اقامۃ البرہان علٰی نور العرفان

اقامۃ البرہان علٰی نور العرفان

 

مصنف : غلام مصطفی ظہیر امن پوری

 

صفحات: 743

 

قرآن  کریم  ہی وہ واحد کتاب  ہے جو تاقیامت انسانیت کے لیے ذریعہ ہدایت ہے ۔ اسی  پر  عمل  پیرا  ہو کر  دنیا  میں سربلند ی  او ر میں نجات  کا  حصول ممکن ہے  لہذا ضروری  ہے  اس کے معانی ومفاہیم  کوسمجھا جائے ،اس  کی تفہیم  کے لیے  درس وتدریس  کا اہتمام کیا  جائے  او راس کی تعلیم  کے مراکز  قائم کئے جائیں۔ قرٖآن فہمی  کے لیے  اساس  کی حیثیت  رکھتا ہے ۔بہت سارے مکاتب  ہائے فکر نے قرآن  مجید کی تفاسیر وحواشی لکھے ہیں ۔اس حوالے سے ہرمکتب فکر کا ایک الگ مزاج ہے۔بعض لوگ باالرائے پر دھیان دیتے ہیں اور بعضوں نے مجید میں تحریف کا نیا باب کھولا ہے ۔ کجھ فلاسفہ کے طریق پر تفسیر کرتے ہیں ۔اہل کا مزاج سب سے ہٹ کر ہے ۔اہل سنت نے تفسیر کے لیے وحدیث اور فہم کو مقدم رکھا ہے ۔یہی طریقہ اسلم اور احکم ہے ۔جو بھی اس رستے سے ہٹ جاتا ہے گمراہی والحاد کا شکار ہوجاتا ہے۔ محترم جناب  غلام مصطفیٰ ظہیر امن پوری حفظہ نے  کتاب ہذا میں  مکتب فکرکےعالم مفتی احمد یارخان نعیمی کے ’’نور العرفان‘‘ کے نام سے کریم  پر لکھے گئے حاشیہ سے متعلق چند گزارشات پیش کی ہیں کہ آیا یہ مفتی احمد یار خان نعیمی کا تفسیری حاشیہ اہل کے مزاج کے مطابق ہے یا ہٹ کر ہے ۔ امن پوری صاحب نے  کتاب ہذا میں نور العرفان سے  کچھ عبارات  لے کر اس پر اپنا وتحقیقی پیش کیا ہے۔

 

عناوین صفحہ نمبر
ابتدائیہ 2
اسماء وصفات 3
صفت وجہ اور ید 3
صفت نور 8
کے نام بندوں کو دینا 9
کا آنا 11
استواء علی العرش 13
باطل لوازمات 26
باری تعالیٰ کے لیے جہت کا اثبات 27
عقیدہ اہل والجماعت 28
ایک واقعہ 40
ایمان میں کمی و زیادتی 42
کفر میں کمی زیادتی 43
ایمان میں دل کی تصدیق کافی ہے 44
اعمال ایمان پر مقدم 45
کے الفاظ و معانی 46
قریب ہے 47
صفت ساق 48
ایمان میں استثناء 50
غیب 53
کا غیب 61
علم 62
رسول صلی اللہ علیہ وسلم کا غیب کی اطلاع دینا 65

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
17.1 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...