حضرت سلمان فارسی ؓکا ہدایت کی جانب سفر

حضرت سلمان فارسی ؓکا ہدایت کی جانب

 

مصنف : میاں انوار

 

صفحات: 180

 

حضرت سلمان فارسی  رسول ﷺکے مشہور اصحاب میں سے تھے۔ ابتدائی طور پر ان کا تعلق زرتشتی مذ ہب سے تھا مگر کی تلاش ان کو کے دامن تک لے آئی۔ آپ کئی زبانیں جانتے تھے اور مختلف کا رکھتے تھے۔ نبی ﷺکے بارے میں مختلف کی پیشینگوئیوں کی وجہ سے وہ اس انتظار میں تھے کہ حضرت محمد ﷺ کا ظہور ہو اور وہ کو اختیار کر سکیں۔ سلمان فارسی   ایران کے شہر اصفہان کے ایک گاؤں روزبہ میں پیدا ہوئے۔ آپ کے والد کا تعلق زرتشتی مذ ہب سے تھا۔ مگر حضرت سلمان فارسی   کا دل سچ کی تلاش میں تھا۔ پہلے آپ نے اختیار کی اور کی تلاش جاری رکھی۔ ایک راہب نے انہیں بتایا کہ ایک سچے نبی کی آمد قریب ہے جس کا تذکرہ  پرانی مذہبی کتابوں میں موجود ہے۔ اس راہب نے اس نبی کا حلیہ اور ان کے ظہور کی ممکنہ جگہ یعنی مدینہ کے بارے میں بھی بتایا جو اس وقت یثرب کہلاتا تھا ۔ یہ جاننے کے بعد حضرت سلمان نے مدینہ جانے کی کوشش شروع کر دی۔ مدینہ کے راستے میں ان کو ایک بدوی گروہ نے دھوکے سے ایک یہودی کے ہاتھ غلام کے طور پر بیچ دیا۔ یہ یہودی مدینہ میں رہتا تھا چنانچہ حضرت سلمان فارسی  مدینہ پہنچ گئے اور اس یہودی کے باغ میں سخت محنت پر مجبور ہو گئے۔ کچھ عرصے کے بعد آ پ  ﷺمکہ شہر سے ہجرت کر کے مدینہ آئے ہیں۔ تو سلمان نے ان کی خصوصیات سے فوراً پہچان لیاکہ یہی کے سچے نبی ہیں۔ انہوں نے مہر نبوت بھی ملاحظہ کی۔ اسی وقت انہوں نے قبول کر لیا۔اس وقت  حضرت سلمان  ایک یہودی کے غلام تھے ۔ آپ ﷺنے خود اپنے مبارک ہاتھوں سے تقریبا 300 یہودی کے باغ میں لگاکرحضرت سلمان  کو آزاد کرایا۔ا ن کے بارے میں ارشاد نبوی  ہے کہ: اگر ایمان ثریا کے پاس بھی ہوگا تو اس کی قوم کے لوگ اس کو ضرور تلاش کر لیں گے۔ غزوہ خندق کے موقع پر خندق کی کھدائی کے موقع پر حضرت سلمان سب سے زیادہ سرگرم تھے ۔ اس پر مہاجرین نے کہا کہ’’ سلمان ہمارا ہے‘‘انصار نے یہ سنا تو کہا ’’سلمان ہمارا ہے‘‘۔ نبی ﷺ  تک یہ بات پہنچی تو آپ ﷺنے فرمایا ’’ سلمان ہمارے اہل بیت میں سے ہے ‘‘ اس لیے  حضرت سلمان کو مہاجرین یا انصار کے بجائے اہل بیت میں شمار کیا گيا۔غزوہ خندق کے دوران جب شدید خطرے میں تھے، حضرت سلمان فارسی  نے مشورہ دیا کہ مدینہ کے ارد گرد خندق کھودی جائے چنانچہ خندق کھودی گئی جس نے مشرکین کو حیران کر دیا کیونکہ یہ طریقہ اس سے پہلے میں استعمال نہیں ہوا تھا۔ زیر کتاب ’’ حضرت سلمان  فارسی  کا ہدایت کی جانب سفر‘‘ محترم جناب  میاں انوار اللہ  صاحب کی تصنیف ہے جس میں انہوں   نے  کی خاطر حضرت سلمان فارسی     کے ایمان افروز تفصیلی حالات وواقعات، ان  کے  ومناقب او ران سے مروی کو   جمع کردیا ہے ۔

