نقوش ابو الکلام و مقالات آزاد

نقوش ابو الکلام و آزاد

 

مصنف : عبد المجید سوہدروی

 

صفحات: 194

 

مولانا ابو الکلام11نومبر1888ء کو پیدا ہوئے اور 22 فروری1958ءکو وفات پائی۔ کا اصل نام محی الدین احمد تھا۔آپ کے والد بزرگوارمحمد خیر الدین انہیں فیروزبخت (تاریخی نام) کہہ کر پکارتے تھے۔ آپ میں مکہ معظمہ میں پیدا ہوئے۔ والدہ کا تعلق مدینہ سے تھا ۔سلسلہ نسب شیخ جمال الدین سے ملتا ہے جو اکبر اعظم کے عہد میں آئے اور یہیں مستقل سکونت اختیار کرلی۔1857ء کی جنگ میں آزاد کے والد کو ہندوستان سے ہجرت کرنا پڑی کئی سال میں رہے۔ مولانا کا بچپن مکہ معظمہ اور مدینہ میں گزرا ۔ابتدائی والد سے حاصل کی۔ پھر جامعہ ازہرمصر چلے گئے۔ چودہ سال کی عمر میں علوم مشرقی کا تمام نصاب مکمل کر لیا تھا۔مولانا کی ذہنی صلاحتیوں کا اندازہ اس سے ہوتا ہے کہ انہوں نے پندرہ سال کی عمر میں ماہوار جریدہ لسان الصدق جاری کیا۔ جس کی مولانا الطاف حسین حالی نے بھی بڑی تعریف کی۔ 1914ء میں الہلال نکالا۔ یہ اپنی طرز کا پہلا پرچہ تھا۔ ترقی پسند سیاسی تخیلات اور عقل پر پوری اترنے والی مذہبی ہدایت کا گہوارہ اور بلند پایہ سنجیدہ کا نمونہ تھا۔آپ ایک المسلک تھے ۔آپ کا قادیانیت یا مرزائیت سے کوئی تعلق نہ تھا۔لیکن اس کا باوجود بعض لوگوں نے آپ پر مرزا کا جنازہ پڑھنے کا بہتان لگا کر آپ کو قادیانیت کی طرف میلان رکھنے والا ظاہر کیا ہے۔ زیر کتاب” نقوش ابو الکلام ومقالات آزاد “جماعت اہل کے معروف عالم مولانا عبد المجید سوہدروی صاحب کی تصنیف ہے، جس میں انہوں نے  مولانا آزاد کے مسلک اور عقیدے پر گفتگو کی ہے۔ تعالی سے ہے کہ وہ مولف کی اس عظیم خدمت کو اپنی بارگاہ میں قبول فرمائے اور ان کے میزان حسنات میں اضافہ فرمائے۔ (آمین)

 

