Categories
Islam اسلام توحیدوشرک سلفی علماء

شرک کا مرتکب کافر ہے

شرک کا مرتکب کافر ہے

 

مصنف : شیخ الاسلام محمد بن عبد الوہاب

 

صفحات: 42

 

شیخ الاسلام ،مجدد العصر محمد بن عبد الوہاب ﷫ کی شخصیت کسی تعارف کی محتاج نہیں ہے۔آپ ایک متبحر عالم دین،قرآن وحدیث اور متعدد علوم وفنون میں یگانہ روز گار تھے۔آپ نے اپنی ذہانت وفطانت اور دینی علوم پر استدراک کے باعث اپنے زمانے کے بڑے بڑے علماء دین کو متاثر کیا اور انہیں اپنا ہم خیال بنایا۔آپ نے قرآن وسنت کی توضیحات کے ساتھ ساتھ شرک وبدعات کے خلاف علمی وعملی دونوں میدانوں میں زبر دست جہاد کیا۔ آپ نے متعدد کتب تصنیف فرمائیں اور شرک وبدعات کے خلاف میدان کارزار میں کارہائے نمایاں سر انجام دئیے۔آپ نے خالصتا کتاب وسنت کی دعوت کو عام کیا اور لوگوں کو شرک وبدعات سے دور کرنے کے لئے کتب لکھیں۔آپ کی من جملہ کتب میں سے ایک زیر تبصرہ یہ کتاب (شرک کا مرتکب کافر ہے) ہے۔جو آپ کی عربی کتاب (کشف الشبہات فی التوحید) کا اردو ترجمہ ہے۔ترجمہ کرنے کی سعادت محترم ابو بکر صدیق سلفی نے حاصل کی ہے۔مسائل توحید پر یہ آپ کی یہ ایک بہترین کتاب ہے۔ان کتابوں کی تدوین وتالیف کا عظیم مقصد شیخ الاسلام محمد بن عبد الوہاب ﷫ کے پیش نظر یہ تھا کہ دنیائے اسلام کو اسلام کی اصل تعلیمات سے روشناس کروایا جائے ،اور وہ عقائد ورسم ورواج،جن کی تنسیخ کے متعلق قرآن وسنت اور آثار صحابہ سے ثبوت فراہم ہوتا ہے ،دلائل وبراہین سے قطعیت کے ساتھ ان کو رد کر دیا جائے۔اور صرف ان واضح احکامات پر ایمان وعمل کی اساس قائم کی جائے جو مسلمانوں کے لئے فلاح و خیر اور نجات اخروی کا باعث ہوں۔چنانچہ انہوں نے اپنی کتب میں ان تمام مسائل پر مدلل گفتگو کی ہے اور کسی قسم کے تعصب وعناد کے بغیر بہت ہی سادہ ودلنشیں پیرائے میں قرآن وحدیث کا نچوڑ نکال دیا ہے۔یہی وجہ ہے کہ اہل حق ،جو گروہی مفاد اور مذہبی تعصب نہیں رکھتے ہیں ،ان کتب کے پیش کردہ حقائق سے استفادہ کر کے اصل اسلامی تعلیمات یعنی کتاب وسنت کا راستہ اختیار کرتے رہے ہیں ،اور ان شاء اللہ آئندہ بھی کرتے رہیں گے۔اللہ تعالی سے دعا ہے کہ وہ مولف موصوف کی ان تمام خدمات کو اپنی بارگاہ میں قبول فرمائے اور ان کے میزان حسنات میں اضافہ فرمائے۔آمین

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
1.5 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam اسلام زبان سیرت علماء

شیخ محمد بن عبد الوہاب کی سیرت ، دعوت اور اثرات

شیخ محمد بن عبد الوہاب کی سیرت ، دعوت اور اثرات

 

مصنف : جمال الدین زر ابوزو

 

صفحات: 381

 

شیخ الاسلام ،مجدد العصر محمد بن عبد الوہاب ( 1703 – 1792 م) کی شخصیت کسی تعارف کی محتاج نہیں ہے۔آپ ایک متبحر عالم دین،قرآن وحدیث اور متعدد علوم وفنون میں یگانہ روز گار تھے۔آپ نے اپنی ذہانت وفطانت اور دینی علوم پر استدراک کے باعث اپنے زمانے کے بڑے بڑے علماء دین کو متاثر کیا اور انہیں اپنا ہم خیال بنایا۔آپ نے قرآن وسنت کی توضیحات کے ساتھ ساتھ شرک وبدعات کے خلاف علمی وعملی دونوں میدانوں میں زبر دست جہاد کیا۔آپ متعدد کتب کے مصنف ہیں۔جن میں سے ایک کتاب’’کتاب التوحید‘‘ بڑی معر وف ہے۔شیخ موصوف کی  حیات وخدمات سے متعلق مختلف اہل علم نے عربی اردو زبان میں متعدد   کتب تصنیف کی ہیں ۔زیر نظر کتاب’’ شیخ  محمد بن عبد الوہاب  کی سیرت ،دعوت اور اثرات‘‘جمال الدین زرا بوزو کی عربی  کتاب  محمد بن عبد الوهاب حیاته تعالیمه وتأثيره کا اردو ترجمہ ہے ۔اردو ترجمہ کا فریضہ  اسد اللہ عثمان المدنی صاحب نے انجام دیا ہے۔ مصنف کی یہ کتاب ان کی اصل کتاب’’ امام محمد بن عبد الوہاب کی سیرت، دعوت اور اثرات‘‘ کااختصار شدہ نسخہ ہے۔اصل کتاب میں مذکور بہت ساری تفصیلات  ترک کرنےکے علاوہ طویل بحثوں کو مختصر کردیا گیا ہے اور شیخ محمد بن عبد الوہاب سےمتعلق انگریزی مواد زیر مطالعہ کتاب سے یکسر حذف کر کے تمام موضوعات کو مختصر اور جامع انداز میں پیش کرتے ہوئے شیخ محمد بن عبدالوہاب رحمہ اللہ کی سوانح حیات اور تعلیمات کو منصفانہ طور پر صحیح انداز میں مستند مصادر ومراجع سے اخذ کر کے پیش کرنے کی  کوشش کی  گئی ہے۔اللہ  تعالیٰ شیخ  محمد بن عبد الوہاب کی مرقد پر اپنی رحمت کی برکھا برسائے اور انہیں  جنت الفردوس  میں اعلی  ٰ  وارفع مقام عطا فرمائے ۔آمین 

