Categories
Islam تفاسیر قرآن رشد زبان

سات تراجم سات تفاسیر نور القرآن

سات تراجم سات تفاسیر نور القرآن

 

مصنف : محمد صدیق بخاری

 

صفحات: 521

 

قرآن ِ مجید انسانوں کی راہنمائی کےلیے رب العالمین کی طرف سے نازل کی گئی آخری کتاب ہے ۔اور قرآن کریم ہی وہ واحد کتاب ہے جو تاقیامت انسانیت کے لیے رشد وہدایت کا سرچشمہ اور نوعِ انسانی کےلیے ایک کامل او رجامع ضابطۂ حیات ہے ۔ اسی پر عمل پیرا ہو کر دنیا میں سربلند ی او ر آخرت میں نجات کا حصول ممکن ہے لہذا ضروری ہے کہ اس کے معانی ومفاہیم کوسمجھا جائے ،اس کی تفہیم کے لیے درس وتدریس کا اہتمام کیا جائے او راس کی تعلیم کے مراکز قائم کئے جائیں۔ قرٖآن فہمی کے لیے ترجمہ قرآن اساس کی حیثیت رکھتا ہے ۔آج دنیاکی میں کم وبیش 103 زبانوں میں قرآن کریم کے مکمل تراجم شائع ہوچکے ہیں۔جن میں سے ایک اہم زبان اردو بھی ہے ۔اردو زبان میں اولین ترجمہ کرنے والے شاہ ولی اللہ محدث دہلوی ﷫ کے دو فرزند شاہ رفیع الدین ﷫اور شاہ عبد القادر﷫ ہیں ۔ اب تو اردو زبان میں سیکڑوں تراجم دستیاب ہیں اور یہ سلسلہ تاحال جاری وساری ہے ۔ زیر تبصرہ کتاب ’’نور القرآن سات تراجم سات تفاسیر ‘‘ محترم جناب محمد صدیق بخاری صاحب کی مرتب شدہ ہے اس میں انہوں نے سورۃ البقرہ کے سات تراجم سات تفاسیر کو ایک جگہ جمع کردیا ہے ۔ یعنی ہر آیت کے سات ترجمے اور سات تفسیریں اس میں جمع کردیں ہیں مترجمیں میں شاہ عبد القادر، مولانا اشرف علی تھانوی ، مولانا احمد رضا خان ،مولانا محمد جوگڑھی ،مولانا امین احسن اصلاحی ﷭ اور جاوید غامدی کے اسماء گرامی شامل ہیں اور تفاسیر میں مولانا شبیر احمد کی تفسیر عثمانی ، مفتی محمدشفیع کی معارف القرآن ، مولانا محمدنعیم الدین مرادآبادی کی خزائن العرفان ، مولانا سیدابوالاعلی مودودی ، کی تفہیم القرآن ، مولانا حافظ صلاح الدین یوسف کی احسن البیان ، پیر کرم شا ہ الازہری کی ضیاءالقرآن ، مولانا عبد الماجد درآبادی کی تفسیر ماجدی ، مولاناامین احسن اصلاحی کی تدبر قرآن اورجاوید احمدغامدی یک البیان شامل ہے ۔مرتب نے بغیر کی کسی تبصرے کے مذکورہ احباب کےتراجم اور تفاسیر کو محض ایک جگہ جمع کردیا ہے

 

عناوین صفحہ نمبر
نورالقرآن کامقصد 5
سورۃ البقرۃ 7
تراجم بسم اللہ 55
تفاسیر بسم اللہ 55
بسم اللہ قرآن کی ایک آیت ہے 55
فضائل ومسائل 55
اللہ 56
الرحمن اوراورالرحیم 56
بسم اللہ کی حکمت 57
بسم اللہ کی تاریخی حیثیت 58
یہ آیت دعا ہے 58
صحف سابقہ بسم اللہ کاتعلق 58
سورۃ الفاتحہ
نام 59
آیات وحروف کی تعداد 59
زمانہ نزول 59
مضمون 59
سورہ کامرکز ی مضمون 60
اسلوب 60
قرآن سےتعلق 60
سورہ کاتعلق بعدکی سورہ سے 61
تراجم آیت 61
تفاسیر آیت 62
حمد 62
رب العالمین 63
تراجم آیات 64
تفاسیر آیات 64
لفظ رحمن اوررحیم میں فرق 64
کیارحمٰن کےبعد رحیم کالفظ ایک زائد لفظ ہے؟ 65
لفظ مالک کی وضاحت 65
لفظ دین کی تشریح 65
اللہ مہربان ہی نہیں منصف بھی ہے 66
لفظ مالک کی مزید وضاحت 66
روزجزاکی وضاحت 67
دنیادارالعمل ہےجزاوسزاکی جگہ نہیں 67
انسان کی ملکیت اوراللہ کی ملکیت میں فرق 67
لفظ عبادت کامفہوم 67
عبادت کےساتھ اطاعت کاتعلق 67
عبادت میں بھی بندہ خداکی مددکامحتاج ہوتاہے 68
لفظ عبادت کےتین معنی 68
انبیاءاولیاء سےمدد چاہنا شرک نہیں 69
کیاکسی کےسامنے ہاتھ باندھ کرکھڑے اورشرک ہے 69
محبوبان الہیٰ کی طرف رجوع بھی اصل اسباب کی طر ف رجوع مانند ہے 70
استعانت اورشرک کی حقیقت 70
مافوق الاسباب اورماتحت الاسباب استعانت میں فرق 70
توحید کی تین اہم قسمیں 70
تراجم آیات 71
تفاسیر آیات 71
’اھدنا ‘کامطلب 71
اصراط المستقیم 72
صراط الذین انعمت علیہم 72
انعمت علیہم 72
مغضوب علیہم 72
الضالین 72
انسانی غضب اورغضب الہیٰ میں فرق 73
مغضوب علیہم اورالضالین کااطلاق کن پر 73
رازی کی بجائے 73
انعام سےمراد 73
ہدایت کیاہے 73
ہدایت کےدرجات 74
صراط مستقیم کتاب اللہ اوررجال اللہ دونوں کےمجموعہ سےملتاہے 75
صراط مستقیم 75
رجال اللہ کی پہچان 75
سورۃ فاتحہ پردعا کےپہلو سےایک نظر 75
اس دعا کی خوبیاں 76
سورۃ فاتحہ سےمتعلق بعض مسائل اورحکمتیں 77
دعاکرنےکاطریقہ 77
استعانت وتوسل کی تحقیق 78
کسی چیز کوحلال یاحرام قراردینے کاحق صرف اللہ تعالی ٰکاہے 78
علامات شرک کو اختیار کرنابھی شرک ہے 78
استعانت اورتوسل 78
انبیاءاولیاء کووسلہ بنانانہ مطلقا جائز ہے انہ مطلقا ناجائز 79
کیابزرگان دین کومدد کےلیےپکارنا مشرک نہیں ہے 80
مطلقا پکارنا شرک نہیں ہےمافوق الاسباب پکارنا شرک ہے 80
مافوق الاسباب طریقے سےکسی کو پکارنا اوصل عبادت ہے 80
فوت شدہ بزرگوں سےاستغاثہ کرنااوارن وکاوسیلہ پکڑنا جائز نہیں اس کےدلائل 81
سورۃ البقرۃ
نام اورتعداد آیات 83
وجہ تسمیہ 83
زمانہ نزول 83
فضائل 83
مرکزی مضمون 84
تراجم آیات 133
تفاسیر آیات 133
ان اللہ لایستحی ان یضر ب مثال 133
مناسب موقع تنبیہ 133
تمثیل کی ضرورت اورحقیقت 133
حقیر چیز حقیر مثال 134
بڑی چھوٹی چیزیں اورنسبت 134
اللہ کےگمراہ کرنےکامطلب 134
عہد اورمیثاق 134
عہد کامطلب 134
معاہدہ الست مراد ہے 135
عہدہ اللہ کامستقل فرمان ہے 135
عہد سےمراد تین عہد 135
رشتہ قرابت کی اہمیت 135
تعلقات کےحقوق اداکرناواجب 136
قیامت کی دلیل 136
کیف کامفہوم 136
کفرکاایک خاص پہلو 136
استواکامفہوم 136
آسمان ایک حسی وجود 137
آسمان کی حقیفت کاتعین مشکل ہے 137
تراجم آیات 137
تفاسیر آیات 139
قصہ آدم وابلیس بیان کرنےکی حکمت 139

