شیطان کی انسان دشمنی انتباہ اور بچاؤ

شیطان کی دشمنی انتباہ اور بچاؤ

 

مصنف :

 

صفحات: 144

 

کی آخری کتاب میں بتایا گیا ہے کہ شیطان کا کھلا دشمن ہے اور اس بدبخت نے رب ذوالجلال کی جانب سے دھتکارے جانےکے بعد یہ اعلان کیا تھا کہ وہ بنی آدم کو ہر پہلو سے بہکانے اور راہ راست سے بھٹکانے کی کوشش کرے گااور انہیں اپنے ساتھ جہنم میں لے کر جائے گا۔یہ عزوجل کا انسانوں پر خصوصی فضل و کرم ہے کہ اس نے نہ صرف انہیں شیطانوں کی دشمنی سے  آگاہ کیا ہے بلکہ اس سے بچاؤ کے طریقے بھی بتلا دیئے  جو کتاب و میں وضاحت کے ساتھ موجود ہیں۔زیر کتاب میں و کی روشنی میں ان تمام امور کو واضح کیا گیا ہے جن کے ذریعے انسان ،شیطان لعین کے خطرناک حملوں سے محفوظ رہ سکتا ہے ۔آج کے مادی و الحادی دور میں جبکہ شیطان اور اس کے پیروکار پوری قوت کے ساتھ انسانیت پر حملہ آور ہیں،ہر کو اس کتاب کا مطالعہ کرنا چاہیے تاکہ وہ شیطانی حملوں کے بالمقابل اپنا دفاع کر سکے۔
 

عناوین صفحہ نمبر
تقدیم 1
مقدمہ 3
تمہید :شیطان کی برائیوں سے آگاہی 7
کنجوسی اور بخیلی 14
وسوسہ اندازی 17
شیطان چور ہے 19
مسلمانوں کے درمیان فساد ڈالنا 20
شیطان کی قربت اور دوستی 22
خوف ناک دکھانا 27
خیر کی چیزوں کا بھلوانا 29
نیت،قول اورعمل میں خرابی پیدا کرنا 30
سر پر گرہ لگانا 37
چھوٹے چھوٹے گناہوں کو حقیر سمجھنا 43
شیطان مردو سے بچنے کا محفوظ قلعہ
پہلا قلعہ :اخلاص 50
دوسرا قلعہ : کریم کی تلاوت 53
تیسرا قلعہ :آیت الکرسی 54
چوتھا قلعہ :سورہ بقرہ کی آخری 55
پانچواں قلعہ:معوذتین پڑھنا 55
صبح وشام 57
سوتے وقت 57
ہر کے وقت 58
بیماری کےوقت 59
چھٹا قلعہ :سوبار لا الہ الا کہنا 59
ساتواں قلعہ:کثرت سے 60
آٹھواں قلعہ:سجدہ تلاوت 61
نواں قلعہ :بسم کہنا 61
دسواں قلعہ: کو تسلیم کرنا 65
گیارہواں قلعہ:قیام الیل 66
بارہواں قلعہ:استعاذہ 67
تیراہواں قلعہ:غصہ پی جانا 77
چودہواں قلعہ:صفوں کی درستگی 78
پندرہواں قلعہ:سجدہ سہو کرنا 81
سولہواں قلعہ:جماعت کا لزوم 82
سترہواں قلعہ:تشہد میں 88
اٹھارہواں قلعہ:سترہ رکھ 88
انیسواں قلعہ: عزوجل سے کرنا 89
بیسواں قلعہ:شیطان کی مخالفت کرنا 91
اکیسواں قلعہ: او راستغفار کرنا 97
بائیسواں قلعہ :اچھی بات 99
تئیسواں قلعہ: عزوجل کو … 100
چوبیسواں قلعہ:بندگی 105
پچیسواں قلعہ:صراط مستقیم 107
چھبیسواں قلعہ:گھر کی حفاظت 111
خاتمہ 128
فہرست 131

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
2 MB ڈاؤن لوڈ سائز

You might also like
Comments
Loading...