ِغائب‘‘کیا ہے؟ 191
(6)ماہ رجب میں خاص عمرہ(رجبی عمرہ) 194
(8)رجب کے کونڈے 196
(9)شبِ براءت …..حقیقت…..یا……خرافات؟؟؟ 198
(الف)15؍ویں شعبان کا خاص اور شب میں شب…. 199
(10)’’شبِ براءات‘‘یا شبِ قدر‘‘ 207
(ج)شبِ براءات اور حلوہ خوری 211
(د)شب براءت اور قبروں کی زیارت 211
(ھ)’’نمازِ ہزاری‘‘ 212
ایک لمحہ فکریہ 217
(11)ماہِ کے بھنور میں 218
(1) کے استقبال میں پٹاخے اور روشنیاں 218
(2)شبینہ 221
(3) کا الوداعی جمعہ 225
(4)ختمِ اور وعاءِ ختم قرآن 227
(5)دخول کی مسرت میں پٹاخے 229
عقائد کی زد میں 231
(12)آپ صلی علیہ وسلم کے آثار ونشانات سے تبرک (بدعت….. 232
(الف)آپ صلی علیہ وسلم کے قدم مبارک سے تبرک 232
(ب)آپ صلی علیہ وسلم کے موئے مبارک 233
(ج)رومالِ مبارک 233
(ھ)قبر رسول صلی علیہ وسلم کی زیارت کے لئے 237
(1)قبر رسول صلی علیہ وسلم کے لئے خصوصی 237
اعتراف حقیقت 239
٭سلام اور خطوط پہنچوانا 241
٭بدعتِ ’’خاک شفا‘‘ 244
(و)علماءومشائخ کی قبروں کے بوسے دینا،چومنا چاٹنا ،اور…… 246
(13)’’786‘‘رہزن وایمان 247
ایک تلخ حقیقت 252
(14)،ایشوراور گاڈ(god) 252
(15)مشیت ایزدی 258
عبادات کی لپیٹ میں 260
اولا:اذان 261
(1)اذان سے قبل درود شریف 261
(2)اذان سے قبل اعوذ باللہ ،بسم پڑھنا 262
ثانیا:وضوء 265
(1)وضوء کی نیت 266
(2)ہرعضو کے لئے دعاءِ مخصوص 266
(3)گردن کی مسح کرنا 267
(4)اعضاءِوضوءکو تین بار سے زیادہ دھونا 268
(5)وضوء میں وسوسہ 268
(6)وضوء کے بعد’’إناأنزلناه‘‘پڑھنا 268
ثالثا: 268
(1)نیت کی 269
(2)تکبیر تحریمہ کے وقت بآواز بلند امام کے ساتھ تکبیر کہنا 271
(3)’’ولاالضالین‘‘ کہتے ہوئے آمین 272
(4) کے بعد سکتہ 272
(5)تشہد میں دردپڑھتے ہوئے’’سیدنا‘‘کا اضافہ 273
(6) کے بعد سرپرہاتھ رکھنا 275
(7) کے بعد مصاحفہ اور دعاءِ قبولیت 275
(8)بالتزام اجتماعی کرنا 276
(9) کے بعد چہرے پر ہاتھ ملنا 279
(10)سلام کے بعد اپنے ہاتھوں پر ’’یانوریانور‘‘کہہ کراپنے…… 280
(11)تسبیح 280
(12) کا ثواب کو بخشا 283
(13)جمعہ کے دن سورہ’’الم السجدہ‘‘اور’’سورہ الدہر‘‘کے …… 283
(16) جمعہ کےلئے دیہات سے شہر جانا 283
(18)نمازِ قضاء عمری 285
(19)صلاۃ التسبیح 286
رابعا: 288
(1)روانگی سے قبل جلسہ الوداع منعقد کرنا 290
(2)جانے اور آنے والے حجاج کوپھولوں کے ہار،اور مالے….. 290
(4)’’حاجی صاحب‘‘کہنا او رکہلوانا 290
(5) وعمرہ میں لفظوں سے نیت کرنا 291
(6)میقات سے پہلے احرام باندھنا 291
(9)پیدل کےلئے جانا 292
(14)اجتماعی طورپر تلبیہ 292
(15)طواف کرتے ہوئے اجتماعی 293
(16)دعاء مقام ابراہیم 293
(17)دیوار کعبہ ،غلافِ کعبہ اور مقام ابراہیم کا چھونا 293
(18)رکن یماین کا بوسہ 294
(20)میزاب رحمت کی 295
(21)حجر اسود سے ہر بار گزرتے ہوئے تکبیر پڑھنا 295
(22)ہر چکر کی الگ 295
(23)طواف کا ثواب ماں باپ کو بخشنا 295
بدعاتِ عرفات 297
298
رمی جمار 299
(43)جوتے اور چپل سے رمی کرنا 299
کچھ اور بدعات 300
زیارتِ النبی صلی علیہ وسلم 302
اذکار وبدعت کے دلدل میں 308
(1)’’ اللہ ‘‘یا’’ہوہو‘‘اجتماعی طور پر کہنا یاکرنا 309
(3) او ر ذکرکےلئے جمع ہونا 309
(4)اجتماعی طور پر صبح وشام کی 310
(7)تسبیح کے دانوں پر تسبیح پڑھنا 311
(8)’’یا لطیف‘‘کا ورد(122)بار 311
(9)ڈکار آنے پر الحمداللہ اور جمائی آنے پر ’’أعوذ باللہ‘‘کہنا 311
(10)دعاء میں نبی کریم صلی علیہ وسلم کے جاہ ومرتبہ کا واسطہ 312
بدعات جنائز 314
اولا:قریب المرگ کے متعلق بدعات 315
ثانیا: کے بعد مبتدعانہ امور 315
ثالثا:کفن اور تکفین کے متعلق بدعات 316
رابعا:غسل کے بدعی اور غیر شرعی امور 316
خامسا:جنازہ لے جانے کے متعلق غیر مسنون افعال 317
سادسا: جنازہ اور بدعات 318
سابعا:تدفین کی بدعات 319
ثامنا:تعزیت کے متعلق بدعات 322
تعزیت کی چند بدعات ملاحظہ فرمائیں 324
تاسعا:قبر اور زیارت قبر کے متعلق بدعات 325
عاشرا: کو نفع دینے والے اعمال کے متعلق چند بدعات 333
اور کے قربان گاہ پر 334
اولا: 334
ثانیا: 337
(1)اچھے ناموں کا انتخاب نہ کرنا 338
(2)گائے ذبح کرنا 338
(3) میں شراکت 339
مقدس کے خراد پر 340
مساجد بدعات کی زد میں 350
چند متفرق بدعات 356
آخری بات 358

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
7.7 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Leave A Reply