امام ابن تیمیہ رحمۃ اللہ علیہ ایک عظیم مصلح

امام رحمۃ علیہ ایک عظیم مصلح

 

مصنف : فضل الرحمان بن محمدالازہری

 

صفحات: 274

 

شیخ الاسلام والمسلمین امام (661۔728ھ) کی شخصیت محتاجِ تعارف نہیں۔ آپ ساتویں صدی ہجری کی عظیم شخصیت تھے،آپ بہ یک وقت مفکر بھی تھے اور مجاہد بھی ، آپ نے  جس طر ح اپنے قلم سے باطل کی سرکوبی کی۔ اسی طرح اپنی تلوار کو بھی ان کے خلاف خو ب استعمال کیا ۔ اورباطل افکار وخیالات کے خلاف ہردم سرگرم عمل او رمستعد رہے جن کے کارہائے نمایاں کے اثرات آج بھی پوری آب وتاب سے موجود ہیں۔امام صاحب علوم اسلامیہ کا بحر ذخار تھے اور تمام علوم وفنون پر مکمل دسترس اور مجتہدانہ بصیرت رکھتے تھے۔آپ نے ہر کا مطالعہ کیا اور اسے وحدیث کے معیار پر جانچ کر اس کی قدر وقیمت کا صحیح تعین کیااورمتکلمین، فلاسفہ اور منطقیین  کا خوب ردّ کیا ۔امام ابن  تیمیہ کی  وخدمات  سے متعلق جس طرح   عربی میں  کئی  کتب اور یونیورسٹیوں میں ایم فل  ، پی ایچ ڈی  کے  مقالہ جات لکھے جاچکے ہیں اسی طرح میں  امام صاحب کے متعلق کئی کتب اور  رسائل وجرائد میں  سیکڑوں ومقالات شائع  ہوچکے ہیں ۔مولانا فضل الرحمٰن  الازہری  صاحب(مصنف کتب کثیرہ) کی زیر کتاب  بعنوان ’’ امام ابن تیمیہ ایک عظیم مصلح ‘‘ بھی اسی سلسلے کی ا یک کڑی ہے۔ فاضل مصنف نے اس کتاب میں  حسب  ذیل آٹھ   عنوانات قائم کے  امام ابن تیمیہ کی   حالات زندگی کو قلمبند کیا ہے۔ابتدائی زندگی،تاتاری ،امام ابن تیمیہ  میدان جنگ میں ،امام کا وبدعت کےخلاف ،عیسائیوں کے خلاف قلمی جہاد،ابتلاء میں شدت،امام صاحب کےاخلاق واوصاف،امام ابن تیمیہ کے نامور شاگرد اور ان کی تصانیف کا تعارف۔

 

