حفظ قرآن کے 25 آسان طریقے

حفظ کے 25 آسان طریقے

 

مصنف : ڈاکٹر یحی بن عبد الرزاق غوثانی

 

صفحات: 186

 

جو شخص مجید کو حفظ کرنے کے بعداس پر عمل کرتا ہے تعالٰی اسے اجر عظیم سے نوازتے ہیں ۔اور اسے اتنی عزت وشرف سے نوازا جاتا ہے کہ وہ کتاب اللہ کو جتنا پڑھتا ہے اس حساب سے اسے جنت کے درجات ملتے ہیں ۔سیدنا بن عمر﷜ بیان کرتے ہیں کہ نبی ﷺ نے ارشاد فرمایا :’’ صاحب کوکہا جائے گا کہ جس طرح تم دنیا میں ترتیل کے ساتھ قرآن مجید پڑھتے تھے آج بھی پڑھتے جاؤ جہاں تم آخری آیت پڑھوگے وہی تمہاری منزل ہوگی ۔‘‘( جامع ترمذی: 2914 )’’ صاحب قرآن ‘‘سے مراد حافظِ قرآن ہے اس لیے کہ نبی ﷺکا فرمان ہے یؤم القوم اقرؤهم لکتاب الله  ’’یعنی لوگوں کی وہ کرائےجو کتاب کا سب سے زيادہ حافظ ہو ۔‘‘تو جنت کے اندردرجات میں کمی وزیادتی دنیا میں حفظ کے اعتبار سے ہوگی نا کہ جس طرح بعض لوگوں کا خیال ہے کہ اس دن جتنا وہ پڑھے گا اسے درجات ملیں گے ، لہذا اس میں مجید کے حفظ کی فضيلت ظاہر ہے ، لیکن شرط یہ ہے کہ اسے اللہ تعالی کی رضا کے لیے حفظ کیا گیا ہو۔ زیر کتاب  ’’ حفظ کے 25 آسان طریقے‘‘ ڈاکٹر یحییٰ بن عبد الرزاق غوثانی﷾      کی  کتاب كيف تحفظ القرآن الكريم قواعد أساسية وطرق عملية  کا ہے  ۔ فاضل مصنف نے اس کتاب کو انداز  میں اور حفظِ کے بنیادی قواعد کی روشنی میں تالیف کیا ہے اور جدید منہجی اسلوب کے ساتھ قرآن حفظ کرنے کے مختلف طریقے اور  اسالیب بیان کیے ہیں ۔یہ کتاب اپنے موضوع میں اس قدر  مفید اہم ہے  کہ اس کتاب کو اس قدر مقبولیت حاصل ہوئی کہ  تحفیظ  القرآن کا عالمی پروگرام چلانے والے ایک ادارے  نے نہ صرف اسے اپنے نصاب میں شامل کیا  بلکہ انہوں نے30 سے زائد ممالک میں  اس  کتاب کو تقسیم کیا ہے۔ وطن عزیز کی  معروف شخصیت شیخ القراء قاری محمد ابراہیم میرمحمدی ﷾ نے اس کتاب کی افادیت کے پیش  نظر  اپنے شاگرد رشید  حافظ فیض ناصر﷾  سے اس  کتاب کا آسان فہم ترجمہ کر  وا کر  شائع کیا ہے۔ اللہ تعالیٰ مصنف ، مترجم اور ناشرین کی  جہود کو شرف قبولیت سے نوازے ۔(آمین)

 

عناوین صفحہ نمبر
قارئین کے تاثرات 11
تقریظ 15
مقدمہ طبعہ اولیٰ 17
مقدمہ طبعہ ثانیہ 20
عرض مترجم 23
الفصل الاول:
المبحث الاول: کریم کی ہر اعتبار سے حفاظت 30
پہلا مرحلہ: لوح محفوظ میں کی حفاظت 30
دوسرا مرحلہ: نبی کریمﷺ پر نزول کے وقت راستے میں حفاظت 31
تیسرا مرحلہ: نبیﷺ کے سینہ مبارک میں جمع اور قلب اطہر میں حفاظت قرآن 32
چوتھا مرحلہ: لوگوں کو سناتے اور اس کی دیتے وقت حفاظت 33
پانچواں مرحلہ: روز تک کی حفاظت وصیانت 34
المبحث الثانی: کریم کی اور حفاظ قرآن کی فضیلت 37
رسول کریمﷺ کی میں حفظ کا مقام 38
کی نگاہ میں کی اہمیت 40
المبحث الثالث: یاد رکھنے کا وجوب اور اسے بھول جانے پر وعید 42
المبحث الرابع: کے ہاں حصول کی شروط 46
46
حرص 47
محنت 48
مناسب وسائل 48
استاذ کی صحبت 48
طویل مدت 49
الفصل الثانی: حفظ کے عمومی اور بنیادی قواعد وضوابط
پہلا قاعدہ: اخلاص کی اہمیت 53
دوسرا قاعدہ : کم حفظ کی اہمیت 57
تیسرا قاعدہ: حفظ کے لیےوقت کا انتخاب 59
چوتھا قاعدہ: حفظ کے لیے جگہ کا انتخاب 61
پانچواں قاعدہ: خوبصورت آواز میں کی قراءت 63
چھٹا قاعدہ: کریم کے ایک ہی طبع کا انتخاب 65
ساتواں قاعدہ: حفظ سے پہلے کی درستگی کا اہتمام 67
عجمی لوگوں کے لیے حفظ کا بہترین طریقہ 68
آٹھواں قاعدہ: مضبوط حفظ کے لیے ربط کا عمل 69
نواں قاعدہ: دوہرائی کا عمل نئے حفظ کو ضائع ہونے سے بچانے میں معاون 71
دسواں قاعدہ: مرتب انداز میں روزانہ حفظ کا اہتمام 73
گیارہواں قاعدہ: سست روی سے کیا گیا پختہ حفظ عجلت سے بہتر ہے 75
بارہواں قاعدہ: پر توجہ حفظ کی ختم کرتا ہے 77
تیرہواں قاعدہ: استاد کے ساتھ گہرے تعلق کی ضرورت 78
استاد کو کیسے منتخب کیاجائے؟ 80
استاد میں پائی جانے والی خصوصیات جن کی رعایت ضروری ہے 81
چودھواں قاعدہ: دروان حفظ کے رسم پر بھر پور توجہ 83
پندرہواں قاعدہ: حفظ کے ساتھ عمل صالح کا اہتمام 84
سولھواں قاعدہ: منزل کی مربوط دوہرائی پختگی کا ذریعہ 88
سترھواں قاعدہ: سمجھ کر پڑھنا حفظ کے لیے معاون 89
اٹھارواں قاعدہ: حفظ کے لیے سچی رغبت اور مضبوط محرک 89
انیسواں قاعدہ: اور ذکر الہٰی سے کی بار گاہ میں التجا 91
الفصل الثالث: حفظ عملی طریقے اور معاون وسائل
طریقہ1: حفظ کا مجرب طریقہ 99
طریقہ2: حفظ کا مجرب طریقہ 103
طریقہ3: حفظ کا مجرب طریقہ 104
طریقہ 4: کام کاج کرنے والوں کے لیے حفظ کا طریقہ 106
طریقہ 5: ریکارڈنگ سن کر حفظ کرنا 107
پہلی صورت 107
دوسری صورت 109
تیسری صورت 110

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
5.2 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...