علم اصول فقہ ایک تعارف جلد سوم

اصول ایک تعارف جلد سوم

 

مصنف : ڈاکٹر عرفان خالد ڈھلوں

 

صفحات: 523

 

وہ جس  میں کے مصادر ،ان کے کے ، استدلال  کے  مراتب اور استدلال کی شرائط سےبحث کی جائے اوراستنباط کے طریقوں کووضع کر کے  معین قواعد کا استخراج کیا جائے  کہ جن قواعد کی پابندی کرتے ہوئے  مجتہد  تفصیلی  دلائل سے احکام  معلوم کرے ، اس کا  نام اصول ہے ۔ فقہ ، الٰہی  اور عقل انسانی دونوں کے تقاضوں سے ہم آہنگ ہے۔ جس طرح کسی بھی کو جاننے کےلیے  اس زبان کے قواعد واصول  کو سمجھنا ضروری ہے  اسی طر ح فقہ میں مہارت حاصل  کرنےکے لیے  اصول  فقہ  میں دسترس  اور اس پر عبور حاصل کرناضروری ہے  اس علم کی اہمیت  کے  پیش نظر  فقہاء و محدثین نے  اس موضوع پر  کئی کتب تصنیف کی ہیں۔ زیر کتاب’’علم فقہ ایک تعارف‘‘ڈاکٹر عرفان خالد ڈھلوں(چئیرمین شعبہ علوم اسلامیہ یو ای ٹی ،لاہور ) کی تین جلدوں پر مشتمل  تصنیف  ہے ۔فاضل مصنف نے یہ کتاب میں دلچسپی رکھنے والے اصحاب کے لیے مرتب کی ہے ۔اس  کتاب میں  فقہ کی ،مصادر فقہ، قواعدکلیہ، اور فقہ اسلامی کے اصولِ تعبیر وتشریح جیسے موضوعات کا تفصیلی تعارف پیش کیا گیا ہے۔نیز اس کتاب میں  اصولِ فقہ اسلامی کا  ایک بھر پور اورجامع تعارف پیش کیا گیا ہے۔(آمین)

 