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
11.8 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam تراجم قرآن رشد زبان

قرآن مجید کے آٹھ منتخب اردو تراجم

قرآن مجید کے آٹھ منتخب اردو تراجم

 

مصنف : ڈاکٹر محمد شکیل اوج

 

صفحات: 286

 

قرآن ِ مجید انسانوں کی راہنمائی کےلیے رب العالمین کی طرف سے نازل کی گئی آخری کتاب ہے ۔اور قرآن کریم ہی وہ واحد کتاب ہے جو تاقیامت انسانیت کے لیے رشد وہدایت کا سرچشمہ اور نوعِ انسانی کےلیے ایک کامل او رجامع ضابطۂ حیات ہے ۔ اسی پر عمل پیرا ہو کر دنیا میں سربلند ی او ر آخرت میں نجات کا حصول ممکن ہے لہذا ضروری ہے کہ اس کے معانی ومفاہیم کوسمجھا جائے ،اس کی تفہیم کے لیے درس وتدریس کا اہتمام کیا جائے او راس کی تعلیم کے مراکز قائم کئے جائیں۔ قرٖآن فہمی کے لیے ترجمہ قرآن اساس کی حیثیت رکھتا ہے ۔آج دنیاکی میں کم وبیش 103 زبانوں میں قرآن کریم کے مکمل تراجم شائع ہوچکے ہیں۔جن میں سے ایک اہم زبان اردو بھی ہے ۔اردو زبان میں اولین ترجمہ کرنے والے شاہ ولی اللہ محدث دہلوی ﷫ کے دو فرزند شاہ رفیع الدین ﷫اور شاہ عبد القادر﷫ ہیں ۔ اب تو اردو زبان میں بیسیوں تراجم دستیاب ہیں ۔ہنوز یہ سلسلہ جاری وساری ہے ۔ زیرہ تبصرہ کتاب ’’ قرآن مجید کے آٹھ منتخب اردو تراجم ‘‘ڈاکٹر محمد شکیل کی اوج کی کاوش ہے ۔دراصل یہ ڈاکٹر شکیل اوج کا وہ تحقیقی مقالہ ہے جو انہوں نے 2000 ء میں کراچی یونیورسٹی میں پیش کر کے ڈاکٹریٹ کی ڈگری حاصل کی۔موصوف نے اپنے اس مقالہ میں مولانا احمد رضا خان بریلوی، مولانا محمود حسن دیوبندی، مولانا ثناء اللہ امرتسری، مولانا عبد الماجد دریاآبای،مولانا سید ابو الاعلیٰ مودودی ، مولانا امین احسن اصلاحی ،مولانا پیرمحمد کرم شاہ الازہری ، مولانا ابو منصورکے قرآنی تراجم کے محاسن معائب کا تقابلی جائزہ نہایت خوبی ،فنی مہارت، ناقدانہ بصیرت ، محققانہ بصارت اور کثیر الجہت علوم کی مدد سےپیش کیا ہے ۔

 

عناوین صفحہ نمبر
اظہار واقعی 4
عالم تمام حلقہ دام خیال ہے 6
مقدمہ 7
موضوع کا تعارف ضرورت و اہمیت 7
موضوع کا دائرہ بحث و تحقیق 9
موضوع کے لازمی مصادر اور اسلوب تحقیق 11
قرآن حکیم کے ترجموں کی ضرورت و اہمیت 15
قرآن حکیم کے اردو تراجم کی ابتدا اور اس کا ارتقائی جائزہ 21
منتخب اردو ترجمہ نگاروں کا تعارف 41
منتخب اردو تراجم کا تقابل بلحاظ معنویت 133
منتخب اردو تراجم کا تقابل بلحاظ لغویت 179
منتخب اردو تراجم کا تقابل بلحاظ ادبیت و متفرقات 223
اختتامیہ 259
کتابیات 261
اجمالی مطالعہ 265

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
4.3 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam توحید الوہیت زبان

خدا فلسفیوں کی نظر میں

خدا فلسفیوں کی نظر میں

 

مصنف : ڈاکٹر وحید عشرت

 

صفحات: 886

 

دنیا جہان میں لا تعداد مذاہب پائے جاتےہیں ان مذاہب میں قدر مشترک یہ ہے کہ یہ تمام کے تمام ایک عالمگیر خدا اور ایک برتر ہستی پر یقین رکھتے ہیں جو قادر مطلق اور عالم کل ہے خدا کے نام ہر مذہب میں اور ہر زبان میں الگ الگ ہیں، خدا کی صفات تو عام طور پر ایک جیسی ہی ملتی ہیں، کہ وہ خالق ہے، مالک، ہے رز‍ق دینے والا، گناہ معاف کرنے والا، رحم کرنے والا اور دعا سننے والا۔مفکرین کے خدا کے متعلق مختلف افکار ہیں۔ زیر تبصرہ کتاب ’’ خدا فلسفیوں کی نظر میں ‘‘ ڈاکٹر وحید عشرت کی مرتب شدہ ہے اس مجموعہ مقالات میں مرتب نے اللہ تعالیٰ کے متعلق 40 مختلف مفکرین کے تحریر شدہ ایسے مضامین کو جمع کیا ہےکہ جن میں معروف فلاسفہ کے تصور خدا کو بیان کیا گیا ہے ۔مضمون نگاروں میں ڈاکٹر منظور احمد ، علامہ محمد ایوب دہلوی، محمد ادریس کاندھلوی ، علامہ محمد اقبال مولانا امین احسن اصلاحی ، محمد لطفی جمعہ وغیرہم کے اسمائے گرامی قابل ذکر ہیں ۔

 