عناوین صفحہ نمبر
مقدمہ 9
ابتدائی زندگی 13
پیدائش 13
13
14
حفظ و دیگر علوم 15
مسند درس 16
عناد و مخالفت 18
رسول ﷺ سے عملی محبت کا ثبوت 20
تاتاری 22
چنگیزخان 25
بغداد کی تباہی 26
حلب اور دمشق پر تاتاری قبضہ 34
تاتاریوں کو شکست 35
فاتح کا قتل 36
عذاب الہٰی کی تین صورتیں 37
کتبغانویں 38
سلطان ملک الظاہر البند قداری 39
میں آگ کا لگنا 40
مدینہ طیبہ میں زلزلہ اور آگ 40
تاتاریوں کی باہمی خانہ جنگی 42
ملک الظاہر بیبرس البند قداری کا 18 سالہ مستحکم دور 44
امام نووی  کی جرات عالمانہ 46
ملک منصور قلاون الصالحی 48
جشنوں  کی 50
شاہ تاتارقازان خان 52
و شام میں اناج کی قلت و مہنگائی 52
قازان کا حملہ 53
قیدیوں کی لوٹ مار 54
امام ابن تیمیہ  میدان جنگ میں 56
امام ابن تیمیہ  کے ذریعے اہل جردو کسروان کی 60
کی ترغیب و تلقین اور اس کی تیاری 62
امام ابن تیمیہ  کی کے سلطان سے گفتگو 63
تاتاریوں کی واپسی 64
امام ابن تیمیہ  کا عام مومنوں کے نام 64
امام ابن تیمیہ  کے خلاف حاسدوں کا متحرک ہونا 68
معرکہ شقحب فیصلہ کن جنگ 69
امام کی دلیری و شجاعت 71
تاتاریوں سے ایک اور جنگ میں امام  کی شرکت 73
و کے خلاف 75
التاریخ کی چٹان کو توڑنا 78
رفاعی صوفیہ سے مناظرہ 78
امام ابن تیمیہ  کا اپنا بیان 81
امام ابن تیمیہ  کا ایمانی جذبہ 85
صلح کی کوشش 86
امام کا چیلنج 89
کرامتیں نہیں بلکہ اتباع اصل بات ہے 90
کتاب وسنت کے اتباع کا اقرار 91
حاسدوں کے حسد میں تیزی 96
امام کے ساتھ تین مجالس 97
امام پر ظلم کی ابتداء 103
غیر سے استغاثہ جائز نہیں 107
رہائی کے بعد پھر قید کیا جانا 108
عبرتناک واقعہ 109
امام کا اسکندریہ میں قیام 111
امام کا عفو و درگزر 112
قاضیوں کو قتل ہونے سے بچانا 114
فقیہ نور الدین علی البکری کا واقعہ 116
امام کی دمشق واپسی 119
ملکی معاملات میں اصلاحی کردار 120
عیسائیوں کے نام 123
الرسالۃ القبرصیۃ ( بادشاہوں کے نام خط ) 123
کتاب الجواب الصحیح 132
پہلے دعویٰ کا جواب 138
دوسرے دعوے کا جواب 142
چار اناجیل کی حقیقت 147
اناجیل کا حکیم سے موازنہ 149
نصاریٰ کے تیسرے اور چوتھے دعویٰ کا جواب 154
نصاریٰ کے پانچویں دعویٰ کا جواب 158
نصاریٰ کے چھٹے دعویٰ کا جواب 160
عیسائیوں کے حضرت عیسیٰ علیہ السلام کے یا اللہ کا بیٹا ہونے کے 163
مسیحی عقائد کا جواب 164
خنزیر کے حلال ہونے کا عجیب و غریب واقعہ 168
صلیب کی تعظیم 169
امام  کا اپنا تجزبہ 169
رسول ﷺ کی صفات اور آپ کے معجزات 171
کی فضیلت 174
کا اعجاز 177
دیگر معجزات 178
ابتلاء میں شدت 180
حلفی 180
امام کا استدلال 186
امام صاحب کی قید اور رہائی 187
امام صاحب کی آخری ابتلاء 188
پوچھا گیا سوال 189
سوال کا جواب 189
میں مفتیوں کا ہنگامہ 200
قید خانہ میں مصروفیات 201
ابتلاء میں ثابت قدمی 202
قاضی القضاۃ علامہ السبکی کی کتاب 205
بغداد و شام کے کے تائیدی خطوط 206
امام کے بھائی کی وفات 207
امام کی زندگی کے آخری ایام 208
معاف کرنے کا عظیم مظاہرہ 209
امام کی وفات 210
تجہیزو تکفین اور و تدفین 211
امام  کے اخلاف و اوصاف 215
تبحر 216
سب سے بڑے مخالف کے تعریفی کلمات 217
امام المزی کا قول 218
امام الذہبی کا تجزیہ 219
حدت و شدت کی وضاحت 225
جود و سخا 226
ہمہ گیر شخصیت 228
علامہ صفی الدین الحفی البخاری کا بہترین تجزیہ 229
ابن بطوطہ کا قصہ 231
امام کے بارے میں ابن بطوطہ کا باطل قول 234
ابن بطوطہ کی عبارت کا جائزہ 236
ابن حجر عسقلانی 238
ابن حجر مکی 239
امام ابن تیمیہ  کے نامور شاگرد 242
حافظ ابن قیم 242
حافظ ابن الہادی 244
حافظ ابن کثیر 246
امام الذہبی 247
علامہ تاج الدین کے اپنے استادوں کے بارے میں متعصبانہ 248
امام کے دیگر شاگرد 251
امام کی تصانیف 256
امام کی مطبوعات تصانیف 259
مصادر 272

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
10.7 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...