 

عناوین صفحہ نمبر
کی تیاری 15
تپش شوق کانظارہ 16
آگ سے بیزاری 19
شام کا 20
موصل میں آمد 22
نبی اسماعیل ’’ کی پسندیدہ اور محبوب قوم ہے ‘‘ 22
کی 23
میں اسےبڑی قوم بناؤں گا 24
حضرت موسیٰ﷤ کی پر کی مہر 25
کاتعصب 26
موصل کے بشپ کی وفات 29
مابہ کا نصیبین میں قیام 29
بشارت نمبر1، 2، 3،4 29
اسقف کی 31
عموریہ 31
تورات اور کی بعثت محمدریﷺپر شہادتیں 33
حضرت ابراہیم ﷤ کی 38
تورات و کی شہادتوں پر کی مہر 40
امام الانبیاء﷩ کی بعثت کے وقت کی دینی حالت 42
ایک شبے کا ازالہ 45
مابہ کی کو روانگی 47
صراط مستقیم کی خاطر کی 47
مابہ دیار حبیب ﷺ میں 48
اب مگ گئی ہے غموں والی شام 48
دربار رسالت (ﷺ) میں پہلی حاضری 49
دربار رسالت (ﷺ) میں دوسری حاضری 51
مابہ اب سلمان بن گئے 53
قدسیوں کی عظمت 53
غزوات بدر و احد میں عدم شرکت 54
یہودی سے گلو خلاصی 56
صفہ میں قیام 57
سلیمان اور ابو الدرداء ؓ بھائی بھائی 59
صفہ یونیورسٹی کی اہمیت و فضیلت 60
طالب کے لیے آپﷺ کی 61
کی فضیلت پر کی مہر 62
63
سلمان بطور جنگ پلانر 64
مشاورت کاحکم 65
خندق کی کھدائی 66
کےایمان کی تعریف 68
نمازیں فوت ہونے پر بد 69
اہل بیت کےاعزازی رکن بن گئے 70
سلیمان کاایک اور اعزاز 71
زندگی کا مشاہدہ 72
انسانی جبلت 73
بزدلی پرقہر الہٰی 75
76
دنیاوی فوائد کے لیےحق کو چھپانا 78
کرام کاقتل 79
توریت کا انکار 79
ہجرت نبویﷺسےپہلے حجاز میں کی پوزیشن 80
میثاق مدینہ اور کی خلاف ورزیاں 81
کی عہد شکنی 82
کاحسد و بغض 83
ابو رافع واصل جہنم 84
نبی اکرمﷺ کےقتل کا منصوبہ 85
غزوہ خندق میں بنو قریظہ کی بدعہدی 85
نعیم بن مسعود﷜ کا رول 86
راشدہ میں خیبر سےیہودیوں کااخراج 88
رسول ﷺ کے قتل کی سازش 88
بن سباء کا فتنہ 90
بن سبا کے غیر عقائد جو اس کی تنظیم نے میں داخل کیے 91
ابن سباء کی شام میں کرام سے ملاقاتیں 93
ابن سباء کی ریشہ دوانیاں 93
ایک شبہ اور اس کا ازالہ 94
مناقب صحابہ﷢ 96
یہودی ریاست کا قیام اور 97
یہودیوں کی طوطا چشمی 99
یہودیوں کی منصوبہ بندی 100
خلیفۃ المسلمین کی معزولی اورمسلمانوں کی بےحسی 101
اعلان بالفور 101
لارڈ بالفور کےبےشرمی کےالفاظ اورلیگ آف نیشنز کا کردا ر 102
برطانیہ کا سیاہ کارنامہ 103
کی بندر بانٹ 104

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
5.3 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...