حج و عمرہ اور زیارت کے مسائل کی تحقیق و وضاحت

و عمرہ اور زیارت کے کی و وضاحت

 

مصنف : عبد العزیز بن عبد بن باز

 

صفحات: 176

 

کے پانچ بنیادی ارکان میں سے کا ہے ۔بیت کی زیارت او رفریضۂ کی ادائیگی ہر صاحب ایمان کی تمنا اور آرزو ہے ہر صاحب استطاعت اہل ایمان کے لیے زندگی میں ایک دفعہ فریضہ حج کی ادائیگی فرض ہے۔ ا ور اس کے انکار ی کا ایمان کامل نہیں ہے اور وہ دائرہ اسلام   سےخارج ہے۔ اگر اللہ تعالی توفیق دے تو ہر پانچ سال بعد حج یا عمر ہ کی صورت میں اللہ تعالی ٰ کے گھر حاضر ی کا اہتمام کرنا چاہیے۔ اجر وثواب کے لحاظ سے یہ رکن بہت زیادہ اہمیت کاحامل ہے تمام كتب حديث وفقہ میں اس کی فضیلت اور ومسائل کے متعلق ابو اب قائم کیے گئے ہیں اور تفصیلی مباحث موجود ہیں ۔ نبویﷺ ہے کہ آپ نےفرمایا الحج المبرور لیس له جزاء إلا الجنة’’ مبرور کا ثواب جنت سوا کچھ اور نہیں۔ مگر یہ اجر وثواب تبھی ہےجب حج او رعمر ہ نبوی کے مطابق اوراخلاص نیت سے کیا جائے ۔اور منہیات سےپرہیز کیا جائے ورنہ حج وعمرہ کےاجروثواب سےمحروم رہے گا۔حج کے ومسائل کے بارے میں و عربی میں چھوٹی بڑی بیسیوں کتب بازار میں دستیاب ہیں اور ہر ایک کا اپنا ہی رنگ ڈھنگ ہے۔انہی کتب میں سے زیر کتاب سعودی کے سابق فضیلۃ الشیخ جناب عبدالعزیز بن بن باز ﷫ کی ہے۔ اصل کتاب میں التحقيق والايضاح لكثير من الحج والعمرة والزيارة على ضوء الكتاب والسنة کے نام سے ہے جس کے اردو وتفہیم کی سعادت ہند کے نامور عالمِ جناب مولانا مختار ندوی نے حاصل کی۔ مسائل کی بابت یہ مختصر مجموعہ ہےجو کتاب اور رسول اللہ ﷺکی روشنی میں حج ،عمرہ اور زیارت کےاکثر مسائل پر مشتمل ہے۔ یہ کتابچہ پہلی مرتبہ 1363ھ میں جلالۃ الملک عبد العزیز بن عبد الرحمن الفیصل  کے خرچ پر شائع ہوا۔ اس کے بعد سعودی عرب ، برصغیر پاک وہند میں اس کے متعدد ایڈیش شائع ہوچکے ہیں اور لاکھوں مسلمانوں نے اس سے استفادہ کیا اورحج وعمرہ کو مسنون طریقہ سے ادا کرنے کی سعادت حاصل کی ۔موجود ہ ایڈیشن وزارت امور واوقاف سعودی کی طرف سے شائع شدہ ہے۔اس کتاب کی طباعت میں جن حضرات نے حصہ لیا تعالی ان کی کو شرف قبولیت سے نوازے اور اسے اہل اسلام کے نفع بخش بنائے۔ آمین

 

عناوین صفحہ نمبر
المقدمہ 7
خطبۃ الکتاب 9
اورعمرہ کےوجوب اوردلائل کابیان 13
کےلیے جلدی کرنا 15
اورعمرہ زندگی میں ایک بار فرض ہے 17
فضل : گناہوں اورمظالم سے کرنےکے بیان 18
کے لیے حلال کمائی 20
کا قصد رضائے الہٰی 22
میقات پر پہونچ کر حاجی کیا کرے؟ 27
حائضہ اور نفاس والی عورت کا حکم 28
منڈانا حرام ہے 31
عورت جس میں چاہے احرام باندھ سکتی ہے 32
احرام کےعلاوہ لفظوں میں نیت کرنا ہے 34
میقات کا بیان 36
حاجی کےلیے میقات سےبلااحرام گزرنا حرام ہے 37
کےبعد کثرت سے عمرہ کرنا مشروع نہیں 43
موسم کے علاوہ جوشخص میقات پر پہونچے اس کوعمرہ کے احرام کی نیت کرنی چاہیے 44
جس حاجی کے پاس اشہر میں جانور ساتھ ہوتو وہ کی نیت کرے ، جس کے پاس نہ ہو وہ تمتع کی 46
عذر کےخوف سےمشرو ط احرام باندھنا 49
بچے کا 50
احرام کی مشروع اور مباح چیزوں کا بیان 54
مکہ میں آنےکے بعد حاجی کیا کرے ؟ 64
حرام میں داخلہ اور طواف کا بیان 66
عورتوں کے لیے اور ترک زینت ضروری ہے 68
طواف و سعی کی کوئی مخصوص دعاء نہیں 71
سعی اور اس کےآداب کا بیان 73
فصل 80
آٹھوین ذی الحجہ کومنیٰ جانے کا بیان 81
عرفہ جانے کا بیان 82
عرفات میں وقوف اور اس کے کا بیان 83
وحدیث کی منتخب 86
میں رات گزارنےکا بیان 106
عورتوں اور بچوں کونصف شب کے بعد بھیجنا چاہیے 107
صبح ہوتےہی میں جانا ،کنکری مارنا ، کرنا 108
کےایام کا بیان 110
متمتع حاجی کےلیے ایک سعی کافی نہیں 113
فصل
یوم النحر کو پہلے رمی پھر نحر ، پھر حلق پھر طواف کرنا چاہیے 118
جب حاجی رمی اور حلق و طواف کر لےتو پوری طرح حلال ہو گیا اور اگر ان میں سے دو کرے تو تحلل اول کے حکم میں ہو گا 118
کے لیے واپسی اور وہاں تین دن کا قیام 120
کنکری مارنے کے کا بیان 120
میں دودن کی تعجیل جائز ہے لیکن تیسرے دن کی تاخیر افضل ہے 122
بچوں ، بوڑھوں اوربیماروں اور حاملہ عورتوں کی طرف سےرمی کرنا جائز ہے 123
متمتع اورقارن پر دم واجب ہے 127
کا جانورحلال کمائی کا ہونا چاہیے 127
جس کےپاس جانور نہ ہو وہ تین دن ایام میں اور سات دن گھرجا کرروزہ رکھے 128
حجاج پر امر بالمعروف واجب ہے 131
نمازباجماعت کی پابندی 131
حاجی کے لیے معاصی سےاجتناب ضروری ہے 134
فصل
حائضہ اور نفاس والی عورت کے علاوہ طواف وداع سب پر واجبہے 146
فصل
مسجدنبوی کی زیارت کا بیان 147
قبر نبوی کی زیارت واجب نہیں 168
مسجدقبااور بقیع کی زیارت مستحبہے 172

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
5.6 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...