انسان اور قرآن

اور

 

مصنف : حافظ مبشر حسین لاہوری

 

صفحات: 187

 

ایمان کے چھ بنیادی اجزاء میں ایک یہ ہے کہ تعالیٰ کی نازل کردہ الہامی کتابوں پر ایمان لایا جائے کہ وہ سب منزل من اللہ سچی کتابیں تھیں اور مجید ان میں آخری الہامی کتاب ہے ۔آج آسمان دنیا کے نیچے اگر کسی کتاب کو کتاب ِالٰہی ہونے کا شرف حاصل ہے تووہ صرف قرآن مجید ہے ۔ اس میں شک نہیں کہ قرآن سےپہلے بھی اس دنیا میں تعالیٰ نے اپنی کئی کتابیں نازل فرمائیں مگر حقیقت یہ ہے کہ وہ سب کی سب انسانوں کی غفلت، گمراہی اور شرارت کاشکار ہوکر بہت جلد کلام ِالٰہی کے اعزاز سے محروم ہوگئیں۔ اب دنیا میں صرف قرآن ہی ایسی کتاب ہے جو اپنی اصلی حیثیت میں آج بھی محفوظ ہے ۔ عالم گواہ ہے کہ اس دنیا میں سب سے بڑی انقلابی کتاب ہے اس کتاب نے ایک جہان بدل ڈالا۔ اس نےاپنے زمانے کی ایک انتہائی پسماندہ قوم کو وقت کی سب سے بڑی ترقی یافتہ اور مہذب ترین قوم میں تبدیل کردیا اور انسانی زندگی کےلیے ایک ایک گوشے میں نہایت گہرے اثرات مرتب کیے۔قرآن کریم ہی وہ واحد کتاب ہے جو تاقیامت انسانیت کے لیے ذریعہ ہدایت ہے ۔ اسی پر عمل پیرا ہو کر دنیا میں سربلند ی او ر میں نجات کا حصول ممکن ہے۔ زیر کتاب ’’ اور قرآن ‘‘ڈاکٹر حافظ مبشرحسین ﷾ کی سلسلہ عقائد میں سےتیسری کتاب ہے۔اس کتاب میں انہوں نے یہ بتایا ہے کہ مجید کےساتھ ہمارا بنیادی طور پر تین طرح کا تعلق ہے ۔ ایک تویہ کہ ہم قرآن مجید پرصدق دل سے ایمان لائیں ۔ دوسرا یہ کہ ہم پورے کےساتھ اس کی تلاوت کو روزانہ کامعمول بنائیں اور تیسرا یہ کہ ہم ممکنہ استطاعت کی حدتک اس کے پر عمل کریں۔نیز اس کتاب میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ قرآن مجید کے ساتھ جذباتی وابستگی ہی کافی نہیں جب تک کہ اس کے ساتھ ایمان وعمل کی وابستگی نہ پیدا کی جائے ۔ تعالیٰ فاضل مصنف کی اس کاوش کو قبول فرمائے اوراسے بے عمل قرآن سے دور مسلمانوں کو قرآن کےقریب لانے کا ذریعہ بنائے ۔(آمین)

 

