شیخ محمد بن عبد الوہاب اور انکی دعوت

شیخ محمد بن عبد الوہاب اور انکی دعوت

 

مصنف : عبد العزیز بن عبد بن باز

 

صفحات: 42

 

شیخ الاسلام ،مجدد العصر محمد بن عبد الوہاب ﷫( 1703 – 1792 م) کی شخصیت کسی تعارف کی محتاج نہیں ہے۔آپ ایک متبحر عالم ، وحدیث اور متعدد علوم وفنون میں یگانہ روز گار تھے۔آپ نے اپنی وفطانت اور پر استدراک کے باعث اپنے زمانے کے بڑے بڑے دین کو متاثر کیا اور انہیں اپنا ہم خیال بنایا۔آپ نے قرآن وسنت کی توضیحات کے ساتھ ساتھ وبدعات کے خلاف وعملی دونوں میدانوں میں زبر دست کیا۔آپ متعدد کتب کے مصنف ہیں۔جن میں سے ایک کتاب (کتاب التوحید) ہے۔مسائل پر یہ آپ کی بہترین کتابوں میں سے ایک ہے،اور سند وقبولیت کے اعتبار سے اس کا درجہ بہت بلند ہے۔ شیخ موصوف کی دعوتی تحریک کی ان تحریکوں میں سے ہے جن کو بہت زیادہ مقبولیت وشہرت حاصل ہوئی ۔اور یہی وجہ ہےکہ دنیائے اسلام کےہرخطہ میں میں ان کے معاندین ومؤیدین بہت کافی تعداد میں موجود ہیں ۔ زیر رسالہ’’ شیخ محمد بن عبدالوہاب﷫ اوران کی دعوت‘‘ شیخ عبد العزیز بن بن باز﷫ کی الجامعۃالاسلامیۃ میں ایک تقریر کا ہے جو انہو ں نےیونیورسٹی کےہال میں وطلبہ کےایک مجمع میں کی تھی اور بعد میں ٹیپ ریکارڈر سے تحریر میں لایاگیا ۔شیخ ابن باز ﷫ نے اپنی اس تقریر میں شیخ الاسلام کی سوانح اور انکی دعوت کو جامع الفاظ میں پیش کیا ہے۔اس پر مدینہ یونیورسٹی کے استاد عطیہ محمد سالم نے جامع تقدیم وتعلیق فرمائی اور اس میں شیخ ابن باز ﷫ کا بھی مختصر تذکرہ وتعارف پیش کیا ہے۔اس اہم رسالہ کاترجمہ مولانا عبد العلیم بستوی نے کیا۔ محدث روپڑی﷫ کےتلمیذ رشید جناب ابو السلام محمد صدیق آف سرگودھا کےقائم کردہ ’’ادارہ احیاء السنۃ ‘‘ نے 1973ء میں اسے شائع کیا۔

 

عناوین صفحہ نمبر
عرض مترجم 3
پیش لفظ 4
شیخ ابن باز 7
پیدائش 8
9
شیخ محمد بن عبد الوہاب 13
شیخ کے نگار 13
پیدائش اور 15
ابتداء دعوت اور سازش قتل 17
دعوت سے قبل اہل نجد کی حالت 18
اظہار 19
جذبہ ایمان 21
درعیہ کی بیعت 22
مخالفین کی تین قسمیں 27
وفات اور اس کے بعد 29
دعوت بسوئے حجاز 32
اور مصری فوجوں کی یلغار 33
حقیقت دعوت 35
حجاز میں دوبارہ داخلہ 36

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
2.1 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Leave A Reply