اسلام کا معاشی نظام

کا معاشی نظام

 

مصنف : پروفیسر چوہدری غلام رسول چیمہ

 

صفحات: 411

 

دور جدید کا جن  سیاسی ،معاشرتی اور معاشی سے دوچار ہے اس پر زمانے کا ہر نقش فریادی ہے۔آج انسان اس رہنمائی کا شدید حاجت مند ہے کہ اسے بتلایا جائے ۔ زندگی کے ان مسائل کا کیا پیش کرتا ہے۔ زندگی کے مختلف شعبوں میں اس کا وہ  نقطہ اعتدال کیا ہے؟جس کی بناء پر وہ سیاسی ،معاشی اور معاشرتی دائرے میں استحکام اور سکون واطمینان سے انسان کو بہرہ ور کرتا ہے ۔اس وقت دنیا میں دو معاشی نظام اپنی مصنوعی اور غیر فطری بیساکھیوں کے سہارے چل رہے ہیں۔ایک مغرب کا سرمایہ داری نظام ہے ،جس پر آج کل انحطاط واضطراب کا رعشہ طاری ہے۔دوسرا مشرق کا اشتراکی نظام ہے، جو تمام کی مشترکہ ملکیت کا علمبردار ہے۔ایک مادہ پرستی میں جنون  کی حد تک تمام انسانی اور اخلاقی قدروں کو پھلانگ چکا ہے تو دوسرا پرستی  اور اجتماعی ملکیت کا دلدادہ ہے۔لیکن رحم دلی،انسان دوستی اور انسانی ہمدردی کی ان دونوں میں ہی مفقود ہے۔دونوں کا ہدف دنیوی مفاد اور مادی ترقی کے علاوہ کچھ نہیں ہے۔اس کے برعکس ایک متوسط اور منصفانہ معاشی نظریہ پیش کرتا ہے،وہ سب سے پہلے دلوں میں پرستی،انسان دوستی اور رحم دلی کے جذبات پیدا کرتا ہے۔ زیر کتاب ” کا معاشی نظام”محترم جناب پروفیسر چیمہ صاحب کی تصنیف ہے،جس میں انہوں نے اسلام کے اسی  عظیم الشان معاشی نظام کی خوبیوں کو بیان کیا ہے اور اسلام کے علاوہ دیگر نظاموں کی خامیوں اور خرابیوں کو واضح کیا ہے۔اسلام حلال طریقے سے کمانے اور حلال جگہ پر خرچ کرنے کی ترغیب دیتا ہے۔یہ  اپنے موضوع ایک  انتہائی مفید اور شاندار کتاب ہے۔ تعالی سے ہے کہ وہ مولف کی اس کاوش کو قبول فرمائے ۔آمین

 

عناوین صفحہ نمبر
تقدیم 11
13
معاشی نظام و تحریکات 35
92
کا معاشی تصور 112
انفرادی ملکیت کی حد بندی 153
ریاست کی اجتماعی ملکیت 173
تقسیم دولت 185
اور تقسیم دولت 220
صرف دولت 238
میں مالیات کی فراہمی کے طریقے 248
فہرست نا مکمل

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
9.9 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...