عناوین صفحہ نمبر
دیباچہ 5
نامورفلاسفہ کاتصورالہٰ 14
خداکاوجود 89
خدااورآگسٹائن کاالہیاتی نظام 102
خدا 112
خدا۔مرتبہ ذات حق 124
خداکاعلم اورمعرفت 196
خدااورمذہب 222
اللہ پاک قادرہے 224
وجودباری 262
خدا۔نظریہ توحیدمطلق اورعبدالکریم الجیلی 294
وجودباری تعالیٰ عقل دلائل کےآئینےمیں 309
تصورخدا 329
خداکاتصوراوردعامکامفہوم 341
ذات الہیہ کاتصوراورحقیقت عبادت اوردعا 367
خداکی ذات وصفات مختلف فلاسفہ کی آراءپرتبصرہ 394
مسئلہ علم باری تعالیٰ متعلق بموجودات 424
عالم اورحق تعالیٰ کےساتھ اس کاتعلق 428
اللہ کی صفات(نصوص الحکم میں) 450
صفات خدا(فتوحات مکیہ میں) 462
خدا،روح اورگوئے 482
خدااورانسان (ہندوؤں کی نظرمیں) 445
اسلامی خداپرستی 496
صفات واسمائےالہیہ 529
تصورخدااوردعاہ مفہوم 572
خدازمان اورنسبت 593
خدااورکائنات 604
خدااوراخلاقیات 611
صفات خدا(تشبیہ وتنزیہہ) 613
اقبال اورتصورذات باری 626
خداخلق افعال اورجبروقدرکامسئلہ 639
اللہ کاتصورملاصہ راکےالہیانی افکارکی روشن میں 648
خدا۔ مذاہب عام میں 680
اقبال کاوجدان توحید 795
اقبال حضورباری میں 798
وجومطلق خدا 821
خدا۔خودی اورزمان ومکان 833
اقبال کاالہیاتی فلسفہ 843
بہارہوکرخزاں الااللہ 850
خداکاوجود(شذات اقبال سے) 884

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
16.1 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam اسلام انکار حدیث اہل بیت اہل حدیث تاریخ تہذیب حدیث وعلوم حدیث حنفی سنت علماء کتب حدیث محدثین

انکار حدیث کا نیا روپ (جلد سوم و چہارم )

انکار حدیث کا نیا روپ (جلد سوم و چہارم )

 

مصنف : غازی عزیر مبارکپوری

 

صفحات: 374

 

پاک و ہند میں علماء اہل حدیث کی خدمت حدیث اسلامی تاریخ کاروشن باب ہے اہل علم نے ہر دور میں اس کی تحسین کی پاک وہند سے کتب حدیث کے نہایت مستند متون شائع ہوئے اس خطہ زمین میں کتب حدیث کی نہایت جامع ومانع شروح وحواشی تحریر کیے گئے۔بر صغیر میں فتنہ انکار حدیث صدیوں سے زوروں پر ہےاس کی بعض صورتیں ایسے صریح انکار حدیث پر مبنی ہیں جس کے حامل کا مسلمان ہونا بھی ایک سوالیہ نشان ہے اس فتنہ کے بنیادی اسباب میں دین سے لاعلمی ،غیر مسلم تہذیب سے مرعوبیت اور سیاسی وفکری محکومی سرفہرست ہے یہ پڑھے لکھے تجدد پسند حضرات کافتنہ ہے جوعلوم اسلامیہ سے ناآشنا ہونے کی وجہ سے اسلام اور اس کے اوامر ونواہی سے جذباتی عقیدت رکھتے ہیں ۔فتنہ انکار حدیث  کو واضح کرنے اور عوام الناس کو اس سے متعارف کروانے کےلیے فدائیان کتاب وسنت نے دن رات محنت کی ان میں سے ایک غازی عزیر بھی ہیں جنہوں نے ’’انکار حدیث کا نیا روپ‘‘جیسی عظیم اور مفصل کتاب لکھ کر حدیث پر اٹھائے جانے والے تمام سوالات کاحل پیش کردیاہے ۔اس کتاب میں جہاں منکرین قرآن وسنت کے تمام اعتراضات کا تفصیلی جائزہ لیا گیا ہے وہاں حجیت حدیث ،حفاظت حدیث اور کتابت حدیث جیسے اہم مضامین پر غازی صاحب نے اپنی مجتہدانہ بصیرت سے خوب روشنی ڈالی ہے جس کو پڑھنے کے بعد کسی صائب العقل او رسلیم الفطرت شخص کو حدیث کےمتعلقہ شکوک وشبہات دور کرنے میں مجال انکار نہیں رہتی۔یہ کتاب چار جلدوں پر مشتمل ہے۔جس میں  حجیت حدیث ،حفاظت حدیث اور کتابت حدیث جیسی اہم مباحث کی تفصیلی گفتگو کے ساتھ منکر ین حدیث امین احسن اصلاحی ک افکار کا کتاب وسنت کی روشنی میں جائزہ لیا گیا ہے تاکہ وہ سادہ لوح افراد جوان کے پراپیگنڈے کاشکار ہوجاتے ہیں انہیں حقیقت حال کی خبر ہوسکے اورعامۃ الناس کو بھی اس فتنے سے آگاہی ہوسکے ۔

 

