امام ابن تیمیہ رحمۃ اللہ علیہ (غلام جیلانی برق)

امام رحمۃ علیہ (غلام جیلانی برق)

 

مصنف :

 

صفحات: 192

 

مسلمانوں کا قدیم ورثہ ایک ایسا بحرِ زخّار ہے جس میں ایک سے ایک بڑھ کر سچے موتی موجود ہیں لیکن جوں جوں ہم قدیم سے جدید زمانے کی طرف بڑھتے ہیں یہ موتی نایاب ہوتے جاتے ہیں لیکن ان جواہرات میں سے ایک جوہر ایسا بھی مل جاتا ہے جو یکبارگی ساری محرومیوں کا ازالہ کردیتا ہے۔ شیخ الاسلام امام ابن تیمیہؒ کی جامع الصفات شخصیت بلا شبہ ملت اسلامیہ کے لیے سرمایہ صد افتخار ہے۔ آپ کا سب سے بڑا کارنامہ یہ ہے کہ آپ نے کو خالص کتاب اور رسول ﷺ کی بنیاد پر پیش کیا اور اس ضمن میں وہ تمام آلودگیاں جو یونانی افکار و خیالات کے زیر اثر میں راہ پا رہی تھیں یا عجمی مذہبیت کی حامل وہ صوفیانہ تعبیرات جو نیکی اور تقدس کا لبادہ اوڑھے ہوئے تھیں امامؒ نے ان سب کی تردید کی۔ ان کی حقیقت کو بے نقاب کیا اور ان کے برے اثرات سے عالم کو بچانے کے لیے عمر بھر سیف و قلم سے کرتے رہے۔ امام ابن تیمیہؒ پانچ سو (500) کے مصنف، مجتہد اور کی آفرین شخصیت تھے۔ زیر کتاب”امام ابن تیمیہؒ” جو کہ کی تصنیف ہے۔ جس میں امام موصوف ہی کے مختصر سوانح حیات، اساتذہ، تصانیف اور زندگی کے تمام ضروری گوشوں کو ناظرین کے سامنے لانے کی کوشش کی گئی ہے۔ تعالیٰ امام ابن تیمیہؒ کو غریق رحمت کرے اور ان کی لحد مبارک پر رحمت کی برکھا برسائے اور اس مصنف ہذا کو بھی اللہ رب العزت اجر عظیم سے نوازے۔ آمین

 

عناوین صفحہ نمبر
پیش لفظ ازمہر 9
حرف اول ازمصنف 18
باب اول … 22
ابتدائی زندگی 22
نام ونسب 22
کنیت 22
ولادت 23
سکونت 24
ہجرت 24
24
25
اساتذہ 26
آپ کے شاگرد 26
اقرباء 33
کی آراء 35
باب دوم 45
داستات 45
سنین 45
پہلا درس 45
عقیدہ حمویہ 46
تفصیل مناظرات 57
فقرائے رفاعیہ سے مقابلہ 60
مصرمیں طلبی 61
امام دمشق میں 69
زیارت قبور 71
علمائے بغداد کی تائید 75
علمائے بغداد کے دوخط 76
قلم کی جگہ کوئلہ 78
درگذر 79
لطیفہ 80
پسندیدہ اشعار 80
باب سوم 81
اوصاف وخصائل 81
ضرورت تجدید 81
اس عہد کی سیاسی ومذہبی حالت 81
وعمل کا مقام بلند 82
مصائب امام احمد بن حنبل 83
امام شافعی  84
شیخ علائی کا تذکرہ 84
خطابت 84
تدریس وفتا 84
بحیثیت شاعر 88
عبادت 91
زہد ورع 93
ایثار وکرم 96
97
تواضع 97
شجاعت 98
کرامات 99
حملہ تاتار 103
کھلی چتھی 104
حملہ غازان یہ ایک تحریر 106
حملہ تاتار کےمتعلق شاہ کوخط 109
ان خلدون کابیان 113
واقعہ شقب 114
جنگ کسروان کے متعلق دوخط 114
متفرق 118
جوش عقیدت 118
باب چہارم
تصانیف
تعداد تصانیف میں اختلاف 124
اختلاف کی وجود 125
ضخامت کامسئلہ 126
مجلدات کااختلاف 126
اختلاف اسماء 127
فہرست تصانیف 129
باب پنجم
تصانیف کاموضوع 154
155
155
156
اصول 156
عقائد او رعلم کلام 156
وتصوف 157
ومنطق 157
متفرق 157
عقائد میں اختلاف 158
معبدالجہنی 158
جعد بن درہم 159
جہم بن صفوان 159
اعتزال 159
فتنہ خلق 160
اشاعرہ وماترید یہ 162
163
شیعی فرقے 164
1۔زید یہ 165
2۔ کیسانیہ 165
3۔ اسما علیہ 165
4۔ باطینہ 165
نصیر یہ 166
فلا سفہ 166
فلسفیان یونان کے بنیادی عقائد 167
مسلم فلسفی 168
اور امام 170
اجتہارد 171
زیارت قبور 171
زکاۃ کی مصرف 171
مکہ کی غیر منقولہ جائداد 171
کی صورتیں 172
سجدہ تلاوت 172
کی قضا 172
صفاومروہ کے درمیان عمرہ کرنے والے کی ایک دوڑ 172
چھوٹے میں قصر 172
حلف بالطلاق 172
توشل بالانبیاء 173
موافقین (تواسل بالانبیاء) 173
مخالفین 174
باب ششم
امام کی رحلت 179
خبروفات کا رد عمل 179
ہجوم 179
گریہ وزاری 182
جنازہ 180
شاملین جنازہ کی تعداد 181
تدفین 182
زیارت وفاتحہ 182
مراثی 182
ایک مدحیہ 188
حرف آخر 190
کتابیات 191

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
5.1 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...