عناوین صفحہ نمبر
پیش لفظ 3
قر آ ن محیدپر ایمان 13
کی نا ز ل کردہ  سچی کتا ب 14
پہلی دلیل 14
دو سر ی دلیل 15
ایک اعترا ض کا جو اب 18
تیسر ی  دلیل 19
چو تھی دلیل 21
ڈا کڑ مو ریس بو کا ئیے  کی 22
پا نچویں دلیل 24
کی طر ف سے آخری کتاب ہدایت 25
ایک شبہ کا ازالہ 28
قر آن کی آڑ  میں و سنت  سے اعرا ض  کرنے والے کا حضور ﷺ نے سخت  نا پسند کیا 32
کتا ب ہدا یت 32
کی محفو ظ کردہ  واحد کتا ب 34
نزو ل قر آ ن 35
حفاظت قر آن  اور جمع  و تد وین  36
 قر ا ء ت قر آن  کی سات مختلف نو عیتیں (سبعہ  احرف) 42
قر آن مجید کی تلاوت ( تلا وت قرآ ن کی فضیلت  اور آداب ) 53
فضا ئل قر آن 54
قر آن مجید کے عمو می 54
تلا وت قر آن کے 57
مجید سیکھنے  اور سکھانے کے 62
حفظ قر آن   کے 65
قر آن  مجید  حفظ کرنے  کے بعد اسے جان  بوجھ  کر بھلا دینے  والے  کی سزا 68
 قر آ ن  میں مہا رت حا صل کر نے  والے  کے فضا ئل 69
قر آ ن مجید کی سور توں کے فضا ئل 70
سو رۃ الفا تحہ  کی فضیلت 70
سو رۃ البقر ہ کی فضیلت 73
آیتہ الکر سی  کی فضیلت 74
سو رۃ  البقرہ کی آخری دو  آیتوں کی فضیلت 75
سو رۃ  البقرہ اور سو رۃ آل  عمران  کی فضیلت 75
سو رۃ ھود واقعہ   مر سلات  نبا ء  اور سورہ  تکویر کی فضیلت 76
سور ۃ الاسر اء  (بنی اسرا ئیل ) اور سو رۃ  الزمر  کی فضیلت 77
سو رۃ  کہف کی فضیلت 77
جمعہ کے رو ز سورہ  کہف پڑھنے  کی فضیلت 79
سو رہ  کہف اور کے ذاتی  فضیلت 79
سورہ  الانبیا ء  اور آیت کر یمہ  کریمہ  کی فضیلت 80
سورۃ   السجد ۃ اور سو رۃ  الدھر کی فضیلت 80
 سو رۃ یا سین  کی فضیلت 81
سو رۃ الفتح کی فضیلت 81
سو رۃ  الحدید’  الحشر ’  الصف ’  الجمعہ’  التغا بن ’ الاعلی  کی فضیلت 81
سو رۃ  الملک  کی فضیلت 82
 سو رۃ  التکویر  ’ سو رۃ  الانفطار  اور سو رۃ      الانشقاق  کی فضیلت 82
 سو رۃ الا علیٰ اور سو رۃ  الغاشیہ  کی فضیلت 83
سو رہ  الکا فرون کی فضیلت 83
 سور ۃ  الاخلاص  کی فضیلت 83
 معو ذ تین  کی فضیلت 85
 قر آ ن مجید  کی فضیلت و عظمت  کے بارے ضعیف روایات 87
سورتوں  کے با رے  میں چند ضعیف روا یات 91
سو رۃ الفاتحہ  کے بارے  روا یات 91
سو رۃ   آل عمران  کے بارے ضعیف  رو ایات 91
سو رۃ النساء ’ ما ئدہ ’ انعام ’ اعراف ’  انفال ’  یو نس ’ھود کے با رے ضعیف روایات 92
سور ۃ  یسن  کے با رے ضعیف روا یات 92
سو رۃ  یا سین  سے  متعلقہ  ایک تجرباتی  عمل 94
سو رہ غا فر (حم  المو من ) کے بارے ضعیف  روایات 95
 سو رۃ دخان کے بارے ضعیف  روایات 95
  سور ۃ  رحمن  کے بارے ضعیف  روایات 96
 سورۃ  الواقعہ کے بارے ضعیف  روایات 96
 سو رۃ الحشر کے بارے ضعیف  روایات 97
 سور ۃ الملک کے بارے ضعیف  روایات 97
سو رۃ  الاعلی کے بارے ضعیف  روایات 98
سورۃ  الفجر  ’ سور ۃ  الانشرح  اور  سور ۃ   الفیل کے بارے ضعیف روایات 98
سو رۃ  ابسینہ کے بارے ضعیف  روایات 98
 الزلز ال ’ العادیات ’  التکا ثر ’ الکا فرون ’  النصر ’  الاخلاص  کے بارے ضعیف  روایات 98
تلا وت  قر آ ن  کے مسنون  101
تلا وت قرآن  اور مسئلہ  طہا رت 102
تلا و ت  قر آ ن  اور  تعو ز وتسمیہ 108
 تعوز یعنی  اعو ز با للہ پڑھنا 108
تسمیہ  یعنی  اعو ز باللہ  پڑھنا 109