عناوین صفحہ نمبر
حصہ سوئم
اخبار آحاد اور ان کی حجیت
خبر واحد کی بحث 17
غربت کی قسمیں 27
خبر واحدکی حجیت قرآن کریم  کی روشنی میں 32
عمل نبوی ﷺ سے خبر واحد کی حجیت کااثبات 35
خبر واحد کی حجیت کے منکرین کی ایک دلیل 39
خلفائے راشدین اور اہل بیت کےعمل سے خبر واحد کی حجیت کا اثبات 41
اہل بیت کا خبر واحد کو حجت سمجھنا 55
عام اصحاب رسول ﷺ اورتابعین کےعمل سےخبر واحد کی حجیت کااثبات 56
عمل صحابہ کے متعلق بعض شبہات کاجواب 62
محدثین اور علمائے امصار کاخبر واحد سے حجت پکڑنا 63
خبر واحد سے متعلق بعض اختلافات کی ابتداء اور ان کی تنظیم 73
خبر واحد کے متعلق اختلافات او ران کاجائزہ 75
علمائے حنفیہ کےنزدیک اخبار آحاد کی قبولیت کی شرائط ان کاجائزہ 84
پہلا حنفی اصول 85
جمع کی حقیقت 85
ترجیح 87
دعوئ نسخ 92
دوسرا حنفی اصول 100
تیسرا حنفی اصول 109
چوتھا حنفی اصول 110
پانچواں حنفی اصول 111
چھٹا حنفی اصول 129
ساتواں حنفی اصول 131
آٹھواں حنفی اصول 142
نواں حنفی اصول 153
علمائےمالکیہ کےنزدیک  اخبار آحاد کی قبولیت کی شرائط اوراس کاجائزہ 155
چند احادیث صحیحہ جنہیں حنفی ومالکی اصول کےتحت ناقابل اعتبار ٹھہرایاگیاہے 165
کیا اخبار آحاد سے عقائد میں استدلال واجب ہے؟ 167
احادیث خروج مہدی کی تحقیق 182
علم نظری اور علم ضروری میں فرق 197
خبر واحد کو مفید علم بنانے والے قرائن 199
خبرواحد کےبالقرائن مفید علم بیان کرنےکے اسباب 207
اخبار آحاد کاظن کافائدہ پہنچانا 208
احادیث نبوی ﷺ کو دوسری خبروں پر قیاس کرنا 216
آئمہ اربعہ کے نزدیک قیاس پراحادیث نبوی ﷺ کی تقدیم 219
خبر نبوی کو حکم تسلیم کرنے کی بجائے خود حاکم بن جانا 225
تقلید جامد اور گروہی ومسلکی عصبیت 226
اخبار آحاد کی حجیت اصلاحی صاحب کی نظر میں 244
خبر واحد اور شہادت میں فرق 245
متأخرین فقہائے مالکیہ  کی رائے کاجائزہ 250
کیا ایک ہی معاملہ میں سنت مختلف بھی ہوسکتی ہے؟ 252
صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم اجمعین کے مابین اختلافا ت کی نوعیت 252
اشیاء کی حلت وحرمت کے متعلق اسلامی اصول وضوابط 254
فقہائے حنفیہ کی رائے اور ان کا جائزہ 258
اصلاحی صاحب کاایک ’منکر ‘حدیث سے استدلال فرمانا 262
کیا اجتہاد شرعی اساس ہے؟ 276
قیا س کے ارکان اور ان کی شروط 279
علت حکم اور حکمت حکم میں فرق 281
علت کی معرفت کے ذرائع 282
تطبیق کی چندمثالیں 284
قیاس کی اقسام 284
محل اجتہاد اور اس کی بعض ضروری شرائط 285
اجتہاد کے متعلق امت کا مؤقف 286
قیاس کے قائلین کے دلائل 289
اجتہاد کا شرعی مقام ومرتبہ 292
اجتہاد کے شریعت یا حکم شریعت نہ ہونے کےدلائل 293
شافعیہ کی رائے 301
افکار فراہی 320
باب ہفتم
فتنہ وضع احادیث
احادیث موضوعہ کی بحث 325
وضاعین کے مختلف طبقات 355
وضاعین کےخلاف خلفاء اور حکام وقت اقدام 388
وضاعین کے خلاف محدثین کا علمی معرکہ 390
مشہور علامات وضع 394
متن حدیث میں وضع کی علامات 400
وضع حدیث کے محرکات ۔۔اصلاحی صاحب کی نظر میں 420
کثرت  احادیث کی حقیقت 444
حاصل مطالعہ 455
حصہ چہارم
باب ہشتم
حدیث غث وسمین میں امتیاز کےلیے اساسی کسوٹیاں اصلاحی صاحب کی نظر میں 9
کیا کسی کے کشف والہام یا انوار القلوب اورذوق سے احادیث نبوی ثابت ہوتی ہے؟ 11
اصلاحی صاحب کی پہلی کسوٹی 22
دوسری اصلاحی کسوٹی 36
تیسری اصلاحی کسوٹی 50
کیا صحیح حدیث پرکھنے کےلیے ’’قرآن کریم‘‘کوئی معیار ہے؟ 54
چوتھی اصلاحی کسوٹی 69
پانچویں اصلاحی کسوٹی 73
چھٹی اصلاحی کسوٹی 83
باب نہم
تدبر حدیث کے چند بنیادی اصول اصلاحی صاحب کی نظر میں 93
پہلا بنیادی اصول 94
دوسرا بنیادی اصول 106
تیسرا بنیادی اصول 108
چوتھا بنیادی اصول 122
پانچواں بنیادی اصول 146
باب دہم
تدبر حدیث کےلیے امہات فن کا انتخاب۔۔اصلاحی صاحب کی نظر میں 151
ضبط کی تعریف 153
تفسیر ’’الکشاف‘‘ پر ایک نظر 155
تفسیر ’’الکبیر‘‘ پر ایک نظر 164
’’جامع البیان فی تفسیرالقرآن‘‘ پر ایک نظر 166
حدیث کی امہات کتب 173
موطأ امام مالک کی امنیازی خصوصیات،اصلاحی صاحب کی نظر میں 138
امام مالک اور ان کی الموطأ کامختصر تعارف 175
صحیحین کا مقام ومرتبہ ۔اصلاحی صاحب کی نظر میں 204
صحیح امام بخاری کی امتیازی خصوصیات۔اصلاحی صاحب کی نظر میں 239
امام بخار ی اور ان کی ’’الجامع الصحیح ‘‘ کا مختصر تعارف 266
صحیح امام مسلم کی امتیازی خصوصیات،اصلاحی صاحب کی نظر میں 332
امام مسلم او ران کی ’’صحیح ‘‘کا تعارف 334
امام ابن شہاب الزہری اور ان کی علمی خدمات 343
اختتامیہ 369

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
17 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam اسلام اعمال انکار حدیث اہل حدیث تاریخ تہذیب حدیث وعلوم حدیث سنت علماء کتب حدیث

انکار حدیث کا نیا روپ (جلد اول و دوئم )

انکار حدیث کا نیا روپ (جلد اول و دوئم )

 

مصنف : غازی عزیر مبارکپوری

 

صفحات: 371

 

پاک و ہند میں علماء اہل حدیث کی خدمت حدیث اسلامی تاریخ کاروشن باب ہے اہل علم نے ہر دور میں اس کی تحسین کی پاک وہند سے کتب حدیث کے نہایت مستند متون شائع ہوئے اس خطہ زمین میں کتب حدیث کی نہایت جامع ومانع شروح وحواشی تحریر کیے گئے۔بر صغیر میں فتنہ انکار حدیث صدیوں سے زوروں پر ہےاس کی بعض صورتیں ایسے صریح انکار حدیث پر مبنی ہیں جس کے حامل کا مسلمان ہونا بھی ایک سوالیہ نشان ہے اس فتنہ کے بنیادی اسباب میں دین سے لاعلمی ،غیر مسلم تہذیب سے مرعوبیت اور سیاسی وفکری محکومی سرفہرست ہے یہ پڑھے لکھے تجدد پسند حضرات کافتنہ ہے جوعلوم اسلامیہ سے ناآشنا ہونے کی وجہ سے اسلام اور اس کے اوامر ونواہی سے جذباتی عقیدت رکھتے ہیں ۔فتنہ انکار حدیث  کو واضح کرنے اور عوام الناس کو اس سے متعارف کروانے کےلیے فدائیان کتاب وسنت نے دن رات محنت کی ان میں سے ایک غازی عزیر بھی ہیں جنہوں نے ’’انکار حدیث کا نیا روپ‘‘جیسی عظیم اور مفصل کتاب لکھ کر حدیث پر اٹھائے جانے والے تمام سوالات کاحل پیش کردیاہے ۔اس کتاب میں جہاں منکرین قرآن وسنت کے تمام اعتراضات کا تفصیلی جائزہ لیا گیا ہے وہاں حجیت حدیث ،حفاظت حدیث اور کتابت حدیث جیسے اہم مضامین پر غازی صاحب نے اپنی مجتہدانہ بصیرت سے خوب روشنی ڈالی ہے جس کو پڑھنے کے بعد کسی صائب العقل او رسلیم الفطرت شخص کو حدیث کےمتعلقہ شکوک وشبہات دور کرنے میں مجال انکار نہیں رہتی۔یہ کتاب چار جلدوں پر مشتمل ہے۔جس میں  حجیت حدیث ،حفاظت حدیث اور کتابت حدیث جیسی اہم مباحث کی تفصیلی گفتگو کے ساتھ منکر ین حدیث امین احسن اصلاحی ک افکار کا کتاب وسنت کی روشنی میں جائزہ لیا گیا ہے تاکہ وہ سادہ لوح افراد جوان کے پراپیگنڈے کاشکار ہوجاتے ہیں انہیں حقیقت حال کی خبر ہوسکے اورعامۃ الناس کو بھی اس فتنے سے آگاہی ہوسکے ۔

 