عناوین صفحہ نمبر
کتاب وسنت کامقام 3
اصحاب کی عظمت 3
انسانی زندگی کی سب سےبڑی قوت 3
ارباب فکر دانش کی آراء 4
فہرست 9
عرض ناشر 13
منصف کاتعارف 15
حرف چند 23
پیش گفتار (محمد ادریس فاروقی ) 37
تعارف (عبدالرشید عراقی ) 42
آزاد نمبر (مولانا عبدالمجید سوہدروی ) 48
آزاد کی یاد 50
امام الہند 53
آغازیہ 56
ولادت 58
حسب ونسب 59
تحصیل علوم 60
آپ کی 61
علوم جدید مغربیہ 61
خلوت پسندی 62
سحر خطابت 63
جادو نگاری 64
اوصاف وخصائل 65
تردید بدعات 67
تقلید سےنفرت 71
ابتاع کتاب وسنت 76
عشق 81
آزاد کاتفقہ فی القرآن ولحدیث 85
سےشیفتگی 95
اعلائے کلمۃ الحق 102
بحث ومناظرہ 100
104
وشاعت 109
جیل کی کال کوٹھریوں میں دعو ت وتبلیغ 110
اہل اجتماعات میں شرکت 110
داخلی اورخارجی 111
غیر مسلم تحریکات کاانسداد 112
اخلاقی 114
کی پابندی 115
نما ز 115
118
118
119
سیاسی 120
عالمگیر ممالک مفتوحہ 122
ممالک مفتوحہ 122
کی پوزیشن 122
علمائے ہند کاانگریزوں اوراسکھوں ےس 124
آزاد کانظریہ 125
احیائے قوم وملت 126
صور اسرافیل 127
جہادکی ترغیب 128
پیام بیدارسی 129
عدالتی بیان 130
اسلامی کاقیام 131
اعلان حقیقت 132
کاتصور 134
مولنا آزاد کاتخیل 135
تحریک اورکانگرس 136
مولانا آزاد کی مساعی 138
حریت کش سازشیں 138
آزاد کی جرات وہمت 139
کانگرس کی صدارت 140
مسلمانوں کی علیحدگی 141
آزاد کی استقامت 141
کانگرس کے اجلاسوں میں مولنا آزاد کاآوازہ 143
مولاانا آزاد اورپاکستان 148
آفتاب وحکمت کاغروب 150
ہائے وفات مولا ناابو الکلام آزاد 151
آزاد 152
تاویل کتاب وسنت کی نہیں ہوگی قول امام  کی ہوگی 153
حاملین  وسنت کامقام رفیع 153
وسنت  کی حفاظت وصیانت 154
وسنت سے بعدہجر کانقصان 154
بالرائے کی شکلیں اورنقصانات 155
صفات الہیہ کی ترتیب 156
کے نام پر جھگڑے تباہی کاباعث ہیں 157
ونبوت ہدایت کااصل ذریعہ  ہے 158
طیبہ کانچوڑ اورخلاصہ 159
ومشائخ کورب بنانا قبیح جرم ہے 159
تقلید نےعلم وبصیرت کی راہوں سےدور کردیا 160
مناقب کرام ﷢ 161
مقام محمود کی عظمت وانفرادیت 162
دعوت کابہترین طریقہ 163
سیدھا سادہ اورسچا راستہ ہے 164
دوطرح کےانسان 165
کےتین جووجہ نزاع بنےہوئے تھے 165
کاپیرون سےمطالبہ 166
معروف کاحکم دیتاہے منکر سے روکتاہے 166
فطرت ہے 167
تفرقہ اورگروہ بندی سےبچیں 167
کانظریہ 168
دماغی ترقی کی راہ میں سب سےبڑی رو ک 168
اصل مرکز یقین 169
درازدستی اینکوتہ آستیناں بیں 170
فقہی قواعد کی حقیقت 170
ارباب کا ایک خطرناک قاعدہ 171
اہل کی حیلہ جوئیاں 171
علمائے سوء کی مذمت 172
ہذا الامۃ 173
حیل ومکائد کی آڑ 174
علمائے سوء کےرنگا رنگ حیلے بہانے 175
علمائے پر ظلم وستم کی داستان خونحپکاں 177
رسول برحق کی محبت وشیفتگی 179
جشن حصو ل وماتم ضیاع 179
فرمان رحمت آیا 181
کچھ ہوش چاہیے 181
حضور ﷺ کےپاک ذکر کی مجلس 182
مجالس مولود میں بے سروپا 183
اتفاق 184
فرشتوں سے بہتر ہے 184
انسانیت کی بستی اجاڑہ ہوگئی 185
انسان  کی دلچسپیوں کاعجیب حال 186
برائی بہر صورت برائی ہے 186
اربیورہ کریسی 187
ایک جمہور ی نظام ہے 187
اسلامی 188
حالات کاانقلاب 189
یاموت 189
مجرموں کاعظیم الشان کہڑا 190
راحت کہا 190
گاہ عیش میں وہ خوشی اورراحت کہاں 190
اجتماع ضدین 191
ظالم گورنمنٹ 191
شخصی اقتدار بالذات ظلم ہے 191

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
4.1 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...