 

عناوین صفحہ نمبر
نبذۃ مختصرۃ عن الکتاب 5
تعارف 6
شیخ محمد بن عبدالوہاب رحمہ اللہ کاخاندان اورابتدائی زندگی 14
خارجی دشمن 67
شیخ محمدبن عبدالوہاب کی وفات 84
شیخ محمد بن عبدالوہاب کی شخصیت 88
شیخ محمد کی کوششوں کےنتائج 101
3۔شیخ کی اہم اصلاحی تعلیمات 105
شیخ کےدورمیں اسلام 105
شیخ محمد بن عبدالوہاب اورعقیدہ 119
شیخ کاطریقہ کار 119
شیخ محمد اورمسئلہ مسلمانیت 134
شیخ محمد بن عبدالوہاب اورفقہ اسلامی،اجتہاداوراندھ تقلید 141
شیخ محمد بن عبدالوہاب اوردعوت امربالمعروف ونہی عن المنکر 152
اول ترین مسائل 156
شیخ محمد اورامربالمعروف ونہی عن المنکر کاعمل انجام دینےوالے کاصفات 158
خلاصہ 166
4۔شیخ محمد کی تاثیراوراثرات ’’وہابی‘‘اور’’وہابیت‘‘کےالفاظ پرایک نوٹ 168
نجدکےباہر شیخ محمد کےاثرات 179
دعوت شیخ محمد کی تاثیر سے متعلق چند تمہیدی باتیں 179
عرب علاقے 193
صحرائے افریقہ 207
برصغیر ہندوپاک 212
جنوب مشرقی ایشیاء 219
خلاصہ 224
5۔شیخ محمد بن عبدالوہاب پرتنقید اورالزامات کاجائزہ 225
1۔یہ الزام کہ شیخ محمد نےنبوت کادعوی کیا 226
2۔یہ الزام کہ شیخ محمد نےرسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی توہین کی 231
لوگوں کودائرہ اسلام سے خارج کرنےاوران سے جنگ کرنےکامسئلہ 236
3۔یہ الزام کہ شیخ محمد نے چند غیر کفریہ باتوں کوکفرقراردیا 243
4۔یہ الزام کہ شیخ محمد نے خلافت عثمانیہ کےخلاف بغاوت کی 255
مسئلہ توسّل اورغیراللہ سے استعانت 259
انہدام مزارات اورزیارت قبورکے مسائل 273
خلاصہ 277
شیخ کی سیرت آج کی دنیا کےلئے سبق 289
نظریاتی اورعملی طورپراپنے عقیدے کی اصلاح سے آغاز کرنےکی اہمیت 294
فسق وجہالت کےانتشار کےباوجودعدم مایوسی 298
ہرایک کےلئے تعلیم کی اہمیت 303
اللہ پرکامل بھروسہ کرتے ہوئے دنیوی اسباب کو اختیار کرنا 312
دعوت کےلئے پُشت پناہی کی ضرورت 318
بنیادی عقائد پرسمجھوتاکرنےسے انکار 325
حوالہ جات 373

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
11.8 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam اسلام تاریخ تاریخ اسلام دعوت و تبلیغ سیرت علماء

شیخ محمد بن عبد الوہاب اور انکی دعوت

شیخ محمد بن عبد الوہاب اور انکی دعوت

 

مصنف : عبد العزیز بن عبد اللہ بن باز

 

صفحات: 42

 

شیخ الاسلام ،مجدد العصر محمد بن عبد الوہاب ﷫( 1703 – 1792 م) کی شخصیت کسی تعارف کی محتاج نہیں ہے۔آپ ایک متبحر عالم دین،قرآن وحدیث اور متعدد علوم وفنون میں یگانہ روز گار تھے۔آپ نے اپنی ذہانت وفطانت اور دینی علوم پر استدراک کے باعث اپنے زمانے کے بڑے بڑے علماء دین کو متاثر کیا اور انہیں اپنا ہم خیال بنایا۔آپ نے قرآن وسنت کی توضیحات کے ساتھ ساتھ شرک وبدعات کے خلاف علمی وعملی دونوں میدانوں میں زبر دست جہاد کیا۔آپ متعدد کتب کے مصنف ہیں۔جن میں سے ایک کتاب (کتاب التوحید) ہے۔مسائل توحید پر یہ آپ کی بہترین کتابوں میں سے ایک ہے،اور سند وقبولیت کے اعتبار سے اس کا درجہ بہت بلند ہے۔ شیخ موصوف کی دعوتی تحریک تاریخ اسلام کی ان تحریکوں میں سے ہے جن کو بہت زیادہ مقبولیت وشہرت حاصل ہوئی ۔اور یہی وجہ ہےکہ دنیائے اسلام کےہرخطہ میں میں ان کے معاندین ومؤیدین بہت کافی تعداد میں موجود ہیں ۔ زیر تبصرہ رسالہ’’ شیخ محمد بن عبدالوہاب﷫ اوران کی دعوت‘‘ شیخ عبد العزیز بن عبداللہ بن باز﷫ کی الجامعۃالاسلامیۃ مدینہ منورہ میں ایک تقریر کا ترجمہ ہے جو انہو ں نےیونیورسٹی کےہال میں علماء وطلبہ کےایک مجمع میں کی تھی اور بعد میں ٹیپ ریکارڈر سے تحریر میں لایاگیا ۔شیخ ابن باز ﷫ نے اپنی اس تقریر میں شیخ الاسلام محمد بن عبدالوہاب کی سوانح حیات اور انکی دعوت کو جامع الفاظ میں پیش کیا ہے۔اس رسالہ پر مدینہ یونیورسٹی کے استاد عطیہ محمد سالم نے جامع تقدیم وتعلیق فرمائی اور اس میں شیخ ابن باز ﷫ کا بھی مختصر تذکرہ وتعارف پیش کیا ہے۔اس اہم رسالہ کاترجمہ مولانا عبد العلیم بستوی نے کیا۔ محدث روپڑی﷫ کےتلمیذ رشید جناب ابو السلام محمد صدیق آف سرگودھا کےقائم کردہ ’’ادارہ احیاء السنۃ ‘‘ نے 1973ء میں اسے شائع کیا۔