عناوین صفحہ نمبر
حصہ اول
حرفے چند 11
تقریظ 17
احوال واقعی 35
باب اول
حدیث کا تعارفی خاکہ 55
وحی اور اقسام وحی 55
وحی متلو 57
وحی غیر متلو 58
وحی متلو اور غیر متلو میں فرق 58
وحی کےکچھ حصہ کو ’’الفاظ‘‘میں اور کچھ کو ’’معانی‘‘میں نازل کئے جانے کی مصلحت 59
رسول اللہ ﷺ بحیثیت معلم شریعت 60
اللہ تعالی نے تاکیداً مکمل اطاعت رسول ﷺ کاحکم فرمایا ہے 64
حدیث نبوی ﷺ کا منکر کافرہے 77
قرآن میں مذکورہ لفظ ’’الحکمۃ‘‘ کے معنی ’’سنت‘‘ ہیں 78
سنت نبوی بھی وحی پر مبنی ہے 86
سنت نبوی بھی قرآن کی  طر ح محفوظ ہے 100
اصول شریعت میں حدیث کی ثانوی حیثیت ناقابل قبول ہے 111
عدم اتباع سنت انکار رسالت کےمترادف ہے 124
سنت کی ضرور ت واہمیت جناب اصلاحی صاحب کی نظرمیں 127
جناب اصلاحی صاحب کی نظر میں قرآن وسنت کا تعلق اور ان کا باہمی نظام عقل وفطرت کے عین مطابق ہے 129
علم حدیث کی چند بنیادی اصطلاحات 130
حدیث 130
سنت 134
أثر 150
خبر 152
اخبار آحاد 154
خبر متواتر 157
حدیث وسنت میں فرق اصلاحی صاحب کی نظر میں 176
حدیث کسے کہتے ہیں 176
احادیث کے ظنی ہونےکی حقیقت 178
خبر واحد کے بیان میں بعض اغلاط واوہام کی وضاحت 183
باب دوئم
قرآن وسنت کا باہمی تعلق 219
فہم قرآن سنت کامحتاج ہے 224
قرآن کی روشنی میں باعتبار مضمون،احادیث کی قسمیں 234
نسخ قرآن کامسئلہ 275
نسخ کی اقسام 279
نسخ قرآن پر تمام اہل شرائع کااتفاق 284
کیا حدیث وسنت قرآن کی ناسخ ہوسکتی ہے؟ 286
منکرین نسخ کے بعض دلائل اوران کاجائزہ 294
بعض آیات قرآن جن کانسخ امت کےنزدیک سنت سے ثابت ہے 297
تقیید مطلق اور تخصیص عموم القرآن کا مسئلہ 317
بصورت ’’زیادت علی الکتاب‘‘خبر واحد کو رد کرنے کےبطلان پر محققین کے دلائل 321
قرآن وسنت کاباہمی تعلق اصلاحی صاحب کی نظر میں 328
استدراكات 363
حصہ دوئم
باب سوئم
صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم اجمعین اور شرف صحابیت 9
عدالت صحابہ رضوان اللہ علیہم اجمعین 37
مختصر کوائف واحوال صحابہ رضوان اللہ علیہم اجمعین 55
صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم اجمعین اور شرف صحابیت اصلاحی صاحب کی نظر میں 66
’’حنفی اصول فقاہت راوی‘‘ پر اصلاحی صاحب کابیجااعتماد 91
باب چہارم
سند کی لازوال عظمت اور فن جرح وتعدیل کا تعارف 123
سند کی بحث 123
فن  جرح وتعدیل کی بحث 144
سند کی عظمت او راس کے بعض کمزور پہلو۔اصلاحی صاحب کی نظر میں 211
بدعت کی بحث 238
فضائل اعمال وغیرہ میں ضعیف حدیث کا مقبول ہونا محل نزاع ہے 271
علماء جن کے نزدیک ضعیف حدیث مطلقا قابل قبول ہے 271
ضعیف حدیث سے احکام میں احتجاج 274
صوفیاء اور زہاد کا حدیثیں وضع کرنامعروف ہے 279
بعض متساہل محدثین 284
استدراک 292
باب پنجم
روایت بالمعنی 297
پہلا گروہ۔۔روایت بالمعنی کےمانعین اور ان کے دلائل 309
دوسراگروہ 315
تیسراگروہ 316
روایت بالمعنی مشاہیر علماء کی نظرمیں 324
روایت بالمعنی کے جواز کےلیے شرائط 329
خلاصئہ کلام 342
روایت بالمعنی کے بعض مضمرات۔اصلاحی صاحب کی نظر میں 343

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
15.5 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam اصول تفسیر اصول حدیث اہل حدیث خطبات ومقالات علوم حدیث فقہ فقہاء محدثین

علم حدیث میں اسناد ومتن کی تحقیق کے اصول ( مقالہ پی ایچ ڈی )

علم حدیث میں اسناد ومتن کی تحقیق کے اصول ( مقالہ پی ایچ ڈی )

 

مصنف : ڈاکٹر حافظ حمزہ مدنی

 

صفحات: 432

 

زیر نظر کتاب در اصل ڈاکٹر حافظ حمزہ مدنی کاوہ مقالہ ہے جو انہوں نے پی ایچ ڈی کے لیے’ علم حدیث میں اسناد و متن کی تحقیق کے اصول‘ کے عنوان سے لکھا۔ ڈاکٹر صاحب کو خدا تعالیٰ کی جانب سے نہ صرف لحن داؤدی عطاء ہوا ہے بلکہ موصوف عقائد، اصول فقہ، اصول حدیث اور اصول تفسیر جیسے وقیع موضوعات کا اعلیٰ ذوق رکھتے ہیں۔ ڈاکٹر صاحب کی صلاحیتوں کا حقیقی ادراک مقالے کی ورق گردانی سے بخوبی ہو جائے گا اس میں انہوں نے  اسناد و متن اور ان سے متعلقہ چند بنیادی اصطلاحات کا تعارف کرواتے ہوئے اسناد و متن کی تحقیق کے اصولوں کا فنی ارتقاء پیش کیاہےاور اسناد و متن کی تحقیق کے وہ اصول بھی بتلائے ہیں جو فن حدیث کے ماہرین نے مرتب فرمائے ہیں۔ ایک مستقل باب میں فقہاء کرام کی طرف سے پیش کر دہ ’متن حدیث ‘ کی تحقیق کے ’درایتی نکات‘ کی مکمل اور جامع وضاحت کی گئی ہے۔ علاوہ ازیں علم فقہ اور علم حدیث کے مابین تعلق اور مناسبت بیان کرتے ہوئے معاصر مفکرین کے ان افکار کو زیر بحث لایا گیا ہے جو محدثین کرام کے مسلمہ اصولوں سے ٹکراتے ہیں۔ کتاب کے آخری حصہ میں نہایت عرق ریزی کے ساتھ معاصر مفکرین کی طرف سے پیش کئے گئے درایتی نقد کے اصولوں کے ضمن میں ان کے مختلف جزوی دلائل کا تجزیہ کیا گیا ہے۔

 

عناوین

صفحہ نمبر

مقدمہ

باب اوّل: اسنادو متن- معنی، مفہوم اور ارتقاء

1

پہلی فصل  -اسناد  متن کا معنی و مفہوم اور سند و متن سے متعلقہ چند بنیادی اصطلاحات کا تعارف

2

دوسری فصل- اسناد و متن کی تحقیق کا فنی ارتقاء اورنشوونما

30

–  عہد  رسالت میں

31

–   عہد صحابہ میں

35

–   عہد تابعین میں

39

–  عہد تبع تابعین میں

39

–   دور تدوین میں

41

تیسری فصل- روایت  و درایت- معنی و مفہوم اور مختلف علوم میں ان کا استعمال

57

باب دوم: اسناد متن کی تحقیق کا طریقہ کار-محدثین کریم کے اصولوں کی روشنی میں

85

پہلی فصل-  اسناد حدیث کی تحقیق کے محدثانہ اصول

86

–   راوی کا کردار (عدالت)