عناوین صفحہ نمبر
باب ہفتم: میں 1
فصل اول: کانظریہ 3
اجتہادکی لغوی تعریف 3
اصطلاحی تعریف 3
اجتہادکی اہمیت وضرورت 6
اجتہادکی ضرورت کی صورتیں 8
حکم شرعی کی دریافت 8
حکم کےموقع ومحل کاتعین 9
دشواری اورمشقت دورکرنا 11
اجتہادکی مشروعیت 12
مجید 12
14
تعامل رضی عنہم 20
اجماع امت 21
کاحکم 22
شرائط 22
کیایہ شرائط اجتہادکی راہ میں رکاوٹ ہیں؟ 31
کیاکوئی زمانہ مجتہد مطلق سےخالی ہوسکتاہے؟ 36
اجتہادکادائرہ کار 37
اجتہادکےمآخذ وذرائع 39
اجتہادکی اقسام 42
توضیحی 42
استنباطی 46
استصلاحی 47
مزید اقسام 50
جہدوکوشش صرف کرنےکےاعتبارسے 50
مجتہدکےاعتبارسے 50
موقع ومحل کےاعتبارسے 50
حکم تکلیفی کےاعتبارسے 50
مجتہدین کی اقسام 51
مجتہدفی الشرع 52
مجتہدفی المذہب 52
مجتہد فی المسائل 53
مجتہدمقیّد 53
اصحاب ترجیح 53
اصحاب تمیز 53
مقلدین محض 54
کیاہرمجتہدمصیب ہے؟ 55
اجتہادمیں غلطی 57
فصل دوم:مناہج واسالیب 63
تمہید 63
اجتہادکامفہوم 65
تصوراجتہادکاآغاز 67
اجتہادکاثبوت 67
قیاس:اجتہادکاایک اہم منہج 73
قیاس اورشرح صدر 76
رضی عنہم اورقیاس کےنظائر 81
استحسان 88
استحسان کامفہوم 89
مصالح  مرسلہ یااستصلاح 94
میں مصالح کااعتبار 94
مقاصد 96
ضروریات،حاجیات،تحسینیات 96۔97
استدلال 98
طرق استدلال 98
وہ حکموں کےمابین تلازم 98
استقراء 99
ذرائع 100
اعلی مقاصد کےحصول کےلیے فتح الذرائع 100
سدالذرائع کی مثالیں 102
اعتبارعرف ورواج 103
اعتبارعرف کی شرائط 104
اجماع 114
اجماع اوراجتہاد 114
اجماع کی سند کریم سے 115
دورجدید میں اسالیب اجتہادکی افادیت 118
فصل سوم:تقنین( کی ضابطہ بندی) 123
تقنین کامفہوم 123
تفنین 127
رضی عنہم وتابعین کےعہد میں تقنین 127
عہد تبع تابعین میں تقنین 128
خلیفہ ہارون رحمہ کاالموطا کےنفاذ کاارادہ 131
رحمہ کاجواب 131
رحمہ اورفتاوی عالمگیری 142
دنیائے سے مغربی روابط اورتقنین 145
انشورنس اورسوکرہ کی تقنین 146
سلطنت عثمانیہ میں تقنین :مجلۃ الاحکام العدلیۃ 146
مجلہ تنسیخ 150
اردن میں تقنین:القانون المدنی 151
سعودی سےپیداہونےوالے خدشات 152
سعودی میں ’’نظام‘‘کاتجربہ 156
دیگراسلامی ممالک میں تقنین کاتجربہ 158
دستوری کی تقنین 161
دستورسازی میں برصغیر کاکردار 162
میں علماءکےبائیس نکات:مثالی دستاویز 163
اسلامک کونسل آف کامسودۂ دستور 163
دستوری کی تقنین میں ایک بڑی رکاوٹ 163
شخصی ،فوجداری اوردیوانی کی تدوین 164
میں کی تقنین 165
نفاذِ ایکٹ1949ء 167
مسلم فیملی لازآرڈی ننس 1961ء 167
مسلم ممالک میں فوجداری کی تدوین اورپاکستان کاتجربہ 168
تقنین میں اختصار کےمسائل 169
حدودقوانین کی تقنین میں دونقطہ ہائےنظر 171
حدودوقوانین میں اختصارکی وجہ 172
ہمہ گیرقانونی اورتعلیم کی ضرورت 173
تقنین کےلیے درمیانی راستہ 176
رحمہ کی خواہش 177
ایک آفاقی :مستقبل کاتقاضا 178
فصل چہارم: میں کواسلامیانےکاعمل 187
اسلامی کانفاذ:ضرورت واہمیت 187
اسلامی کانفاذکیسےہو؟ 189
میں اسلامی کانفاذ 194
قراردادمقاصد 195
بورڈآف اسلامیہ 197
علماءکرام کابائیس نکاتی فارمولا 198
مسلم عائلی 207
بدکاری کاانسداد 210
1973ءکادستوراوراسلامی نظریاتی کونسل 211
غیرمسلم اقلیت 212