 

عناوین صفحہ نمبر
عرض مترجم 3
پیش لفظ 4
شیخ ابن باز 7
پیدائش 8
تعلیم 9
شیخ محمد بن عبد الوہاب 13
شیخ کے سیرت نگار 13
پیدائش اور تعلیم و تربیت 15
ابتداء دعوت اور سازش قتل 17
دعوت سے قبل اہل نجد کی حالت 18
اظہار حق 19
جذبہ ایمان 21
امیر درعیہ کی بیعت 22
مخالفین کی تین قسمیں 27
وفات اور اس کے بعد 29
دعوت حق بسوئے حجاز 32
ترکی اور مصری فوجوں کی یلغار 33
حقیقت دعوت 35
حجاز میں دوبارہ داخلہ 36

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
2.1 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam اسلام تاریخ سیرت علماء فقہ

شیخ محمد بن عبد الوہاب کی تصانیف کا انتخاب

شیخ محمد بن عبد الوہاب کی تصانیف کا انتخاب

 

مصنف : ڈاکٹر عبد العزیز بن عبد الرحمن السعید

 

صفحات: 369

 

شیخ الاسلام ،مجدد العصر محمد بن عبد الوہاب ﷫ کی شخصیت کسی تعارف کی محتاج نہیں ہے۔آپ ایک متبحر عالم دین،قرآن وحدیث اور متعدد علوم وفنون میں یگانہ روز گار تھے۔آپ نے اپنی ذہانت وفطانت اور دینی علوم پر استدراک کے باعث اپنے زمانے کے بڑے بڑے علماء دین کو متاثر کیا اور انہیں اپنا ہم خیال بنایا۔آپ نے قرآن وسنت کی توضیحات کے ساتھ ساتھ شرک وبدعات کے خلاف علمی وعملی دونوں میدانوں میں زبر دست جہاد کیا۔شیخ نے اپنی دعوت پر عقائدکی اصلاح پر سب سے زیادہ زور دیا ہے اور اس سلسلے میں کئی کتب تصنیف کی ہیں ۔شیخ الاسلام محمد بن عبد الوہاب کی تصنیفات کاجائزہ لینے سے معلوم ہوتا ہے کہ انہوں نےاجتہاد او راستنباط کے ہر علم اور فن میں طبع آزمائی کی ہے ۔ آپ نے قرآن کی فضیلت اور قرآنی علوم پر بھی قلم اٹھایا ۔ قرآن کے بعض مقامات کی تفسیر بھی کی اور کسی حد تک اجتہاد کو ترجیح دی ۔شیخ محمد بن عبدالوہاب نے علم فقہ کے ابواب کے مطابق احادیث نبوی کو پانچ جلدوں میں جمع کیا اور فقہ کی کتابوں کا بڑا عمیق مطالعہ کیا اور اس موضوع پر چند کتابیں مرتب کیں۔علم فقہ کی بعض آراء کاتنقیدی جائزہ بھی لیا اور چند مسائل میں اپنا اجتہاد پیش کیا اور بنیادی اصولوں کے بارے میں بھی قلم اٹھایا۔ سیرت ابن ہشام کو مختصر کیا اور اس میں دعوت اور جہاد کے موضوع پر تھوڑا بہت اضافہ کیاا ور زاد المعاد کی تلخیص بھی کی ۔ زیر تبصرہ کتاب شیخ الاسلام محمد بن عبدالوہاب ﷫کی مؤلفات کے انتخاب کا اردو ترجمہ ہے ۔ یہ انتخاب ڈاکٹر عبدالعزیز بن عبد الرحمٰن السعید نے ’’ مختارات من مؤلفات الشیخ محمد بن عبد الوہاب‘‘ کے نام سے مرتب کیا ۔یہ کتاب اپنے اندر بہت سارے موضوعات لیے ہوئے ہے ۔ ان میں قرآن وحدیث، توحید ، سیرت نبوی، حق وصداقت پر مبنی واقعات، تاریخ فقہ اورخطوط ورسائل سے متعلق جامع انتخاب ہے ۔اس انتخاب سے شیخ محمد بن عبد الوہاب کی تعلیمات اور ان کے تبلیغی مقاصد پر گہری روشنی پڑتی ہے ۔اس کتاب کو عربی سے اردو قالب میں ڈھالنے کے فرائض جامعۃ الامام محمد بن سعود الاسلامیہ ،الریاض کے استاد ڈاکٹر سمیر عبدالحمید ابراہیم نے انجام دئیے ہیں ۔

 

