حرمت سود۔ اشکالات کا علمی جائزہ

حرمت سود۔ اشکالات کا جائزہ

 

مصنف : گوہر رحمان

 

صفحات: 170

 

وفاقی شرعی عدالت کی جانب سے بیس سودی کا و کی روشنی میں جائزہ لینے کے سلسلے میں ایک سوالنامہ جاری کیا تھا۔ جس کے ذریعے ملک کے معروف و ماہرین اور ماہرین سے ربا (سود) کی تعریف، غیر سودی بینکاری کی عملی صورت، حکومت کی جانب سے جاری کردہ قرضوں پر کا مسئلہ، بینکوں سے غیر سودی قرضے حاصل کرنے کی متبادل تجاویز، نجی سرکاری بنکاری میں امتیاز کا مسئلہ، زر نقد کے استعمال پر معاوضہ لینے کےمسئلہ کی قیمت میں کمی کے اثرات، ملکی و غیر ملکی کو کامیابی سے چلانے کے سلسلے میں تجاویز، پراویڈنٹ فنڈ اور سیونگ اکاؤنٹ پر نفع، تجارتی و غیر تجارتی قرضے وغیرہ کے بارے میں ان کی ماہرانہ آراء اور متبادل تجاویز طلب کی تھیں۔ فاضل مصنف نے اس سوالنامے کا نہایت دقیع اور تحقیقی جواب دیا تھا جو کتابی صورت میں شائع کیا گیا۔ عوام الناس میں کو حلال قرار دینے کیلئے مختلف شبہات پھیلانے والوں کو بھرپور جوابات دینے کے ساتھ متبادل نقشہ بھی پیش کر دیا گیا ہے۔
 

عناوین صفحہ نمبر
ربا کی تعریف 11
ربا کے لفظی اور لغوی معنی 11
ربا کا شرعی مفہوم کی روشنی میں 12
ربا کا مفہوم اور آثار کی روشنی میں 13
ربا کی تعریف اجماع امت کی روشنی میں 17
ربا کی تعریف مفسرین اور فقہاء کی روشنی میں 17
ربا کی اس تعریف میں مرکب بھی شامل ہے 20
ربا حکمی یا رباخفی یا ربوالفضل 25
غیر سودی بینکاری کی عملی صورت 29
حکومت کی طرف سے جاری کردہ قرضوں پر کا 33
بینکوں سے غیر سودی قرضے حاصل کرنے کی متبادل تجاویز 35
نجی اورسرکاری بینکاری میں امتیاز کا 40
زرنقد کے استعمال پر معاوضہ لینا ربا ہے 40
اشیائے استعمال کے معاوضے اوراور نقدین کے استعمال کے  معاوضے کے درمیان وجہ امتیاز 45
کی قیمت میں کمی کااثرقرض کی اصل رقم پر نہیں پڑتا 48
سونے کی قیمتوں او راستعمال اشیاء کی قیمتوں میں اضافے کااثر 49
ملکی اور غیر ملکی کی کامیابی کی تجاویز 50
دومسلم ریاستوں یا مسلم اور غیر مسلم کے مابین سودی کاروبار 50
اور کافر کے درمیان دارلحرب میں سودی کاروبار کا 52
امام ابوحنیفہ اور اما م محمد رحمہم کے 53
کافتوی 62
آئمہ ثلاثہ اور امام ابویوسف رحمہم کے 64
بیمے کا کاروبار کے بغیر
بیمہ کمپنیوں کا مروجہ نظام اور قمار پر مشتمل ہے 67
بیمے کی جائز صورتیں 73
پراویڈنٹ  فنڈ او رسیونگ اکاؤنٹس 79
انعامی بانڈز 82
تجارتی قرضے اور غیر تجارتی قرضے 85
عام کی تعریف 86
بچت پر ابھارنے او رکفایت شعاری کی محرکات 91
ٹیکس لگانے کا 92
بین الاقوامی سودی معاہدے 93
بین الاقوامی ربا کے بارے میں تنقیح طلب امور 94
حرمت ربا کے بارے میں قرآنی عام ہیں 96
حرمت ربا کے بارے میں نبویہ ﷺ 97
وسنت کے عام حکم میں شرعی دلیل کے بغیر تخصیص جائز نہیں 108
عام کی فنی تعریف 109
حکومت قومی اور بین الاقوامی اداروں میں اسلامی کی نمائندگی کرے 113
غیر مسلموں کے ساتھ غیر شرعی کاروبار 114
اور حربی کافر کے درمیان دار الحرب میں سودی کاروبار کا 118
دارالحرب میں سودی کاروبار کے بارے میں فقہاء کی آراء 119
درالحرب میں جوازربا کے مبینہ 123
کافتوی 145
سودی معاہدوں کی شرعی حیثیت نہیں ہے 146
کیا بین الاقوامی سودی معاہدے نظریۂ ضرورت کے تحت جائز ہیں؟ 153
بین الاقوامی سودی قرضوں سے نجات حاصل کی جاسکتی ہے 160
مولانا مودودی ؒ کی رائے 161
سودی معاہدوں او رادائیگیوں  کو کے اطلاق سےمستثنی کرناقرآن وسنت کے خلاف ہے 165

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
3 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...