1977ءکامارشل لاء 212
سےمتعارض کی منسوخی کااعلی عدلیہ کواختیار 213
بنچوں کاقیام 213
عدلیہ کےاختیارسےمستثنی امور 214
حدودآرڈیننس کانفاذ 215
وفاقی شرعی عدالت کاقیام 220
تعمیر مکان کےلیےقرضوں پرسودکاخاتمہ 220
رائے عامہ کی تیاری 224
انصاری کمیشن 226
پرائیویٹ بل اورنواں ترمیمی بل 227
قصاص ودیت کاقانون 230
قومی کوسودسےپاک کرنےکی کوششیں 231
اسلامیانےکےعمل میں رکاوٹیں 236
ملک کےبااثرطبقات 238
غیرملکی دباؤ 239
باب ہشتم: اوراس کےاصول 243
فصل اول:فقہِ حنفی اوراس کےاصول 245
حنفی کےبانی 245
ابوحنیفہ رحمہ کنیت رکھنےکی وجہ 246
فصل دوم:فقہِ مالکی اوراس کےاصول 269
مالکی کےبانی 269
حلیہ اورلباس 270
حب رسول صلی اللہ علیہ وسلم 271
رحمہ کےاصول 280
کےبارے میں رحمہ کانقطہ 283
اہل مدینہ کےبارے میں رحمہ کاموقف 286
اجماع کےبارے میں رحمہ کاموقف 287
قیاس کےبارے میں رحمہ کاموقف 288
مصالح مرسلہ کےبارے میں رحمہ کاموقف 289
مالکی مسلک کی ترویج واشاعت حلقہ ٔ اثر 291
فصل سوم:فقہِ شافعی اوراس کےاصول 299
شافعی کےبانی رحمہ 299
نشوونما۔ وتربیت 299
شافعی کےاصول 302
کتاب 304
رسول صلی اللہ علیہ وسلم 304
اجماع 307
قیاس 309
فصل چہارم:فقہِ حنبلی اوراس کےاصول 315
حنبلی کےبانی اورامام احمد بن حنبل 315
وتربیت 315
تلامذہ 317
رحمہ اللہ ،محدث یامجتہد؟ 319
حنبلی کےاصول 323
نصوص 323
فتاوائے رضی عنہم 324
رضی عنہ میں ترجیح کامعیار 324
مرسل اورحدیث ضعیف سے استنباط 325
قیاس 326
اجماع 326
رضی عنہ میں ترجیح کامعیار 324
اجماع کےبارے میں احمد بن حنبل کاموقف 326
استصحاب اورمصالح مرسلہ 329
ذرائع کےبارے میں اختلافی پہلو 332
حنبلی مسلک کی ترویج واشاعت ،حلقہ اثر 333
فصل پنجم :فقہِ جعفری اوراس کےاصولِ 339
لفظ’’شیعہ ‘‘کی وجہ تسمیہ 339
لفظ ’’جعفری‘‘کی وجہ تسمیہ 341
امام جعفرصادق رحمہ 342
امام جعفررحمہ کاعہد 343
امام جعفرصادق رحمہ کی وتربیت 343
جعفری میں کاتصور 348
جعفری کی چند مشہورکتب 351
جعفری کےاصول 353
مجید 354
حجیت ظواہرقرآن 354
356
حجیت میں قرآن 358
خبرمتواتر 360
حجیت خبرواحد 361
اجماع 361
عقل 362
جعفری میں مسترداصول 367
قیاس 367
استحسان 371
مصالح مرسلہ 371
قول صحابی 372
جعفری مسلک کی ترویج واشاعت 372
فصل ششم:فقہِ اوراس کےاصول 377
لفظ’’ظاہری ‘‘کی وجہ تسمیہ 377
ظاہری کےبانی امام داؤدرحمہ 377
امام داؤدرحمہ کی وتربیت 378
امام داؤدرحمہ کی شخصیت اورعلم وفضل 389
امام ابن حزم 380
ظاہری کی مشہورفقہاء 380
ظاہری کی چند مشہورکتب 382
ظاہری کےامتیازی اوصاف 382
ظواہرنصوص پرانحصار 383
تقلیل نصوص کی نفی 385
ظاہری کےاصول 387
مجید 388
389
افعال نبوی 390
نسخ 394
امرونہی 394
اجماع 395
دلیل 397
نص سے ماخوذ دلیل 398
اجماع سےماخوذ دلیل 401
استصحاب الحال 401
الحکم یاقل ماقیل 403
حکم میں تمام مسلمانوں کی پراجماع 405
ظاہری میں مسترداصول 407
قیاس 407
استحسان 410
ذرائع 411
قول صحابی 413
ظاہری مسلک کی ترویج واشاعت 414
مصادرومراجع 416
اشاریہ 421
423
447
رجال 456
کتابیات 478

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2

You might also like
Comments
Loading...