عناوین صفحہ نمبر
پیش لفظ ازچانسلر امام محمد بن سعود اسلامک یونیورسٹی
پیش لفظ اس مترجم 6
پیش لفظ از مرتب 8
قرآن کریم کی تفاسیر کاانتخاب
قرآن کی تلاو ت اوراس کےسیکھنے  سکھانے کی فضیلت 11
علماء قرآن کی تعظیم وتکریم 14
قرآن کریم کے سیکھنے سمجھنے اورسننے اوارس کےنہ پڑھنے والوں کےبارے میں 15
قرآن آیت کوتشریح 17
قرآن کی کی آڑ میں گناہ  کرنے والا 18
تفسیر بالرائے آنےوالوں بنانے  کےبارے میں 20
قرآن کو ذریعہ معاش بنانے  کےبارے میں 21
قرآن سے توجہی برتنے والوں کےبارے میں 22
قرآن کےعلاوہ کسی اور ہدایت چاہنے والے کےبارےمیں 22
قرآن میں غلو کرنے کابیان 24
ہدایت کی کھوج میں لگنے رہنے والوں کےبارے میں 25
قرآن مجید کےبارے میں بغیر علم کےمحض اپنی عقل سےکلام کرنے والوں کےبارے میں 26
قرآن کےسلسلہ میں کج بحشی کرنے کابیان 27
قرآن میں لفظ یامعنوں کےاختلاف کابیان
جب تمہارے درمیان اختلاف ہوتو اٹھ کٹھرے ہوں 28
ایک آیت کی تشریح 29
خوش الحانی سےقرآن پڑھنے کابیان 30
سورہ الفاتحہ 31
سورہ بقرہ کی بعض آیات کی تشریح 41
سورہ آل عمران  کی بعض  آیات کی تفسیر 48
سورہ طہ کی بعض آیات کی تفسیر 51
کچھ احادیث نبوی کےبارے میں 57
کتاب الصلوۃ
شیخ محمد بن عبدالوہاب اورعقیدہ 62
کتا ت التوحید
توحید کی فضیلت اوریہ کہ توحید گناہوں  کومٹا دیتی ہے 68
حقیقت  کی توحید اختیار کرنےوالا حسباب کے  بغیر جنت میں داخل ہوجائے گا 70
شرک سے ہوشیار رہنا ضروری ہے 72
بعض شبہا ت کاازالہ 75
 دین اسلام کے تین اصول 103
اللہ کی عبادت 118
چھ عظیم اورمفید اصول
سیرت نبوی
سیرت نبوی کےچھ اہم پہلوؤں کی تشریح 127
حلف الفضول کاواقعہ 155
مرتدین سےجنگ 169
بنی عبید القداح کاواقعہ 177
تاتاریوں کاواقعہ 179
شیخ محمد بن عبدالوہاب اورفقہ 181
قواعد فقہ اوراس کے اصول
پانی کے بارے میں 184
مسائل کاطریقے 189
اجتہاد اور اس سے متعلق امور 194
نماز کےلئے جانے کےآداب 230
نماز پڑھنے کاطریقہ 231
نفل نمازیں 245
نماز باجماعت 252
وقف  کے بارےمین 257
شیخ محمد بن عبدالوہاب کےرسائل کاانتخاب
اہل قصیم کےاستسقاء پرشیخ کے اپنے عقیدے کی وضاحت 268
شام کےشیخ خاتمل آل مزید کےنام شیخ محمد بن عبدالوہاب کاخط 274
منجانب محمد بن عبدالوہاب بنام عبدالرحمن بن عبداللہ 277
شہرمکہ کےتمام علماء کےنام شیخ کامکتوب 281
مدینہ کے ایک جید عالم کےنام شیخ کامکتوب 284
ابن صباح کےنام 291
عبداللہ بن سحیم کےنام 296
محمد بن عبدالوہاب کی جانب سےعبداللہ بن محمد ﷾ کےنام 313
شیخ محمد بن عبدلوہاب  کےخطبات کاانتخاب 232
شیخ محمد بن عبدالوہاب کاپہلا خطبہ
شیخ کاایک اورخطبہ 335
شیخ محمدبن عبدالوہاب کاایک خطبہ 337
ایک اورخطبہ 339
خطبہ رمضان 341
آخر رمضان میں خطبہ 343
خطبہ عیدالفطر 246
آخری خطبہ 349
خطبہ ترغیب حج 352
خطبہ عیدالاضحی 354
ایک اورخطبہ 358
دسویں ذی الحجہ کاخطبہ 360
اختتام 362

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
7.8 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam سیرت علماء

سیرت شیخ محمد بن عبد الوہاب

سیرت شیخ محمد بن عبد الوہاب

 

مصنف : عبد العزیز بن عبد اللہ بن باز

 

صفحات: 48

 

