امام غزالی 

امام غزالی 

 

مصنف :

 

صفحات: 105

 

مالک ارض وسما نے جب کو منصب دے کر زمین پر اتارا تواسے رہنمائی کے لیے ایک مکمل ضابطۂ سے بھی نوازا۔ شروع سے لے کر آج تک یہ دین‘ ہی ہے۔ اس کی کو روئے زمین پر پھیلانے کے لیے تعالیٰ نے حضرت آدمؑ سے لے کر حضرت محمدﷺ تک کم وبیش ایک لاکھ چوبیس ہزار پیغمبروں کو مبعوث فرمایا اور اس سب کو یہی فریضہ سونپا کہ وہ خالق ومخلوق کے ما بین عبودیت کا حقیقی رشتہ استوار کریں۔ کے بعد چونکہ محمدی تک کے لیے تھی اس لیے نبیﷺ کے بعد امت محمدیہ کے نے اس فریضے کی ترویج کی۔ ان عظیم شخصیات میں سے ایک بھی ہیں۔ زیرِ کتاب  میں امام غزالی کے حالات زندگی‘ ان کی اور تصانیف کو تفصیل کے ساتھ بیان کیا گیا ہے۔ اور ان کی مشہور ابحاث کو بھی زیر بحث لایا گیا ہے۔اس میں حوالہ جات کا اہتمام بھی کیا گیا ہے اور اہم باتیں جو کہ رہ گئی ہوں انہیں فٹ

 

عناوین صفحہ نمبر
حرف اول 5
مقدمہ 10
امت اسلامیہ کا زمانہ سب سے زیادہ پراز تعمیر ہے 11
کے قلب و جگر پر حملے 12
دوسرے کی 13
کو زندہ اشخاص کی ضرورت 21
کے گم شدہ مآخذ 22
کی میراث 23
امام غزالی  26
اور عروج 27
خلوت سے جلوت کی طرف 34
پر عمل جراحی 39
باطنیت پر حملہ 43
زندگی اور معاشرے کا جائزہ 44
تنقید و احتساب 46
و اہل 47
حکام و سلاطین 56
مسلمانوں کے دوسرے طبقے 63
احیاء العلوم اور اخلاق 69
محاسبہ نفس 80
احیاء کے ناقد 87
امام غزالی  اور کلام 89
تدریس کے دوبارہ اصرار اور کی معذرت 92
بقیہ زندگی اور وفات 94
امام غزالی  کی دو ممتاز خصوصیتیں 95
امام غزالی کا پر اثر 99
داعی کی صلاحیتیں 101
بغداد کے دو داعی 102

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
2.3 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...