علم تفسیر و حدیث کا ارتقاء گزشتہ چودہ صدیوں میں

علم و کا ارتقاء گزشتہ چودہ صدیوں میں

 

مصنف : ڈاکٹر محمد آفتاب خان

 

صفحات: 274

 

پچھلی صدی میں جدید یافتہ طبقے میں سے بعض افراد کو یہ غلط فہمی لاحق ہو گئی کہ رسول صلی اللہ علیہ واٰلہ وسلم کی ہم تک قابل اعتماد ذرائع سے نہیں پہنچی ہیں۔ اس غلط فہمی کے پھیلنے کی وجہ یہ تھی کہ اس کو پھیلانے والے حضرات اعلی یافتہ اور دور جدید کے اسلوب بیان سے اچھی طرح واقف تھے۔ اہل نے اس نظریے کی تردید میں بہت سی کتابیں لکھی ہیں جو اپنی جگہ انتہائی اہمیت کی حامل ہیں۔ اور کریم کی آخری کتاب ہے،جسے اس نے دنیا کے لیےراہنما بنا کر بھیجا ہے۔اس کے کچھ الفاظ مجمل اور کچھ مطلق ہیں ،جن کی تشریح وتوضیح کے لیے نبی کریمﷺ کو منتخب فرمایا-قرآن کریم کی وضاحت وہی بیان کر سکتا ہے جس پر یہ نازل ہوا۔اس لیے کرام کبھی بھی اپنی طرف سے کی تشریح نہ کرتے تھے،اور اگر کسی چیز کی سمجھ نہ آتی تو خاموشی اختیار کر لیتےتھے۔ کے نبیﷺ نے جس طریقے اور صحابہ نے آپ کے طریقے کو اختیار کرتے ہوئے جس طریقے سے قرآن کی تشریح کی ہے اس کو علما نے بالماثور ، اور جن لوگوں نے اپنی مرضی سے تفسیر کی اس کو تفسیر بالرائے کا نام دیا ہے۔ زیرِ کتاب ’’ تفسیر و کا ارتقاء گزشتہ چودہ صدیوں میں‘‘ ڈاکٹر محمد آفتاب خان ، ڈاکٹر مولانا عبد الحکیم اکبری کی ہے۔جس میں علم کا ارتقاء چودہ صدیوں کا اجمالی جائزہ پیش کیا ہے۔مزید برصغیر پاک و ہند میں تفسیر کے ارتقاء کو اجاگر کرتے ہوئے حدیث، تدوین حدیث اور حدیث کا تاریخی پس منظربیان کیا ہےجس میں کے طرف سے اٹھائے جانے والے اعتراضات کو عیاں کرتے ہوئے ان کی تردید کی بھی کی ہے۔۔ چنانچہ راہ دعوت میں کام کرنے والے اس کتاب کو ملحوظ رکھیں تو امید ہے کہ ان کی گفتگو مؤثر اور نتیجہ خیز ہو گی۔ تعالیٰ سے ہے کہ اس کا فائدہ عام کرے اور اس کے اجر سے نوازے۔ آمین۔

 

