حرمت آواز و ساز

حرمت آواز و ساز

 

مصنف : محمد حسین کلیم

صفحات: 243

 

آج ہمارے معاشرے میں رقص وموسیقی اور فحاشی وعریانی نےپوری قوت سے ڈیرے لگا رکھے ہیں۔زندگی کا کوئی شعبہ ایسا نہیں جو اس کےاثرات سے محفوظ رہا ہو۔جبکہ میں اور گانے بجانے کی شدید مذمت کی گئی ہے۔ نبی کریم ﷺ نے واضح الفاظ میں اس حوالے سے وعید کا تذکرہ کیاہے۔ نبی کریم ﷺ نے فرمایا:” میرى امت میں سے ایسے لوگ ضرور پیدا ہونگے جو شرمگاہ [زنا] ’ ریشم ’ شراب اور گانا وموسیقی کو حلال کرلیں گے” یہ دل میں نفاق پیدا کرنے اور کو ذکرالٰہی سے دور کرنے کا سبب ہے۔ ارشادِباری تعالی ہے: ﴿وَمِنَ النّاسِ مَن يَشتَر‌ى لَهوَ الحَديثِ لِيُضِلَّ عَن سَبيلِ اللَّهِ بِغَيرِ‌ عِلمٍ وَيَتَّخِذَها هُزُوًا ۚ أُولـٰئِكَ لَهُم عَذابٌ مُهينٌ﴾( سورة القمان)” لوگوں میں سے بعض ایسے بھی ہیں جو لغو باتو ں کو مول لیتے ہیں تاکہ بے کے ساتھ لوگوں کو کی راہ سے بہکائیں اور اسے مذاق بنائیں۔ یہی وہ لوگ ہیں جن کے لیے رسوا کن عذاب ہے”جمہورصحابہ وتابعین اورائمہ مفسرین کے نزدیک لہو الحدیث عام ہے جس سے مراد گانا بجانا اوراس کا ساز وسامان ہے او ر سازو سامان، موسیقی کے آلات اورہر وہ چیزجو انسان کو خیر اوربھلائی سے غافل کرے اور اللہ کی عبادت سے دور کردے۔ اس میں ان بدبختوں کا ذکر ہے جو کلام اللہ سننے سے اِعراض کرتے ہیں اور سازو موسیقی ، نغمہ وسرور او رگانے وغیرہ خوب شوق سے سنتے اور ان میں دلچسپی لیتے ہیں۔ خریدنے سے مراد بھی یہی ہے کہ آلات ِطرب وشوق سے اپنے گھروں میں لاتے ہیں اور پھر ان سے لطف اندوز ہوتے ہیں- لہو الحدیث میں بازاری کہانیاں ، افسانے ، ڈرامے، اورسنسنی خیز لٹریچر، رسالے اور بے حیائی کے پر چار کرنے والے اخبارات سب ہی آجاتے ہیں اور جدید ترین ایجادات، ریڈیو، ٹی وی،وی سی آر ،موبائل، ویڈیو فلمیں ،ڈش انٹینا وغیرہ بھی۔ لیکن عصر حاضرکے علمائے سوء، نہاد ملا اور صوفیاء حضرات قوالی اور سماع و وجد کے نام پر موسیقی کو رواج دینے پر تلے ہوئے ہیں اور خانہ ساز کےساتھ رقص وموسیقی کےجواز کے فتوے جاری فرمارہے ہیں۔اسے کی تسکین قرار دے رہے ہیں اور قوم کوبھی گمراہ کر رہےہیں۔ایسےحالات میں کی ذمہ داری ہے کہ رقص موسیقی کےحوالے سے شرعی پیش کریں تاکہ قوم کوجہنم میں گرنے سے بچایا جائے۔کفار ومشرکین اور ونصاریٰ کی طرف سےاس زبردست یلغار کا مقابلہ کیا جائے ۔اس سلسلے میں شیخ الاسلام امام ابن تیمیہ﷫ کے رسالے ’’السماع والرقص‘‘ کا گانا بجانا،سننا اور قوالی کی میں ۔ اور امام ابن قدامہ مقدسی﷫ کا قوالی ور گانا بجانا۔نیز مولانا ارشاد الحق اثری﷾کی دو کتابیں اور پر ’’اشراق‘‘ کےاعتراضات کاجائزہ ، اور موسیقی۔شبہات ومغالطات کا ازالہ اور مفتی مولانا محمد شفیع ﷫کی کتاب اور موسیقی کامطالعہ انتہائی مفید ہے ۔مذکورہ تمام کتب الحمد للہ کتاب وسنت ویب سائٹ پرموجود ہیں۔ زیر کتاب’’حرمت آواز وساز‘‘ مولانا محمد حسین کلیم ﷫ کی تصنیف ہےجوکہ اپنے موضوع پر بہترین کتاب ہے۔اپنی افادیت کے باعث یہ کتاب جماعۃ الدعوہ پاکستان کی کئی تربیتی درسگاہوں میں بطور نصاب شامل ہے اورکافی عرصہ سے ناپیدتھی۔جماعت الدعوہ کےمعروف اشاعتی ادارے دار الاندلس کےسکالرز نے اسے جدید قالب میں ڈھال کرتخریج وتحقیق کے ساتھ حسن طباعت سےآراستہ کیا ہے۔ تعالیٰ مصنف وناشرین کی اس کاوش کوقبول فرمائے اور اسے امت مسلمہ کے لیے نفع بخش بنائے ۔(آمین)