92

—-   راوی کی صلاحیت (ضبط)

104

–   اتصال سند

112

دوسری فصل-متن احادیث کی تحقیق کے محدثانہ اصول

128

مباحث-  مخالفت الثقات باعتبار متن (بحث شاذ و محفوظ)

141

متن حدیث میں انتفائے علت

148

—-  موضوع یا ضعیف حدیث کو پہچاننے کی علامات

163

باب سوم: اسناد و متن کی تحقیق-  فقہائے کرام کے اصول اور ان کا جائزہ

181

پہلی فصل –  فقہائے  حنفیہ کے درایتی اصول اور بعض امثلہ کی روشنی میں ان کا جائزہ

186

دوسری فصل –  فقہائے مالکیہ   کے درایتی اصول اور بعض امثلہ کی روشنی میں ان کا جائزہ

228

باب چہارم : علم فقہ اور علم حدیث کاباہمی تعلق اور تقابل-محدثین اور فقہاء کے طرزعمل کی روشنی میں

247

پہلی  فصل- علم حدیث اور علم فقہ —  دو مختلف فنون علم، باہمی تعلق اور تقابل

248

دوسری فصل- اہل فقہ اور اہل حدیث کی باہمی کشمکش کے اسباب ، نتائج اور حل

263

تیسری فصل-   محمد الغزالی ؒ کی السنۃ أھل الفقہ و أھل الحدیث کا جائزہ

282

باب پنجم : دور حاضر میں نقد روایت کا درایتی تصور – تنقیدی جائزہ

306

پہلی فصل –  نقد روایت میں عقل کی بنیاد پر استخفاف حدیث کا آغاز و ارتقاء

307

دوسری فصل-  عصرحاضر میں درایت کا تصور اور جدت پسند مفکرین کے درایتی اصول

318

مولانا شبلی  نعمانی ؒ کے درایتی اصول اور ان کا جائزہ

321

مولانا حمید الدین فراہی ؒ کے درایتی اصول اور ان کا جائزہ

324

مولانا امین احسن اصلاحی ؒ کے درایتی اصول اور ان کا جائزہ

326

جناب جاوید احمد غامدی کے درایتی اصول اور ان کا جائزہ

326

باب ششم : اسناد و متن کی تحقیق میں صحابہ و محدثین کا منہج  شبہات اور ان کا ازالہ

343

پہلی فصل استدراکات صحابہ ؓ کا منہج اور مثالوں سے اس کی وضاحت

344

استدراکات عائشہ ؓ علی الصحابہ کی چند مثالیں

349

دیگر صحابہ کرام ؓ کے استدراکات کی چند مثالیں

362

دوسری فصل  چند معروف محدثین سے منسوب بعض عقلی درایتی اصولوں کی وضاحت

376

تیسری فصل  صحیح احادیث پر بعض محدثین کے حوالے سے پیش کردہ درایتی نقد کی  حقیقت

390

خلاصہ بحث

مصادر و مراجع

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
11 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam اعمال توحیدوشرک سنت

حقیقت شرک و توحید

حقیقت شرک و توحید

 

مصنف : امین احسن اصلاحی

 

صفحات: 315

 

اللہ تبارک وتعالیٰ کے تنہالائقِ عبادت ہونے ، عظمت وجلال اورصفاتِ کمال میں واحد اور بے مثال ہونے اوراسمائے حسنیٰ میں منفرد ہونے کا علم رکھنے اور پختہ اعتقاد کےساتھ اعتراف کرنے کانام توحید ہے ۔توحید کے اثبات پر کتاب اللہ اور سنت رسول ﷺ میں روشن براہین اور بے شمار واضح دلائل ہیں ۔ اور شرک کام معنیٰ یہ کہ ہم اللہ کے ساتھ کسی کو شریک ٹھرائیں جبکہ اس نےہی ہمیں پیدا کیا ہے ۔ شرک ایک ایسی لعنت ہے جو انسان کوجہنم کے گڑھے میں پھینک دیتی ہے قرآن کریم میں شرک کوبہت بڑا ظلم قرار دیا گیا ہے اور شرک ایسا گناہ ہے کہ اللہ تعالیٰ انسان کے تمام گناہوں کو معاف کردیں گے لیکن شرک جیسے عظیم گناہ کو معاف نہیں کریں گے ۔شرک اس طرح انسانی عقل کوماؤف کردیتا ہےکہ انسان کوہدایت گمراہی اور گمراہی ہدایت نظر آتی ہے ۔نیز شرک اعمال کو ضائع وبرباد کرنے والا اور ثواب سے محروم کرنے والا عمل ہے ۔ پہلی قوموں کی تباہی وبربادی کاسبب شرک ہی تھا۔ چنانچہ جس کسی نے بھی محبت یا تعظیم میں اللہ کے علاوہ کسی کواللہ کے برابر قرار دیا یا ملت ابراہیمی کے مخالف نقوش کی پیروی کی وہ مشرک ہے۔ زیر تبصرہ کتاب’’حقیقت شرک وتوحید‘‘صاحب تدبرقرآن مولانا امین احسن اصلاحی ﷫ کی تصنیف ہے ۔یہ کتاب دو حصوں حقیت شرک اور حقیقت توحید پر مشتمل ہے ۔اس کتاب میں انہوں نے دین کے بنیادی عقائد کی وضاحت قرآن حکیم کے فطری وعقلی دلائل کی روشنی میں کی ہے ۔پہلے حصے حقیقت شرک میں دس ابواب قائم کیے ہیں ۔ اور ا ن میں شرک کی حقیقت اور اس کے اقسام ، مشرکین کا شرک،اہل کتاب کا شرک، منافقین کا شرک،موجودہ دنیا او رموجودہ مسلمانوں کی حالت کا جائزہ اور شرک کا اصلی سبب بیان کیا ہے۔اور کتاب کے دوسرے حصہ حقیقت توحید میں توحید کے عمومی دلائل ،توحید کےدلائل انفس،توحید خصوصی دلائل، توحید کےاثرات اور دین میں توحید کی اہمیت کو واضح کیا ہے

 

عناوین صفحہ نمبر
عرض ناشر 9
دیباچہ 13
حقیقت شرک
تمہید 19
شرک کی حقیقت اوراس کےاقسام 32
مشرکین کاشرک 27
ملائکہ پرستی 30
جنات پرستی 37
کواکب پرستی 42
آباء پرستی 48
خود پرستی 52
اہل کتا ب کاشرک 71
احبار پرستی 74
پاکی وبرتری کادعوی 89
ایمان بالجنت والطاغوت 94
حمایت شرک 97
منافقین کاشرک 100
تحاکم الی الطاغوت 101
پچھلے مباحث کاخلاصہ 115
موجودہ دنیا کاسرسری جائزہ 120
مشرق بعید 121
ہندوستان 126
مغربی یورپ اورامریکہ 129
روس 132
مسلمانوں کی موجود ہ حالت کاجائز ہ 134
وقت کااصلی فرض اوربعض شبہات کاازالہ 146
کیا شرک تقاضے فطر ت ہے 159
شرک کااصلی سبب 179
حقیقت توحید
مقدمہ 201
قرآن کے اولین مخاطب 201
قرآن کاطرز استدلال 202
قرآنی استدلال کی اساس 204
بعض ضروری تنبیات 207
اس حصہ میں مباحث کی ترتیب 209
توحید کےعمومی دلائل 211
دلائل آفاق 211
کائنات کاحسن وجمال 211
کائنات کےمختلف اجزا کاباہمی توافق 216
ضد سےضد کاوجود 224
متحدات سےمختلغات کاوجود 226
مظاہرکائنات کی تسخیر 227
کائنات  کی محکم تدبیر 229
ہر نظم اجتماعی کےلیے لازم ہےکمیت غیر منقسم ہو 232
حق باطل کی آویز ش اورحق  کاغلبہ 234
اشارات 238
توحید کےدلائل انفس 243
عہد فطرت 244
عل ویقین کی فطر ی طلب 251
فطرت انسانی کاغلو 254
انسان کاضعف وافتقار 260
توحید کےخصوصی دلائل 265
دلائل بلحاظ مسلمات  مخاطب 265
شرکاء کےلے کوئی دلیل نہیں ہے 266
لواز م سےاستدلال 270
دلیل عدل 288
اہل کتاب اورمنافقین 290
پچھلے مباحث کاخلاصہ 294
توحید کےاثرات 297
توحید کی اہمیت دین میں 306