شیخ الاسلام ،مجدد العصر محمد بن عبد الوہاب ﷫ کی شخصیت کسی تعارف کی محتاج نہیں ہے۔آپ ایک متبحر عالم دین،قرآن وحدیث اور متعدد علوم وفنون میں یگانہ روز گار تھے۔آپ نے اپنی ذہانت وفطانت اور دینی علوم پر استدراک کے باعث اپنے زمانے کے بڑے بڑے علماء دین کو متاثر کیا اور انہیں اپنا ہم خیال بنایا۔آپ نے قرآن وسنت کی توضیحات کے ساتھ ساتھ شرک وبدعات کے خلاف علمی وعملی دونوں میدانوں میں زبر دست جہاد کیا۔آپ نے متعدد کتب تصنیف فرمائیں اور شرک وبدعات کے خلاف میدان کارزار میں کارہائے نمایاں سر انجام دئیے۔آپ نے خالصتا کتاب وسنت کی دعوت کو عام کیا اور لوگوں کو شرک وبدعات سے دور کرنے کے لئے کتب لکھیں۔زیر تبصرہ کتاب(سیرت شیخ محمد بن عبد الوہاب﷫) سعودی عرب کے مفتی اعظم اور معروف عالم دین فضیلۃ الشیخ عبد العزیز بن عبد اللہ بن باز ﷫کی ایک تقریر پر مشتمل ہے،جو انہوں نے مدینہ یونیورسٹی کے طلباء سے خطاب کرتے ہوئے ارشاد فرمائی تھی۔شیخ ابن باز ﷫اس وقت مدینہ یونیورسٹی کے وائس چانسلر تھے۔اس خطاب میں انہوں نے شیخ الاسلام ،مجدد العصر محمد بن عبد الوہاب ﷫ کی سیرت اور حالات زندگی کو مختصر مگر جامع انداز میں پیش کیا ہے،اور ان کی دینی واسلامی خدمات پر روشنی ڈالی۔جسے بعد میں کتابچے میں شکل میں طبع کر دیا گیا۔اس کا اردو ترجمہ کرنے کی سعادت محترم شیخ عبد الحلیم بستوی نے حاصل کی ہے۔اللہ تعالی سے دعا ہے کہ وہ مولف﷫ اور شیخ الاسلام ،مجدد العصر محمد بن عبد الوہاب﷫ دونوں اہل علم کی قبروں کو منور فرمائے اور انہیں جنت الفردوس میں اعلی مقام عطا فرمائے۔آمین

 

عناوین صفحہ نمبر
عرض ناشر 3
دعوت و سیرت 5
شیخ کے سیرت نگار 6
پیدائش اور تعلیم و تربیت 8
ابتداء دعوت اور سازش قتل 11
دعوت سے پہلے اہل نجد کی حالت 14
اظہار حق 15
جذبہ ایمان 19
دعوت کا نیا مرکز درعیہ 24
دعوت کے مخالفین 27
وفات اور اس کے بعد 34
دعوت حق بسوئے حجاز 38
ترکی اور مصری فوجوں کی یلغار 40
حقیقت دعوت 43
حجاز میں دوبارہ داخلہ 45

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
7.3 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam اسلام فارسی کتب حدیث محدثین

صحیح بخاری کے رواۃ صحابہ ؓ کا دلنشین تذکرہ

صحیح بخاری کے رواۃ صحابہ ؓ کا دلنشین تذکرہ

 

مصنف : محمد عظیم حاصلپوری

 

صفحات: 787

 

صحابہ نام ہے ان نفوس قدسیہ کا جنہوں نے محبوب ومصدوق رسول ﷺ کے روئے مبارک کو دیکھا اور اس خیر القرون کی تجلیات ِایمانی کو اپنے ایمان وعمل میں پوری طرح سمونے کی کوشش کی ۔ صحابی کا مطلب ہے دوست یاساتھی شرعی اصطلاح میں صحابی سے مراد رسول اکرم ﷺکا وہ ساتھی ہے جو آ پ پر ایمان لایا،آپ ﷺ کی زیارت کی اور ایمان کی حالت میں دنیا سے رخصت ہوا ۔ صحابی کالفظ رسول اللہﷺ کے ساتھیوں کے ساتھ کے خاص ہے لہذاب یہ لفظ کوئی دوسراا شخص اپنے ساتھیوں کےلیے استعمال نہیں کرسکتا۔ اسی طرح سیدات صحابیات وہ عظیم خواتین ہیں جنہوں نے نبی کریم ﷺ کودیکھا اور ان پر ایمان لائیں اور ایمان کی حالت میں دنیا سے رخصت ہوئیں۔انبیاء کرام﷩ کے بعد صحابہ کرام کی مقدس جماعت تمام مخلوق سے افضل اور اعلیٰ ہے یہ عظمت اور فضیلت صرف صحابہ کرام کو ہی حاصل ہے کہ اللہ نے انہیں دنیا میں ہی مغفرت،جنت اور اپنی رضا کی ضمانت دی ہے بہت سی قرآنی آیات اور احادیث اس پر شاہد ہیں۔صحابہ کرام وصحابیات سے محبت اور نبی کریم ﷺ نے احادیث مبارکہ میں جوان کی افضلیت بیان کی ہے ان کو تسلیم کرنا ایمان کاحصہ ہے ۔بصورت دیگرایما ن ناقص ہے ۔ صحابہ کرام کے ایمان ووفا کا انداز اللہ کو اس قدر پسند آیا کہ اسے بعد میں آنے والے ہر ایمان لانے والے کے لیے کسوٹی قرار دے دیا۔یو ں تو حیطہ اسلام میں آنے کے بعد صحابہ کرام کی زندگی کاہر گوشہ تاب ناک ہے لیکن بعض پہلو اس قدر درخشاں ،منفرد اور ایمان افروز ہیں کہ ان کو پڑہنے اور سننے والا دنیا کا کوئی بھی شخص متاثر ہوئے بغیر نہیں رہ سکتا۔ صحابہ کرام وصحابیات ؓن کےایمان افروز تذکرے سوانح حیا ت کے حوالے سے ائمہ محدثین او راہل علم کئی کتب تصنیف کی ہیں۔ زیر تبصرہ کتاب’’ صحیح بخاری کے رواۃ صحابہ کا دلنشین تذکرہ ‘‘ مولانا محمد عظیم حاصلپوری ﷾ (مصنف کتب کثیرہ ) کی ایک منفرد کاوش ہے ۔اس کتاب میں فاضل مصنف نے ہرصحابی کےنام ونسب او رکنیت ولقب کے ساتھ ساتھ ان کے قبول اسلام کی داستاتوں کو تحریرکیا ہے ، ہرصحابی کی حتی الوسع مرویات کی تعداد ،ہرصحابی وصحابیہ کے تذکرے کے آخر میں ان سے مروی ایک حدیث صحیح بخاری سے بطور نمونہ باترجمہ درج کردی ہے ،کتاب کے آخر میں صحابہ کرام کے اسمائے گرامی تحریر کردیے ہیں جو اپنی کنیت سے مشہور ہیں ۔ نیز فاضل مصنف نے شروع میں امام بخاری وصحیح بخاری کے متعلق ضروری اور قیمتی معلوماات درج کردی ہیں ۔فاضل مصنف نے تقریباً یکصد کتب مصادر سے ان صحابہ کرام کے واقعات حیات کشید کر کے درج کیے ہیں کہ جن کی احادیث کو امام بخاری﷫ نے صحیح البخاری میں درج کیا ہے ۔اس کتاب میں ہر صحابی کے نام ونسب اور کنیت ولقب کی تحقیق کی گئی ہے ،ان کے قبول اسلام کی داستانوں کو تحریر کیا گیا ہے ۔ان کی ذہانت ، عظمت علمیہ، ایثار نفسی ، جر أت ، زہد وروع اور شرافت ودیانت کے دلچسپ اور قابل رشک واقعاتِ حیات کو احاطۂ تحریر میں لایا گیا ہے ۔اپنے موضوع میں یہ کتاب صحابہ کرام کے فضائل ومناقب پر منفرد کاوش ہے ۔ مفتی جماعت شیخ الحدیث حافظ عبدالستار حماد ﷾ کی اس کتاب پر نظر ثانی سے کتاب کی افادیت دوچند ہوگئی ہے اللہ تعالیٰ فاضل مصنف کی تمام تحقیقی وتصنیف ،صحافتی ،تدریسی اور تبلیغی خدمات کو شرف قبولیت سے نوازے ۔(آمین)