 

عناوین صفحہ نمبر
عرض ناشر 13
مدعائے نگارش 17
پہلا حصہ :
حرمت سماع
حرمت سماع 23
یاد رکھنا 24
غلط فہمی کاازالہ 26
راگ سخت حرام ہے 28
غرضیکہ 30
را؍گ باعث کیوں؟
پہلی وجہ 31
ایمان سے کو رامسلمان 32
ایمان کی شان 36
خلاصہ گفتگو 39
دوسری وجہ 40
خلاصہ 45
تیسری وجہ 46
وسنت سے اعراض کاانجام 48
عمل کاتقاضا 49
کے بعد پڑے گناہ 51
انسانی کی پہلی غلطی 52
پر ضروری 56
توضیح طلب دوسری بات 64
میں تضاد نہیں 67
اصل بات 67
قرآن  وحدیث میں ٹکراؤ نہیں 72
عقلی تقاضا 76
خلاصہ 76
دوسرا گناہ فحاشی 77
فحاشی پھیلانے کی شیطانی تدابیر 79
1۔بے حیائی کاسدباب 79
2۔انسداد بے پردگی 82
چہرے کاپر دہ 87
ابک اشکا ل کاازالہ 92
ایک اور اشکا ل اور اس کا ازالہ 93
کافر انہ ایک ڈھنگ 98
3۔مخلوط مجالس کاسبب 102
میں عورت کامقام 103
خلاصہ 104
مرد کی فطر ی کمزوریاں 104
ایک اورسوال 104
مرد عورت کافطر ی لگاؤ 110
شاپنگ کو جانا 114
خلاصہ 120
راگ کی روک تھام 121
پریس کرکردار 124
آرٹسٹ 125
گلوکاروں کے متعلق ارشادات نبوی
پہلی حدیث :مغییا ئیں موجب تباہی ہیں 126
دوسری 127
تیسری حدیث : گانا سننے کی سزا کے دن 129
چوتھی حدیث : گانا سننے والے کی جنازہ نہ پڑھو 130
پانچوایں حدیث :  راگ کی کما ئی حرام ہے 131
چھٹی حدیث : گلوکار شیطان کے زیر اثر ہوتاہے 132
ساتویں حدیث : اگر راگ کا رسیا جنت میں چلا بھی گیا تو 134
آٹھویں حدیث : گویو ں پر کی لعنت کی ہے 142
جس پر کی لعنت ہو 146
ملعون سے دوستی حرام ہے 148
ملعون سے نفرت نہ کرنے والابھی ملعون ہے 154
نفرت سے مراد برائی کے خلاف محاذ آرائی ہے 157
اے  واجب الاحتراک علمائے کرام 162
رقص وسر ودصحابہ ﷢ کی میں
رقص وسرود کرام ﷢ کی میں 165
رقص وسرود حضرت ابو بکر صدیق ﷜ کی میں 166
رقص وسرود حضرت عمر ﷜ کی نظرمیں 166
حضرت عثمان ﷜ کی میں 169
حضرت بن عمر ﷜ کی میں 170
پر بہتان 170
حضرت عمر بن عبد العزیز﷫ 172
اما م فضیل بن عیاض ﷫ کا قول 172
