سالنامہ تاریخ اہل حدیث شمارہ نمبر 3

سالنامہ تاریخ شمارہ نمبر 3

 

مصنف : عبد الحکیم عبد المعبود المدنی

 

صفحات: 480

 

اہل  مروجہ مذہبوں کی طرح کوئی نہیں  ،نہ مختلف فرقوں کی طرح کوئی فرقہ ہے ،بلکہ اہل  ایک جماعت  او رایک تحریک  کا نام ہے  زندگی  کےہر شعبے  میں قرآن  وحدیث کے مطابق عمل  کرنا  او ردوسروں کو ان دونوں پر عمل کرنے  کی ترغیب دلانا  یا یو ں کہہ لیجیئے کہ کانصب العین کتاب وسنت کی  دعوت او ر اہل کا منشور وحدیث ہے۔ تمام اہل اس بات کو اچھی طرح سے جانتے ہیں کہ کا نصب العین کتاب و ہے اور جب سے کتاب و سنت موجود ہے تب سے یہ جماعت موجود ہے۔۔اسی لیے ان کا انتساب کتاب و سنت کی طرف ہے کسی امام یا فقیہ کی طرف نہیں اور نہ ہی کسی گاؤں اور شہر کی طرف ہے۔ کی حقیقی ترجمان اور ایک ایسی فکر ہے جو دنیا کے کونے کونے میں پھیل رہی ہے۔فکر اہل حدیث ، اہل حدیث، تعارف اہل حدیث ،مسلک اہل حدیث  کے عنوان سے متعدد کتب موجود ہیں زیر کتاب  بھی اسی سلسلہ کی  کڑی ہے ۔ زیر کتاب ’’سالنامہ تاریخ 2018-1  ،جلد سوم ‘‘  جناب عبد الحکیم  عبد المعبود  المدنی حفظہ کی کاوش ہےموصوف  جماعت اہل حدیث ، ہند کے غیور اور ممتاز عالمِ ہیں ، انہوں نے ’’ مرکز اہل حدیث ،انڈیا‘‘ کے نام سے ایک مستقل ادارہ قائم کیا ہوا  ہے  جس کے تحت  وہ  تاریخ ہند کو بڑی تیزی اور قوت سے جمع کیا جارہا ہے ۔کتاب ہذادر اصل مجوزہ اہل حدیث  ،ہند  کا تیسرا حصہ ہے  ۔مرتب  نےاس میں مختلف جرائد ومجلات، اور کتابوں سے استفادہ کرتے ہوئے نیزذاتی کی بنیاد پر ہند کے علمائے اہل کی مساعی جمیلہ کو مختلف جہتوں سے واضح کرنے کی بھرپور کوشش کی ہے۔ سالنامہ اہل حدیث جلد سوم سات ابواب پر مشتمل ہے۔ باب اول میں   کرام وفضلاء عظام کے تاثرات وانطباعات ہیں ،باب دوم میں اہل حدیث  کےمتعلق17؍بحوث ومقالات ہیں ۔ باب سوم  میں 21 مرحومین کرام  کاتذکرہ  بڑے شرح  وبسط کےساتھ پیش کیاگیا ہے ۔ باب چہارم  عالم ِ کے 2؍عظیم سلفی اساطین علم  کے متعلق ہے۔ باب پنجم میں2018-19ء کے41؍مرحومین علما کرام کی سوانح اور ا ن کی مساعی رقم ہیں ۔باب ششم میں 16؍علماء   کا  تذکرہ خیر ہے ۔باب ہفتم مناظرات ومتفرقات پر مشتمل ہےیہ کتاب تاریخ کی حقانیت اورعلمائے اہل کی گرانقدر پر مشتمل ایک اہم وتاریخی دستاویز  ہے ۔ مرتب وناشرین کی اس  عظیم الشان مساہی کو شرفِ قبولیت سے نوازے  اورانہیں ا س کام کو جاری رکھنی کی توفیق دے ۔ (آمین)

 

عناوین صفحہ نمبر
فہرست 4
کلمات تشکر 10
انتساب 11
رشحات قلم 12
اداریہ 13
افتتاحیہ 14
باب اول تاثرات و انطباعات 23
پیغام آفریں 23
تہنیتی پیغام 24
کلمات تبریک 27
وتجزیہ 27
وتجزیہ 30
باب دوم بحوث و تاریخ 35
مسلک عمل بالحدیث 35
تحریک اور اس کے فوائد 45
سلفی دعوت کے پانچ اہم 51
فتنہ انکار کی سرکوبی میں علمائے کی مساعی جمیلہ 59
برصغیر میں کی عظیم کارکردگی 70
مجاہدین 74
تاریخ بہار 85
صادق پور سورماؤں کا وطن سرفروشوں کی زمین 102
جمعیت علمائےہند کی تاسیس میں علمائے کا بنیادی کردار 106
کے تین بڑے 111
مئوناتھ بھنجن 127
مئو کے ہم عصر اور ہم نام 133
ابنائے جامعہ عربیہ مئو کی حدیثی 135
فیضی علمائے مئو کی 150
جامعہ اسلامیہ اکبر پور جمنی 166
جامعہ اسلامیہ اکبر پور جمنی کی مختصر 168
جامع مسجد مئومن پورہ ممبئی 170
تعارف جمیعت بھیونڈی مہاراشٹر 176
باب سوم یاد رفتگاں 180
مولانا ولایت علی صادقپوری 180
جماعت کا ایک گمنام قائد 185
مولانا عرف جھاؤ میاں الہ آبادی 188
مولانا  عبد العزیز رحیم آبادی 190
مولانا عبد العزیز رحیم آبادی  و 199
مولانا عبد الرحمن لکھنوی ثم دلالپوری اور جھارکھنڈ 202
مولانا عبد السلام مبارکپوری 205
مولانا عبد الصمد مبارکپوری 208
مولاناعلامہ نذیر احمد رحمانی چند یادیں 216
مولانا نذیر احمد دہلوی ایک تعارف 222
ماہر میراث مولانا عبد الرحمن بجوادی 230
شیخ الحدیث مولانا عبد السلام بستوی 238
آہ شیخ الحدیث مولانا عبد السلام بستوی 244
مولانا عبد الاحد پورینوی 247
مولانا محمد یحییٰ بنارسی 251
مولانا عزیز احمد بن ندوی 254
مولانا ذکر خاں ذاکر ندوی 257
بزم سے رخصت ہے ذاکر مرحبا کہتا ہوا 259
مولانا عبد العزیز جامی عمری ادھونی 263
شیخ الحدیث مولانا سلفی 269
مولانا فیضی مدنی بہار 288
مولانا قرۃ العین فائق املوی 292
باب چہارم عالم کے سلفی اساطین 308
شیخ عبد القدیر شبیہ الحمد 308
جزیرے یادوں کے شیخ عبد القادر شبیہ الحمد کی وفات پر 310
باب پنجم مرحومین علمائے واعیان جماعت 2018 ۔ 2019ء 320
باب ششم موجودین علمائے کرام 2018۔2019ء 406
باب ہفتم مناظرات و متفرقات 471

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2

You might also like
Comments
Loading...