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
5.9 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam اصول تفسیر تاریخ خطبات و محاضرات اور دروس مفسرین

حمیدالدین فراہی اور جمہور کے اصول تفسیر تحقیقی وتقابلی مطالعہ(پی ایچ ڈی مقالہ)

حمیدالدین فراہی اور جمہور کے اصول تفسیر تحقیقی وتقابلی مطالعہ(پی ایچ ڈی مقالہ)

 

مصنف : ڈاکٹر حافظ انس نضر مدنی

 

صفحات: 593

 

قرآنِ مجید وہ عظیم کتاب ہے ،جسے اللہ تعالیٰ نے انسانیت کی رُشد و ہدایت کیلئے نازل فرمایا ہے۔ نبی کریم ﷺ  ، صحابہ کرام ؓ ، تابعین عظام اور تبع تابعین سے لے کر آج تک ہر دور میں اہل علم مفسّرین اس کی مشکلات کو حل کرتے اور اس کی گتھیوں کوسلجھاتے چلے  آئے ہیں۔ہر دَور میں مفسرین کرام نے خصوصی ذوق اور ماحول کے مطابق اس کی خدمت کی اور تفسیر کے مخصوص مناہج اور اصول اپنے سامنے رکھے۔ پیش نظر”حمید الدین فراہی اور جمہور کے اصول تفسیر” حافظ انس نضر مدنی کا پی ایچ ڈی کے لیے لکھا جانے والا مقالہ ہے۔ محترم حافظ صاحب امتیازی حیثیت میں فاضل مدینہ یونیورسٹی ہونے کے ساتھ ساتھ ’مجلس التحقیق الاسلامی‘اور ’کتاب ونت ڈاٹ کام‘ کے انچارج ہیں۔ موصوف جہاں طلباء جامعہ لاہور الاسلامیہ کو علم کے زیور سے آراستہ کر رہے ہیں وہیں متنوع علمی و تحقیقی کاموں میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوا رہے ہیں۔ آپ کی خداد صلاحیتوں کا ایک اظہار زیر نظر مقالہ ہے۔ مولانا حمید الدین فراہی ؒ کے  منہجِ تفسیر اور مولانا امین احسن اصلاحی ؒ کی تفسیر ’تدبر قرآن ‘ پر تو کسی نہ کسی حوالے  سے تحقیقی کام موجود ہے  لیکن مولانا فراہی ؒ کے  اُصول تفسیر اور جمہور کے  اُصول تفسیر میں  مناسبت اور تقابل پر مرتب تحقيقی کام پہلی بارسامنے آیا ہے۔محترم حافظ صاحب نے مولانا فراہی ؒ کے  اُصول تفسیر اور تفسیر پر موجود کام کا سلف صالحین کے  مناہجِ تفسیر سے اس انداز میں تقابلی جائزہ پیش کیاہےکہ واضح ہو سکے  کہ کیا یہ ایک شے  کے  دو رُخ ہیں یا ان میں  آپس میں  جوہری اختلاف اور فرق ہے۔

 

عناوین

صفحہ نمبر

مقدمہ

مولانا حمید الدین فراہیؒ

1

تعارُف ومختصر حالاتِ زندگی

2

اَساتذہ وتلامذہ اور علمی وملی خدمات

35

مصنفات ومؤلفات

71

جمہور کے اُصولِ تفسیر

88

اُصول تفسیر کی تاریخ وتدوین

89

تفسیر بالماثور

111

تفسیر بالرّائے

161

’نظمِ قرآن‘ کے فراہی نقطۂ نظر کا تجزیاتی مطالعہ

193

مولانا فراہیؒ اور ’نظم قرآن

194

’نظم قرآن‘ سے  استفادہ کی حدود

215

قرآنی فصاحت وبلاغت اور تصورِ حکمت

229

’تفسیر نظام القرآن‘ میں نظم کے تفرّدات

243

استفادہ علومِ عربیہ میں  اِفراط وتفریط اور راہِ اعتدال

267

مولانا فراہیؒ اور اَدب جاہلی

268

علومِ عربیہ  سے  استدلال کا دائرہ کار

290

قواعدِ عربیہ اور فہمِ قرآن میں محاورۂ صحابہ

306

’تفسیر نظام القرآن‘ میں اَدبِ جاہلی کے تفرّدات

317

تفسیر قرآن بذریعہ قرآن  ….. تحقیقی جائزہ

339

مولانا فراہیؒ اور تفسیر قرآن بذریعہ قرآن

340

’تفسیر قرآن بذریعہ قرآن‘  میں سنّت کی حیثیت

357

قرآنِ مجید کی دلالت کی قطعیت؟

385

’تفسیر نظام القرآن‘ میں اس حوالے سے تفرّدات

406

تفسیر قرآن کے خبری مآخذ

423

مولانا فراہی اور تفسیر قرآن کے فرعی  مآخذ

424

تفسیر قرآن اور اَحادیثِ مبارکہ

470

خاتمۂ بحث

530

جامع فہارس

536

فہرست آیات

537

فہرست احادیث

555

فہرست اعلام

559

فہرست اماکن

570

فہرست مصطلحات

573

فہرست اشعار

578

مصادر ومراجع

582

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
17 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam دعوت و تبلیغ

دعوت دین کی اہمیت اور تقاضے

دعوت دین کی اہمیت اور تقاضے

 

مصنف : امین احسن اصلاحی

 

صفحات: 52

 

