انسان اور کائنات

اور

 

مصنف : افتخار احمد افتخار

 

صفحات: 200

 

کریم انسانوں کی رہنمائی کےلیے تعالیٰ کی جانب سے آخری کتاب ہے ۔اس میں تمام سابقہ آسمانی کتابوں کا نچوڑ اور لب لباب موجود ہے اس لیے  یہ کتاب اس   مقام پر اانسان کی رہنمائی کرتی ہے جہاں اس کی عقل اپنی  آخری حدوں کو چھولینے کے بعد حیران راہ جاتی ہے اس کتاب میں  اللہ تعالیٰ نے کوجگہ جگہ اپنی قدرت کی نشانیوں کےذریعے  اپنے آپ کوپہچاننے  کی دعوت دی ہے ۔کہیں انسان کو اپنے  بدن پر غور  کرنے کی دعوت  ہے تو  کہیں اپنے پر ۔کہیں آسمانوں پر غور  کرنے کو کہا جارہا ہے   توکہیں پانی  اورآگ پر التفات کرنے کی دعوت دی جاتی ہے  ۔اس دعوت کا مقصود صرف اور صرف یہ ہے کہ انسان کی نظر  مادے سے  ہٹا کرمادے  کے خالق کی جانب لگائی جائے ۔ یہ لا محدود کائنات ،جس میں ہم رہتے ہیں،کس طرح وجود میں آئی ؟یہ تمام توازن،ہم آہنگی اور نظم وضبط کس طرح سے پیدا ہوئے؟یہ کیونکر ممکن ہوا کہ یہ زمین ہمارے رہنے کے لئے موزوں ترین اور محفوظ قیام گاہ بن گئی؟ایسے سوالات نوع انسانی کے ظہور ہی سے توجہ کا مرکز رہے ہیں۔ان کے جوابات کی تلاش میں  سرگرداں دان اور فلسفی ،اپنی عقل ودانش اور عقل سلیم کی بدولت اسی نتیجے پر پہنچے ہیں کہ  کی صورت گری اور اس میں موجود نظم وضبط کسی اعلی ترین خالق مطلق کی موجودگی کی دے رہے ہیں۔جو اس ساری کا خالق و مالک ہے۔زمین وآسمان، بحروبراور نگاہوں کے سامنے پھیلی ہوئی بسیط کائنات کےبارے میں انسان کےنظریات کی بنا ان سائنسی انکشافات پر رکھی ہے جن کی بنیاد میں خالق کا انکارکار فرما ہے ۔ اس کے لیے نتیجے میں انسان اپنی زندگی کے ہر پہلو میں مادیت کی طرف جھک گیا ہے اور روحانیت سے منہ موڑلیا ہے۔مغرب  نے کائنات کے بارے میں اپنے کابہت زیادہ چرچا کیا ہے جب کہ مسلمانوں کےہاں اس کا جواب کم ہی دیاگیاہے۔ جناب  افتخاراحمد افتخار صاحب نے  زیر کتاب ’’ اور کائنات‘‘ میں  کےبارے میں اہل مغرب کے کھوکھلے پر ایک تنقیدی نگاہ ڈالی ہے تاکہ اصل حقیقت کو اضح کیا جاسکے اورزندگی کی راہوں میں نظریات اور تخیلات کےاندھیروں میں روشنی کی ایک شمع جلائی جاسکے  تاکہ انسانوں کو راہ تلاش کرنےمیں دشواری نہ ہو ۔شاید یہ کتاب مطبوع نہیں  ہےمصنف  نے کتاب وسنت سائٹ پر پبلش کرنےکےلیے پی ڈی ایف فامیٹ میں  دی ہے ۔

 

عناوین صفحہ نمبر
انتساب 2
حرف آغاز 6
مغرب آج اور کل 11
سائنس نہیں 22
کلیسا اور 36
ہائے یہ اہل دانش 41
کلیسا کا زوال 48
اور 54
عقل کہ محو تماشا ہے ابھی 68
حقیقت کی تلاش 77
ابدیت کی تلاش 93
منزلوں کے نشان 104
معرفت کے راستے 113
کا فلسفیانہ تصور 123
ہے 131
اور شیطان 140
اور 162
صراط مستقیم 176
ماخذ و مصادر 190
اختتام 198

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
7 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...