 

عناوین صفحہ نمبر
عرض مولف 13
کتاب اورصاحب کتاب 18
تقدیم 24
امام بخاری اورصحیح بخاری 32
مرویات صحابہ ﷢ 38
سیدنا ابوہریرہ ﷜ 45
سیدنا ابوموسیٰ اشعری ﷜ 64
سیدناانس بن مالک ﷜ ﷜ 70
سیدنا ابوسعید خدری ﷜ 76
سیدنا ابوذرغفاری﷜ 92
سیدنا ابو مسعود انصاری ﷜ 92
سیدنا ابو اقدلیثی ﷜ 96
سیدنا ابوبکر ۃ ﷜ 100
سیدہ اسماء بنت ابوبکر ؓ 103
سیدہ ام سلمہ ؓ 110
سیدنا اسامہ بن زید ﷜ 122
سیدنا ابوایوب انصاری ﷜ 127
حضرت ابوقتادہ السلمی ﷜ 139
سیدہ ام عطیۃ الانصاریہ ؓ 142
حضرت ابوجحیفہ ﷜ 145
سیدہ ام قیس بنت محصن ؓ 146
سیدہ ام الدرد اءؓ 149
سیدہ ام ہانی ؓ 153
سیدنا ابی بن کعب ﷜ 157
سیدنا ابو برزہ اسلمی ﷜ 161
ابوامامہ انصاری ﷜ 163
سیدنا ابوحمید ساعدی ﷜ 167
سیدنا احنف بن قیس تمیمی ﷜ 169
سیدہ ام الفضل ؓ 172
سیدنا ابودرداء ﷜ 177
سیدنا ابوامامہ الباہلی ﷜ 182
سیدہ ام کلثوم بنت عقبہ ؓ 186
سیدہ ام حرام بنت ملحان ؓ 189
سیدنا ابوبشیر ﷜ 194
سیدہ ام خالد بن خالد ؓ 195
سیدنا ابوطلحہ انصاری ﷜ 197
سیدہ ام سلیم ؓ 204
سیدہ ام رومان ؓ 214
سیدنا ابواسید ساعدی ﷜ 218
سیدنا اسیدبن حضیر ﷜ 220
ابوسعید بن معلی الانصاری ﷜ 225
سیدہ ام حبیبہ ؓ 227
سیدنا ابوثعلبہ خشنی ﷜ 234
سیدناابو شریح ﷜ 237
سیدنا ابو رافع ﷜ 240
سیدہ ام علاء انصاریہ ؓ 245
سیدنا ابو بردہ بن نیار﷜ 248
سیدنا براء بن عازب ﷜ 250
سیدنا ثابت بن ضحاک انصاری خزرجی ﷜ 255
سیدناجابر بن عبداللہ ﷜ 257
سیدنا جریر بن عبداللہ 4 266
سیدنا جبیربن مطعم بن عدی ﷜ 272
سیدنا جندب بن عبداللہ بن سفیان ؓ 276
سیدہ جویریہ ؓ 277
سیدنا حربن قیس فزاری ﷜ 283
سیدنا حذیفہ بن یمان العبسی ﷜ 287
سیدنا حفصہ بنت عمر ؓ 293
سیدنا حارثہ بن وہب خزاعی ﷺ 298
حضرت حکیم بن حزام بن خویلد ﷜ 299
سیدناحسین بن علی ؓ 302
سیدنا خباب بن ارت ﷜ 306
سیدہ خنساء بنت خدام انصاریہ ؓ 312
حضرت خالد بن ولید ﷜ 313
سیدنا رافع بن خدیج ﷜ 317
سیدنا رفاعہ بن رافع ؓ 320
سیدہ ربیع بنت معوذ ؓ 323
سیدنا زیدبن خالد جہنی ﷜ 326
سیدنا زید بن ارقم ﷜ 329
سیدنا زید بن ثابت ﷜ 333
سیدہ زینب بنت ابی معاویہ ؓ 341
سیدنا زبیر بن عوا م﷜ 346
حضرت زینب بنت حجش ؓ 352
سیدنا سعد بن ابی وقاص ﷜ 363
سیدنا سلمہ بن الاکوع ﷜ 370
سیدنا سائب بن یزید ﷜ 375
سیدنا سوید بن نعمان ﷜ 377
سیدنا سہل بن سعد ﷜ 378
سیدنا سمرہ بن جندب ﷜ 381
سیدنا سلمان فارسی ﷜ 384
حضرت سفیان بن ابی زہیرازدی﷜ 396
سیدنا سلیمان بن صروخزاعی ﷜ 398
سیدنا سراقہ بن مالک بن جعشم ﷜ 402
سیدنا سہل بن ابی حثمہ ﷜ 408
سیدنا سعید بن زید ﷜ 410