صحت  تلا وت  اور حسن   تلا وت (یعنی  تجو ید و قر آءت  ) کا ہتمام 110
صحت  تلاو ت 110
صحت  تلاو ت کی ضرو رت  و اہمیت 110
 حسن تلا وت 112
حسن قر اءت کی  اہمیت 112
نبی کریم ﷺ اور حسن  قر اءت 113
اور حسن قراءت 115
حسن قراءت اور قواعد مو سیقی 117
خشو ع و خضوع کا لحاظ 119
دنیوی مصرو فیت و مشعو لیت  آڑے نہ ہو 119
یکسوئی اور ہوش وحواس قائم ہوں 119
قر آ ن مجید کو سمجھ کر پڑھا جا ئے  اور ئیں ما نگی جا ئیں 119
خشیت الہی  کا اظہار کیا  جا ئے 119
قر آن مجید  کا واحترام  اور عظمت  و ووقار  ذہن میں ر کھا جائے 121
دو ران  تلاوت  و دنیوی  باتوں  سے پر ہیز  کیا جائے 121
 پر سکون ما حول کا  اہتمام  رکھا  جائے 122
تلاوت  کرنے  والے  دو سروں  کے آرام  کا بھی خیال رکھنا  چا ہیے 122
  سجد ہ  تلاوت 124
سجدہ تلاوت  مستحب ہے 124
سجدہ تلاوت   کی فضیلت 125
سجدہ تلاوت    کے لئے و ضو اور قبلہ  رخ ہونا مستحب ہے 126
سجدہ تلاوت    کی 127
سجدہ تلاوت    کے وقت  تکبیر اور تسلیم 127
رو زانہ کا معمو ل  اور طریقہ تلاوت 128
تلاوت قرآن  کو روزانہ  کا معمول بنانا چا ہئے 128
صحابہ  اورسلف  صا لحین کا معمول 128
کتنے دنوں  میں قرآن  مجید ختم کیا جا ئے 129
جب طبیعت  نہ چا ہے  تو تلا وت  نہیں کرنی 130
تلاوت  او نچی کی جا ئے  یا آہستہ  دونوں طرح درست ہے 131
کیسٹ سے 132
مصحفی تر بیت  سے تلا وت کرنا 132
تلاوت  قر آن  اور غیر ضروی 133
ختم  قرآن  کی 133
مجید  ختم کر کے دو بارہ  آ غاز کرنا 133
سلام نہ کہنا 134
پشت نہ کرنا 134
قر آن مجید کا فہم 135
فہمی اور اس کی ضرور ت و اہمیت 135
قر ٖآن  فہہی کی مشکل  صو رت 135
قرآن  فہمی  کی آسان  صو رت 136
ان دو نوں  صو رتوں  میں کو ئی تضا د نہیں 136
اردو  دان طبقہ  کے لئے قر آ ن  فہمی آسان  ہے 138
قر ٖآن  فہہی کی رو شنی میں 139
قرآن  فہمی  کی  بنیادی شرائط 140
نیت  کی د رستی 140
 قر آن کو کتا ب ہدا یت سمجھنا 141
قر آن مجید  سے دلچسپی  پیدا کرنا 142
قرآ ن  کے حضور  عاجزی و  انکساری او رتقو یٰ کا اظہار  کرنا 143
منا سب  جگہ ’ پر سکون  ماحو ل ’  اور موزوں  وقت کا خیال رکھنا 144
فہم قر آ ن  کے لئے  کے حضور ما نگنا 144
 فہم  قرآ ن  کے مبادی 146
قر آن  کی خود  قرآ ن اور سنت  ر سو ل  ﷺسے 146
تا بعین 148
تا بعین  کے مختلف میں تطبیق کی صورت 149
اسرائیلی روا یات 149
اسرائیلی روا یات کی حیثیت 150
 اسرا ئیلیات  کی افادیت 150
با لرا ئے حرام  ہے 152
 قر آن مجیدپر عمل 153
عمل با لقر آن اور اس کی ضرورت و اہمیت 153
قر آنی پر عمل نہ کرنے والوں  کی سزا 153
تلاوت قرآن   کا اجربھی اسے  ملے جو قرآن  پر عمل کرے گا 156
قر آ ن  پر عمل اور ہماری صورت حال 158
ایک چھوٹی سۃ مثال 160
کے رسول کا قر آن  پر عمل 160
پہلی مثال 161
دوسری مثال 162
تیسری مثال 162
چوتھی مثال 163
پانچویں مثال 164
چھٹی مثال 164
ساتویں مثال 166
کرام ﷜ کا مجید پر عمل 168
قر آ ن مجید اور ہل ایمان 171
قر آن  پر عمل ۔ خواتین  کا ایک منفرد  تجربہ 173
پہلی مثال 175
دوسری مثال 176
تیسری مثال 178

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
4.3 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...