اسلام کا قانون محاصل

کا محاصل

 

مصنف : ڈاکٹر نور محمد غفاری

 

صفحات: 175

 

نے ریاست کا جو تصور پیش کیا ہے وہ نہ تو آمرانہ ہے اور نہ ہی موجودہ زمانے کی مغربی جمہوریت کی مطابق جمہوری۔اسلام کے عطا کردہ تصور ریاست کے بارے میں زیادہ سے زیادہ اگر ہم کچھ کہہ سکتے ہیں تو وہ یہ کہ اسلام ایک فلاحی ، شورائی، اور عادلانہ نظام حکومت قائم کرنا چاہتا ہے۔اسلام کے نزدیک امام رعایا کی دنیوی اور مادی فلاح کا نگران اور اخلاقی و دینی اقدار کا محافظ ہوتا ہے اور وہ ہر وقت خلق کی بہبود کی فکر میں لگا رہتا ہے۔اس وقت دنیا میں دو معاشی نظام اپنی مصنوعی اور غیر فطری بیساکھیوں کے سہارے چل رہے ہیں۔ایک مغرب کا سرمایہ داری نظام ہے ،جس پر آج کل انحطاط واضطراب کا رعشہ طاری ہے۔دوسرا مشرق کا اشتراکی نظام ہے، جو تمام کی مشترکہ ملکیت کا علمبردار ہے۔ایک مادہ پرستی میں جنون کی حد تک تمام انسانی اور اخلاقی قدروں کو پھلانگ چکا ہے تو دوسرا پرستی اور اجتماعی ملکیت کا دلدادہ ہے۔لیکن رحم دلی، دوستی اور انسانی ہمدردی کی ان دونوں میں ہی مفقود ہے۔دونوں کا ہدف دنیوی مفاد اور مادی ترقی کے علاوہ کچھ نہیں ہے۔اس کے برعکس اسلام ایک متوسط اور منصفانہ معاشی نظریہ پیش کرتا ہے،وہ سب سے پہلے دلوں میں پرستی، دوستی اور رحم دلی کے جذبات پیدا کرتا ہے۔ زیر کتاب ” اسلام کا محاصل “محترم مولانا ڈاکٹر نور محمد غفاری صاحب کی تصنیف ہے،جس میں انہوں نے اسلام کے اسی عظیم الشان معاشی نظام کی خوبیوں کو بیان کیا ہے اور حکومت کے عادلانہ نظام مثلا زکوۃ، عشر، غنیمت اور مال فے جیسے محاصل پر روشنی ڈالی ہے۔یہ اپنے موضوع ایک انتہائی مفید اور شاندار کتاب ہے۔ تعالی سے ہے کہ وہ مولف کی اس کاوش کو قبول فرمائے ۔آمین

 

عناوین صفحہ نمبر
پیش لفظ 9
چند بنیادی اور وضاحتیں 12
کے نظام مالیات کے مقاصد 12
روحانی اور مادی ترقی کا یکساں حصول 14
دولت کی منصفانہ تقسیم 16
قیمتوں کی عادلانہ سطح برقرار رکھنا 16
تجارتی چکروں کا انسداد 18
کے مالیاتی نظام کے دو پہلو 19
مسلمانوں سے آمدنی 19
غیر مسلموں سے آمدنی 21
ریاست کا بجٹ 21
ریاست میں منصوبہ بندی 23
سرکاری خزانہ کا دائرہ کار اور ترجیحات 25

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
6.6 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...