اللہ تعالیٰ  نے انسان  کی فطرت  کے اندر نیکی اور بدی کے پہچاننے کی قابلیت اور نیکی  کے اختیار کرنے  اور بدی  سے  بچنے کی خواہش وودیعت کردی ہے ۔تمام انبیاء کرام نے   دعوت کے ذریعے پیغام الٰہی کو  لوگوں  تک پہنچایا او ران کو شیطان  سے  بچنے اور رحمنٰ  کے راستے   پر چلنے کی دعوت  دی ۔دعوت دین اور احکام شرعیہ کی تعلیم دینا شیوہ پیغمبری ہے ۔تمام انبیاء و رسل کی بنیادی ذمہ داری تبلیغ دین اور دعوت وابلاغ ہی رہی ہے،امت مسلمہ کو دیگر امم سے فوقیت بھی اسی فریضہ دعوت کی وجہ  سے  ہے اور دعوت دین ایک اہم دینی فریضہ ہے ،جو اہل اسلام  کی اصلاح ، استحکام دین اور دوام شریعت کا مؤثر ذریعہ ہے۔لہذا ہر مسلمان پر لازم ہے کہ اسے شریعت کا جتنا علم ہو ،شرعی احکام سے جتنی واقفیت ہو اوردین کے جس قدر احکام سے آگاہی ہو وہ  دوسر وں تک پہنچائے۔علماو فضلا اور واعظین و مبلغین   پر مزید ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ فریضہ دعوت کو دینی وشرعی ذمہ داری سمجھیں اور دعوت دین کے کام کو مزید عمدہ طریقے سے سرانجام دیں۔دین کا پیغام حق ہر فرد تک پہنچانے  کے لیے ضروری ہے کہ دعوت کے کام کو متحرک کیا جائے، منہج  دعوت  اور اصول  دعوت  کے حوالے  سے   اہل  علم  عربی اور زبان  میں کئی کتب تصنیف کی  ہیں  ۔ان میں سے ڈاکٹر فضل الٰہی ﷾ کی  کتب قابل ذکر ہیں  جوکہ آسان فہم  او ردعوت دین کا ذوق ،شوق اور دعوتی بیداری پیدا کرنے میں ممد و معاون ہیں۔زیر نظر کتاب  ’’ دعوت دین کی اہمیت اور تقاضے ‘‘ مولانا  امین احسن اصلاحی  کی تصنیف ہے  جس  میں انہوں نے  دعو ت کی اہمیت وضرورت کو  آسا ن فہم انداز میں  بیان کیا ہے  ۔ اللہ ان کی  اس  کاوش کو  قبول فرمائے او راسے عوام الناس کے   نفع بخش بنائے (آمین)

 

عناوین صفحہ نمبر
پیش لفظ 5
تبلیغ کس لیے 7
انبیاء کی ضرورت 7
انبیاء کے باب میں قانون الہٰی 8
خاتم الانبیاء کی بعثت 9
آنحضرت ﷺ کی بعثت کے دو پہلو 10
دین کی حفاظت کے لیے دو خاص انتظام 11
تبلیغ بحیثیت ایک فریضہ رسالت 13
تبلیغ کی شرائط 14
پہلی تا چھٹی شرط 14
مسلمانوں کا فرض منصبی 21
داعی حق کی ذمہ داری 23
انبیائے کرام کا طریق تربیت 32
اجتماعی تربیت کی پہلی اصل 33
خلاصہ بحث 48

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
1.8 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam زبان نحو و صرف

اسباق النحو (حمید الدین فراہی)

اسباق النحو (حمید الدین فراہی)

 

مصنف : حمید الدین فراہی

 

صفحات: 190

 

عربی زبان ایک زندہ وپائندہ زبان ہے۔ اس میں ہرزمانے کے ساتھ چلنے کی صلاحیت موجود ہے۔ اس زبان کو سمجھنے اور بولنے والے دنیا کے ہر خطے میں موجودہیں ۔عربی زبان وادب کو سیکھنا اور سکھانا ایک دینی وانسانی ضرورت ہے کیوں کہ قرآن کریم جوانسانیت کے نام اللہ تعالیٰ کا آخری پیغام ہے اس کی زبان بھی عربی ہے۔ عربی زبان معاش ہی کی نہیں بلکہ معاد کی بھی زبان ہے۔اس زبان کی نشر واشاعت ہمارا مذہبی فریضہ ہے۔ اس کی ترویج واشاعت میں مدارس عربیہ اور عصری جامعات کا اہم رول ہے۔ عرب ہند تعلقات بہت قدیم ہیں اور عربی زبان کی چھاپ یہاں کی زبانوں پر بہت زیادہ ہے۔ہندوستان کا عربی زبان وادب سے ہمیشہ تعلق رہا ہے۔ یہاں عربی میں بڑی اہم کتابیں لکھی گئیں اور مدارس اسلامیہ نے اس کی تعلیم وتعلم کا بطور خاص اہتمام کیا۔ اور متعدد اہل علم نے اس پر قلم آزمائی کی ہے۔ زیر تبصرہ کتاب “اسباق النحو” محترم مولانا حمید الدین فراہی صاحب﷫ کی تصنیف ہے، جس کی ترتیب وتدوین محترم مولانا خالد مسعود صاحب نے فرمائی ہے جبکہ پیش لفظ مولانا امین احسن اصلاحی صاحب ﷫کے رقم کردہ ہیں۔ اللہ تعالی سے دعا ہے کہ وہ مولف ومرتب کی اس خدمت کو اپنی بارگاہ میں قبول فرمائے اور ان کے میزان حسنات میں اضافہ فرمائے۔ آمین

 

عناوین صفحہ نمبر
پیش لفظ 7
دیباچہ 9
عربی زبان کی ابتدائی باتیں 11
علم نحو 13
اسم کابیان
اسم کی قسمیں 17
اعراب کی مختلف صورتیں 20
معربات اصلیہ 22
مبتداوخبر 23
مجرور بواسطہ حرف جر 24
مضاف الیہ 26
مفعول بہ ،حال 28
ظرف 29
علۃ 30
تمیز مفعول مطلق 31
توابع ۔صفت 33
عطف ،تاکید 34
بدل ،عطف بیان 35
مبنیات ،ضمائر 36
اشارات 39
موصولات 40
استفہامات 42
ظروف ،مخففات 44
مرکبات 44
معربات مشکلہ 45
استثنائی صورتیں غیر منصرف 50
مبدل الاعراب 53
اعداد 55
اوزان جمع مکسر 57
فعل کابیان
مادہ اوروزن 61
تقسیم فعل 63
مشتقات فعلیہ 64
جملہ فعلیہ کے قواعد 65
ابواب ثلاثی مجرد 67
ماضی 68
مضارع 71
امر 79
ذوالفعل 81
اسم الفعل 81
صفت 84
مفصل ،مبالغہ 84
ظرف ،آلہ 85
ابواب ثلاثی مزید 87
مبدلات فعل 95
مثال 98
اجوف 99
ناقص 103
لفیف 108
مضاعف 110
مبدلات ثلاثی مزید 112
خاصیات ابواب 119
افعال ناقصہ 123
افعال مقابہ ،افعال مدح وذم 125
افعال تعجب ۔اسماءالافعال 126
حرف کابیان
حروف اضافت 131
حروف مشبہ بفعل 136
حروف عطف 138
حروف نفی ،مستقبل 141
حروف ندا،حروف ایجاب وتصدیق 142
حروف استثناء حروف مصدر 143
حروف تخصیض ،حروف شرط 144
حروف ردع ،حروف تفسیر 145
مشقوں کاحل
مشق نمبر 1 147
مشق نمبر 2 118
مشق نمبر 3 149
مشق نمبر 4 151
مشق نمبر 5 153
مشق نمبر 6 154
مشق نمبر 7 155
مشق نمبر 8 157
مشق نمبر 9 158
مشق نمبر 10 159
مشق نمبر 11 161
مشق نمبر 12 163
مشق نمبر 13 164
مشق نمبر 14 165
مشق نمبر 15 167
مشق نمبر 16 269
مشق نمبر 17 171
مشق نمبر 18 172
مشق نمبر 19 174
مشق نمبر 20 175
مشق نمبر 21 176
مشق نمبر 22 178
مشق نمبر 23 181
مشق نمبر 24 182
مشق نمبر 25 183
مشق نمبر 26 184
مشق نمبر 27 186
مشق نمبر 28 187
مشق نمبر 29 186

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
5 MB ڈاؤن لوڈ سائز