عناوین صفحہ نمبر
آغازسخن 9
باب اول) تفسیرکاارتقاء۔چودہ صدیوں کااجمالی جائزہ 17
کریم کااجمالی تعارف 19
تفسیرقرآن کےمعنی ومفہوم 26
تدوین حفاظت مجیدایک نظرمیں 29
حفاظت اورعربی 35
باب دوم:تفسیرقرآن کاارتقاء 37
تفسیرقرآنی کےارتقائی مراحل 37
کبارصحابہ ﷢میں مشہورترین مفسرین 43
مفسرتابعین 45
تبع تابعین میں مفسرین 45
محمدرسول اللہﷺ کی حیات (نزول سے 11ھ تک)میں تفسیری ارتقاءکاجائزہ 46
اصحاب رسول ﷺ کےدورمیں 47
تابعین کےدورمیں تفسیرقرآن 48
عہدتابعین کےعلمی کام پرمختصرتبصرہ 56
علوم کی مختلف کتب 58
تبع تابعین کےدورمیں تفسیرقرآن کاارتقاء 63
باب سوم:تیسری صدی ہجری سےزمانہ حال تک تفسیری ارتقاءکاجائزہ 67
تیسری صدی ہجری کےمفسرین 67
چوتھی صدی ہجری کےمفسرین 68
پانچویں صدی ہجری کےمفسرین 70
چھٹی صدی ہجری کےمفسرین 71
ساتویں صدی ہجری کےمفسرین 73
آٹھویں صدی ہجری کےمفسرین 74
نویں صدی ہجری کےمفسرین 76
دسویں صدی ہجری کےمفسرین 77
1091ہجری سے1354ہجری تک کےمفسرین 78
1358ہجری سے1420ہجری تک کےمفسرین 80
باب چہارم:برصغیرہندوپاکستان میں تفسیرکاارتقاء 93
تیسری صدی ہجری سےدسویں صدی ہجری تک کےاہم مفسرین 83
1000صدی ہجری سے1130ہجری تک کی تفاسیرکےمفسرین 85
1140ہجری سے1356ہجری میں تفاسیرکےمفسرین 86
برصغیرہندوپاکستان میں اردوتفاسیر 87
بارہویں اورتیرہویں صدی ہجری کےاہم مفسرین اوران کی تفاسیر 87
چودھویں صدی ہجری کےنصف دواول میں ارودتفاسیراوان کےمفسرین 89
چودہویں صدی ہجری کےنصف آخرمیں اردوتفاسیراورن کےمفسرین 90
پندرہویں صد ی ہجری میں اردوتفاسیراوران کےمفسرین 92
چنداہم ترین تفاسیر 93
فقہی مکاتب فکرکاظہور 95
مختلف علاقائی زبانوں نیزاوردومیں کےتراجم وتفاسیر 101
دنیاکی دیگرزبانوں میں کریم کےتراجم 102
اسرائیلی روایات کاجائزہ 104
باب پنجم)گزشتہ چودہ صدیوں میں تفسیرقرآنی کےارتقاءکاایک اجمالی جائزہ 111
باب ششم:،تدوین حدیث اورعلم حدیث کاتاریخی پس منظر 127
تعارف 127
اوراحادیث 133
اورمحدثین 138
کےاعتراضات کاجائزہ 138
ہندوپاکستان میں انکارحدیث کاتاریخی پس منظر 146
برصغیرمیں علم 146
باب ہفتم :علم کاارتقاء 165
علم کامختصر تعارف 165
دوراول 166
ایک غلط فہمی کاازالہ 169
دوسرادور 173
تیسرادور 175
کےچندنئےعلوم 176
تدوین کاچوتھامرحلہ 180
باب ہشتم :محدثین اورفقہاءکاجمالی تعارف 185
اما م ابوحنیفہ امام مالک،،امام احمدبن حنبل،،امام مسلم،امام نسائی،امام ابی داود،امام ابن ماجہ 185
1400سال کےمحدثین کےعلمی کارناموں کاجائیزہ 196
برصغیرہندوپاکستان میں محدثین کرام کی کاجائیزہ 210
محمدرسول اللہﷺ کی میں تدوین کااجمالی جائزہ 217
باب نہم:غلطی ہائے مضامین ( پرشکوک وشبہات کاجائزہ) 219
کی کثرت تعداد 219
حضرت ابوہریرہ ﷜پراعتراض 225
تدوین حدیث200سال بعد 226
محدثین کی بےمثال یادواشت 230
ترایج واشاعت اورغلام 232
باب دہم
علم کےبارمیں چندعممی امور 243
امت مسلمہ کےمختلف فرقوں کےمختصر احوال 254
حوالہ جات 267

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
4 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...