امام ابو حنیفہ ؒ کی قانون ساز کمیٹی کی حقیقت

امام ابو حنیفہ ؒ کی ساز کمیٹی کی حقیقت

 

مصنف : کرم الدین سلفی

 

صفحات: 84

 

کی طرف سے پیش کئے جانے والے بلند بانگ مگر کھوکھلے دعاوی میں ایک دعوٰی یہ بھی کیا جاتا ہے کہ امام ابو حنیفہ ؒ نے کی تدوین کیلئے چالیس بڑے بڑے محدثین پر مشتمل ایک مجلس ساز کمیٹی منتخب کی تھی، امام صاحب ان سے مشورہ لیتے تھے، ہر قسم کا زیر بحث آتا تھا ، اگر مجلس کا کسی مسئلہ پر اتفاق ہوتا تو درج کر لیا جاتا اور اگر اختلاف ہوتا تو کئی کئی روز اس پر بحث جاری رہتی اور یہ کام تیس سال تک ہوتا رہا۔ اور اس قصہ سے اصل مقصود چاروں اماموں کو برحق کہنے کے قولی دعوے کے برعکس دوسرے کرام کی پر فقہ حنفی کی برتری ثابت کرناہے۔ حالانکہ ساز کمیٹی کے اس دعوے کی کوئی حقیقت نہیں، ایک افسانے سے زیادہ اس کی کوئی وقعت نہیں۔ اس کے بے اصل ہونے کے تمام اس کتاب میں درج کر دیے گئے ہیں۔مسلکی عصبیت سے ہٹ کر اس کتاب کا مطالعہ صراط مسقیم کی روشن شاہراہ کی طرف آپ کو ایک قدم آگے بڑھنے میں ضرور مد دے گا، ان شاء اللہ۔
 

عناوین صفحہ نمبر
عرض ناشر 5
ساز کمیٹی 12
ساز کمیٹی کے افراد 15
قاضی ابو یوسف 16
محمد بن حسن الشیبانی 20
زفر بن ہزیل 25
اسد بن عمرو 28
یوسف بن خالد السمتی 29
نوح ابن ابی مریم 32
امام وکیع 36
حمزہ زیات 38
یحیی بن زکریا 39
عافیہ ازدی 40
حفص بن غیاث 41
حبان 42
مندل 44
قاسم بن معن 46
فضیل بن عیاض 47
داود طائی 51
ساز کمیٹی کا انجام 58
حنفی کی اشاعت کی وجوہات 66
سرکاری 66
حنفی میں وسعت 69
تقلید کی حقیقت 75
چاروں اماموں نے فرمایا 82
امام ابو حنیفہ ؒ 82
امام مالک ؒ 83
امام شافعی ؒ 83
امام احمد بن حنبل ؒ 83

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
1.5 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...