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
12 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam اخلاق و آداب اسلام بدعت تاریخ سیرت شراب نوشی فقہاء قصص و واقعات

سچے واقعات اور ہنسی مزاح کے اسلامی آداب

سچے واقعات اور ہنسی مزاح کے اسلامی آداب

 

مصنف : ابو عمار محمود المصری

 

صفحات: 518

واقعات جہاں انسان کے لیے خاصی دلچسپی کا سامان ہوتے ہیں وہیں یہ انسان کے دل پر بہت سارے پیغام اوراثرات نقش کر دیتے ہیں۔ اسی لیے قرآن مبین میں اللہ تعالیٰ نے جا بجا سابقہ اقوام کے قصص و واقعات بیان کیے ہیں تاکہ لوگ ان سے عبرت و نصیحت حاصل کریں اور اپنی زندگی میں وہ غلطیاں نہ کریں جو ان سے سرزد ہوئیں۔ دین اسلام ایک مکمل ضابطہ حیات ہے جو ہر موڑ پر مکمل راہ نمائی کرتا ہے خوشی ہو یاغمی ہواسلام ہر ایک کی حدود وقیوم کو بیان کرتا ہے تاکہ کو ئی شخص خوشی یا تکلیف کے موقع پر بھی اسلام کی حدود سےتجاوز نہ کرے فرمان نبوی ہے ’’ مومن کامعاملہ بھی عجیب ہے اس کا ہر معاملہ اس کے لیے باعث خیر ہےاور یہ چیز مومن کے لیے خاص ہے ۔ اگر اسے کوئی نعمت میسر آتی ہے تووہ شکرکرتا ہے اور یہ اس کےلیے بہترہے اور اگراسے کوئی تکلیف پہنچتی ہے تو وہ صبر کرتا ہے اور یہ بھی اس کےلیے بہتر ہے۔‘‘ نبی کریم ﷺ اور صحابہ کرام وتابعین کی سیرت وسوانح میں ہمیں جابجا پاکیزہ مزاح او رہنسی خوشی کے واقعات او رنصیت آموز آثار وقصص ملتے ہیں کہ جن میں ہمارے لیے مکمل راہ نمائی موجود ہے۔ لہذا اہمیں چاہیے کہ خوش طبعی اور پند نصیحت کےلیے جھوٹے ،من گھڑت اور افسانوی واقعات ولطائف کےبجائے ان مقدس شخصیات کی سیرت اور حالات کا مطالعہ کریں تاکہ ان کی روشنی میں ہم اپنے اخلاق وکردار اور ذہن وفکر کی اصلاح کرسکیں۔ زیر تبصرہ کتا ب’’نصیحت آموز اور عبرت انگیز سچے واقعات‘‘شیخ ابو عمار محمود المصری کی تصنیف ہے اس کتا ب میں فاضل مصنف نے قرآن وحدیث اور صحابہ وتابعین کی سیرت کی روشنی میں قارئین کرام کے لیے ہنسی مذاق کےاسلامی آداب واحکام بیان کیے ہیں اور اخلاق وکردار کی اصلاح کے لیے انتہائی سبق آموز اور نصیحت خیز واقعات ذکر کیے ہیں۔اس دلچسپ کتاب کو محترم جناب مولانا یاسر عرفات ﷾ نے اردو قالب میں ڈھالا ہے۔ اللہ تعالیٰ مصنف ، مترجم ،اور ناشرین کی اس کاوش کو قبول فرمائے اوراسے عوام الناس کی اصلاح کاذریعہ بنائے۔ (آمین)

 