حضرت ضحاک بن مزاحم ﷫ کاقول 173
بن ولید﷫ کاقول 174
محمد بن منکدر ﷫ کاقول 174
امام مجاہد ﷫ کاقول 174
بصر ی ﷫ کاقول 174
امام قاسم بن محمد ﷫ کاقول 175
امام شعی ﷫ کاقول 176
اربعہ کے ارشادات
1۔امام مالک ﷫ کی نظرمیں 176
2۔امام ابوحنیفہ ﷫ کی رائے 179
3۔امام شافعی ﷫ کی نظرمیں 179
4۔امام احمدبن حنبل ﷫ کی نظرمیں 182
کامتفقہ فیصلہ 185
دوسرا حصہ:
حرمت ساز
حرمت ساز 189
باجے اتنے ہی برے ہیں جتنے کہ بت 189
ساز کافرانہ آرٹ ہے 191
ساز کی بابت پیمبر ﷺ 192
ایک اشکال کاجواب 193
چھٹی باجے شراب کی طرح حرام ہیں 194
آلات طرب کابیوپار 195
سازباجے توڑ دینے چائیں 196
ساتویں حدیث : ساز کے رسیاؤں کی انتباہ 198
آٹھویں حدیث : ہواکاعذاب 199
نویں حدیث: زمین میں دھنسادینا اور پتھروں کی بارش کا عذاب 200
دسویں حدیث : مندرجہ بالاحدیث کی تفصیل 201
گیارہویں حدیث : وصلاۃ بھی  اس عذاب کو نہ ٹالیں گے 202
بدعلماء 203
دلوں سے خوف جاتارہے گا 204
بارہویں حدیث : زلزلے آئیں گے 204
میوزک تان شیطانی اعلان ہے 205
تیرہویں حدیث : چوپایوں کے گلے کی گھنٹیاں بھی سازی ہے 206
چودہویں حدیث : جھانجن بھی ساز ہے 207
پندوہویں حدیث : جہاں ساز بجے وہاں شیطان ہوتاہے 208
سولہویں حدیث : جہاں سازبج رہا ہووہ لوگ اللہ  کی رحمت  سےمحروم ہ 208
سترہویں  حدیث : بدر میں نزول ملائکہ  میں حائل رکاوٹ کیسے دور ہوئی 209
مجوزین کی ایک بے وزن دلیل کا تجزیہ 210
مزامیر کی بابت اربعہ کافتوی
کافتوی 212
امام ابوحنیفہ ﷫ کا فتوی 213
شاہ ولی اللہ ﷫ کافتوی 218
مقتدائے فرقہ رضاخانیہ کا فتوی 218
نظام الدین اولیا ء کافتوی 219
امام شافعی ﷫ کافتوی 221
آواز وساز شیعہ کی میں 226
جملہ فقہا ئے امت کامتفقہ فتوی 231
جس تقریب میں گناہ ہورہے ہیں 233
حرف آخر 235

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
4.8 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...