جد اول علم الوقف

جد اول الوقف

 

مصنف : قاری محمد ابراہیم میر محمدی

 

صفحات: 16

 

وقف کا لغوی معنی ٰٹھہرنا اور رُکنا ہے۔ جبکہ اہل فن قراء کرام کی اصطلاح میں وقف کے معنیٰ ہیں کہ”کلمہ کے آخر پر اتنی دیر آواز کو منقطع کرنا جس میں بطور عادت سانس لیا جاسکے، وقف  منجملہ علوم قرآنیہ میں  سے  ایک ہے  جو کہ علم تجوید کاتکملہ وتتمہ ہے ۔ کیونکہ تجوید کی طرح وقوف کی معرفت بھی ترتیل کا ایک حصہ اور اس کا جز ہے۔اہمیت  کے  لحاظ سے  علم وقف کسی طرح   بھی علم تجوید سے کم نہیں  جس آیت مبارکہ سے  تجوید کا وجوب ثابت ہوتا ہےاسی آیت سے علم وقف کا بھی وجوب ثابت ہوتا ہے ۔اسی لیے قراء نے رسائل تجوید میں وقف  کے بھی بیان کیے ہیں حتی ٰ کہ بہت  سے    نے اس موضو ع پر مستقل کتابیں بھی تصنیف کی ہیں ۔ زیر کتابچہ ’’جدوال الوقف‘‘ شیخ القراء  والمجودین   فضیلۃ الشیخ قاری محمد ابراہیم میر محمدی ﷾  کامرتب کردہ ہے  قاری صاحب   نے اس مختصر رسالہ  میں آسان فہم انداز میں نقشہ جات کی صورت میں  وقف  کے جملہ ومسائل کو جمع کردیا ہے ۔مبتدی تجوید وقراءات  اس  کتابچہ سے مستفید ہوکر وقف کے   کو آسانی سے سمجھ سکتے ہیں ۔ تعالیٰ قاری  صاحب  کی خدمتِ  کے سلسلے میں  تمام تدریسی وتصنیفی جہود کو قبول فرمائے اور انہیں ایمان وسلامتی  اور   وعافیت والی زندگی دے ۔(آمین)

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
3.4 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...