حیات طیبہ شاہ اسماعیل شہید

طیبہ شاہ اسماعیل شہید

 

مصنف :

 

صفحات: 445

 

کی  فضا میں  رشد وہدایت کی روشنیاں بکھیرنے کے لیے  تعالیٰ نے   اپنے  فضل  خاص سے ایک ایسی شخصیت کو پید ا فرمایا۔ جس نے  اپنی  قوت ایمانی اور وتقریر کے زور سے کفر وضلالت کے بڑے بڑے بتکدوں میں زلزلہ بپا کردیا اور وبدعات کے  خود تراشیدہ بتوں کو  پاش پاش کر کے  خالص  کی اساس قائم کی۔   یہ شاہ  ولی محدث  دہلوی  کے پوتے  شاہ اسماعیل  محدث دہلوی تھے۔ شیخ  الاسلام اور امام کے بعد  دعوت واصلاح میں امت کے لیے  ان کی ناقابل فراموش ہیں۔ انہو ں نے نہ صرف قلم سےجہاد کیا بلکہ عملی طور پر حضرت سید احمد شہید کی  امارت میں تحریک مجاہدین میں شامل  ہوکر سکھوں  کے خلاف کرتے ہوئے  بالاکوٹ کے  مقام پر  کا درجہ حاصل کیا   اور کے ناتواں اور محکوم مسلمانوں کے لیے  حریت کی ایک  عظیم مثال قائم کی۔ ان کے بارے   شاعر مشرق علامہ  اقبال نے  کہا  کہ ’’اگر مولانا محمد اسماعیل شہید کےبعد ان کے  مرتبہ کاایک مولوی بھی پیدا ہوجاتا تو آج ہندوستان کے ایسی ذلت کی زندگی  نہ گزارتے‘‘ زیر کتاب  برصغیر  پاک وہند  کی اسلامی کے اسی عظیم جرنیل  شاہ  اسماعیل شہید کی مبارکہ پر مشتمل ہے  کتاب کے پہلے   حصہ میں شاہ  اسماعیل شہید اور دوسرے حصہ  میں سید احمد شہید  کا  تذکرہ ہے۔
 

عناوین صفحہ نمبر
عرض ناشر 7
دیباچہ 9
پہلا باب ۔ نام ، لقب ، خطاب ، ولادت ، 25
دوسرا باب ۔ مولانا شہید کی ورزشیں 41
تیسرا باب ۔ مولانا شہید کا پہلا وعظ اور عوام الناس کی شورش 51
چوتھا باب ۔ ضروری تمہید ، مولانا شہید کے مختلف پر وعظ 71
پانچواں باب ۔ گورنمنٹ انگریزی کی انصاف پسندی ، سرکار انگریزی کی طرف سے وعظ کی ممانعت 97
چھٹا باب ۔ مولانا شہید کی متواتر کامیابیاں 109
ساتواں باب ۔ سکھ اور اس کا بانی ، سکھوں اور مسلمانوں کا اخلاقی اور ملکی برتاؤ 151
آٹھواں باب ۔ سے مراجعت ۔ بے بنیاد افواہیں 199
نواں باب ۔ کی تدبیریں ، بعض کا ذکر 211
دسواں باب ۔ مذہبی لڑائیاں جن کی ابتداء 1241ھ سے ہوتی ہے 233
گیارہواں باب ۔ فتح پشاور اور بعض بے اعتدالیاں 279
بارہواں باب ۔ 289
تیرہواں باب ۔ عبدالوہاب عینی ( نجد میں ) اور مولانا شہید دہلوی 299
چودہواں باب ۔ 311
پندرہواں باب ۔ دین میں سہولت 337
سولہواں باب ۔ مولانا شہید کی تصنیفات اور بعض 351

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
8.5 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...