اسلامی ریاست میں علاقائی حقوق کا تصور

ریاست میں علاقائی کا تصور

 

مصنف : پروفیسر عبد الخالق سہریانی بلوچ

 

صفحات: 128

 

نظام حکومت میں تمام امور وسنت کی ہدایات کی روشنی میں انجام دئیے جاتے ہیں اور پورے نظام کی اساس امر بالمعروف اور نہی عن المنکر پر استوار ہوتی ہے۔ نے ہمیں زندگی کے تمام شعبوں کے بارے میں راہنمائی فراہم کی ہے۔ عبادات ہوں یا معاملات، ہو یا سیاست، عدالت ہو یا قیادت، طب ہو یا انجینئرنگ، نے ان تمام امور کے بارے میں مکمل فراہم کی ہیں۔ کی یہی عالمگیریت اور روشن تعلیمات ہیں کہ جن کے سبب اسلام دنیا میں اس تیزی سے پھیلا کہ دنیا کی دوسرا کوئی بھی اس کا مقابلہ نہیں کر سکتا ہے۔اسلامی تعلیمات نہ صرف کی میں چین وسکون کی راہیں کھولتی ہیں، بلکہ اس دنیوی زندگی میں اطمینان، سکون اور ترقی کی ضامن ہیں۔ موجودہ دورمیں جبکہ کےخلاف بے شمار فتنے اسلام کے سیاسی، معاشی نظاموں پر اعتراضات اور شبہات کی صورت میں ظاہر ہورہے ہیں اور جدید یافتہ افرادجن کی اکثریت کےعلم سے واقفیت نہیں رکھتی ان اعتراضات کا شکار ہوتے آرہے ہیں۔ دور حاضر کا ایک بڑا فتنہ علاقائی معاشی کےعدم تعین کی وجہ سے پیداہوا ہے۔اس کو ایک ذریعہ بنا کر ملحدانہ، قوم پرستانہ کو ہوا دی جارہی ہے۔ تاکہ ملت اسلامیہ کا شیرازہ مکمل طور پرمنتشر ہو جائے۔اور ان فتنوں میں الجھ کر ایک دوسرے کے سے دست وگریبان ہوجائیں اور مسلم ملت کےاتحاد اور دنیا میں ریاست کا قیام نہ ہوسکے۔ زیر کتاب “اسلامی ریاست میں علاقائی حقوق کا تصور” پروفیسر عبدالخالق سہر یانی بلوچ کی ایک بے مثال تالیف ہے، جس میں موصوف نےایک نئے موضوع کو زیر بحث لایا ہے۔ ضروری مواد کی عمدہ ترتیب اور نہایت آسان فہم اسلوب کو اپنایا گیا ہے۔ تعالیٰ ہے وہ ان کی کاوش کو قبول فرمائے۔ آمین

 

عناوین صفحہ نمبر
الف تشکر و امتنان
اپنی بات پروفیسر اسد بھٹو
صدائے عہد
تقریظ مولانا محمد طاسین صاحب مد ظلہ
انتساب
مقدمہ مولف
کے اقسام
سیاسی و انتظامی
تقسیم اراضی میں
مالیات کی تقسیم میں
تقسیم آب میں
و تہذیب کے
حرف آخر
کرام کی آراء کا خلاصہ
استدراک (بسلسلہ مہاجرین و کوٹہ سسٹم)
فہرست مصادر و مراجع

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
2.9 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...