عناوین صفحہ نمبر
عرض ناشر 21
خوشی طبعی اورہنسی مذاق کی جائز اورناجائز شکلیں
اسلام اورنشاط طبع 25
خوش طبعی اورسیرت  مطہرہ 25
نبی کریم ﷺ کی خوش مزاجی 27
ایک اچھوتا واقعہ 32
ایک اورقصہ 33
یہ اس کےبدلے ہے 35
الہی ہمارے اردگرد بارش برساہم پر نہ برسا 36
آپﷺ خون چکاں حالات میں بھی مسکراتے تھے 37
نبی کریم ﷺ کوگزند پہنچائی جاتی اورآپ جوابا مسکرادیتے 38
امت کو بشاشت  اورعمدہ بات کرنے کی نبوی ترغیب 39
صحابہ کرام ﷢کےنشاط طبع کے متعلق  اقوال وواقعات 39
خوش طبعی فقہاء اورمحدثین کی نظر میں 42
خوش طبعی کے آداب
مزاح کی تعریف 45
خوش طبعی کےلحاظ سےلوگوں کی تین اقسام 45
جائز خوش طبعی 46
حرام خوش طبعی 47
حرام خو ش طبعی کی صورتیں 49
کلیاں اورموتی
سچی توبہ 61
چور کی چوری 65
ہرمزان کےقبول اسلام کاواقعہ 66
سانپ اورنشے میں مست آدمی 67
رب کےدرکاسوالی جائے کبھی نہ خالی 68
وہ اللہ عزوجل کےخوف سے اپنی انگلیاں جلادیتاہے 69
سفینہ نجات 72
ایک عورت کی توبہ 74
مومن قوت کااستعمال محض رضائے الہی کی خاطر کرتاہے 76
پانچ چیزیں جو آپکو معصیت الہی سےدور لے جاتی ہیں 77
شیطان کےقدموں کی پیروی نہ کرو 79
چھے اشیاتجھے کافی ہے 83
جسم کے دوپاکیزہ اوردوخبیث اعضا 85
تم جہاں کہیں ہوموت تمھیں آگھیرے گی 86
اللہ تعالی سے راضی ہوجا 87
وہی اللہ ہے 89
سچ کی برکت 89
سموئیل کاایفائے عہد 91
دودھ فروخت کرنےوالی 92
ناقابل فراموش سبق 93
حضرت امیرمعاویہ ﷜ اوران کااچھوتا موقف 94
جودوسخا کیطرف سبقت کرو 96
کتا اورسخی غلا م 102
معززین کی لغزشوں کی تلافی کرنےوالا 96
بیوگان اوریتیموں سےحسن سلوک کی برکت 104
مومن کی فراست 108
اے میری قوم میں تم سےمال کامطالبہ نہیں کرتا 110
تمھارے گھر ہی سے بچا تقوی عیاں ہوتاہے 111
امام شافعی ﷫ اورامام احمد ﷫کےگھر میں 112
متقی دل کاصاف کلام 113
ہرجاندار کارزق اللہ کےذمے ہے 118
آزمایش 119
دنیا دنیا داروں کےساتھ ایسا ہی کرتی ہے 120
دودرہم کےعوض شادی 125
عمدہ شہر اپنے رب کےحکم سے نباتات اگاتاہے 128
بھنور جووزن میں سونے کےبرابر تھا 130
اے غلام اپنے باغ کی طرف بےخوف وخطر لوٹ جاؤ 133
بہتر بدلہ 136
اچھے کام بری موت سے بچالیتے ہین 138
عورتیں تین طرح کی ہوتی ہیں 139
شادی کی رات گراں قدروصیت 141
دنیا پانی کےگھونٹ کےبرابر بھی نہیں 142
مغیرہ بن شعبہ ﷜ کی ذہانت 143
جو ٹانگ پھیلاتا ہے جو ہاتھ نہیں پھیلاتا 143
عبداللہ بن عباس ﷜ نےخارجیوں کو لاجواب کردیا 144
ادب باعث نجات ہے 148
میں وہ شخص ہوں جو تجھے پہچانتا ہے 149
برے فہم کابرا نتیجہ 150
ایک کےبدلے دس 151
گفتگو کی چار صورتیں 152
ہمارے جگر گوشے 153
ایک ماں کی بیٹے کو وصیت 153
ممتا کادل 154
جیسا کرو گے ویسا بھر وگے 156
بیس سال ہمسائے کی تکالیف برداشت کیں تو وہ مسلما ن ہوگیا 157
امام بخاری ﷫ کی ذہانت کاعجیب وغریب واقعہ 157
ہرجھوٹے کےلیے پیغام 159
مجبور اوربے بس کی  فریاد رسی کون کرتا ہے ؟ 161
چغل چور ی سے بچ جاؤ 163
شیطانی حیلہ 164
جواپنے بھائی کےلیے گڑھا کھودے خودہی اس میں گرے گا 165
مکر کرنے والوں کاانجاام 167
حجاج اورچوبیس عورتوں کی کفالت کرنےوالے کاقصہ 168
ایک عورت کاشکوہ اورقاضی کی معاملہ فہمی 170
اونٹنی اورمہمان 172
انسان نمابھیڑیا اورگناہ کی آخری سیٹرھی 174
دعا کےعد م قبولیت کےدس اساب 177
مظلوم کی بددعا سے بچو 178
ہائے بچاؤ اے معتصم 179
گائے کی قیمت 181
اللہ اپنے بندوں کےبارے میں خوب خبر رکھنے والا ہے 184
بھسم کردینے والی ساعت اورپروانہ نجات 185
ہرجاندار کارزق اللہ کے ذمے ہے 187
اے مشکل کشا 189
سحری کی دعا 189
دعاکشادگی کی چابی ہے 190
دعاکادامن مت چھوڑو وہ شفا کےانتہائی قریب ہے 191
مشکلات کو ٹال دینے والی دعا کو لازمی اختیار کرو 193
اگر اللہ کو صدق دل سےپکارو گےتو وہ تمہاری مراد بھرلائے گا 194
جنگلی جانور اللہ کےلشکر کےلیے راستہ کشادہ کردیتے ہیں 195
طواف کےدوران خاتون کی بینائی لوٹ آئی 196
بار ش اتری اورسارا قبیلہ مسلمان ہوگیا 196
اللہ تعالی نے ہمیں آسمان سے پلا دیا 197
رات کےحصے 198
والدین کی دعائے برکت 200
وہ اپنے باپ کی ددعا سےکامیاب ہوااورمرتبہ عظیمہ کو پہنچ گیا 201
ماں کی دعا کےباعث اللہ تعالی اس کی حفاظت فرمالیتے ہیں 202
بیٹے کی دعا کےباعث باپ کو ہدایت مل گئی 203
اولاد کوبدعانہ دو 204
اس نےبددعا کی تواس کے ہاتھ ٹٹیرھے ہوگئے 205
ماں کی بددعا کی سبب اس کاسردھڑ سےجدا ہوگیا 206
قبرمیں سٹیمپ 207
ایک نوجوان اوراس کےخاندان کاخاتمہ 209
وہ تیری کھیتی اوریہ تیراحاصل ہے 217
جیسا کرو گے ویسا کرو گے 226
کسی مسلمان کوخوفزد ہ مت کرو 226
اللہ تعالی کو ظالموں کی کرتوتوں سے بے خبرنہ سمجھو 228
دن بدلتے رہتے ہیں 229
کیا ہے کوئی عبرت حاصل کرنےوالا 237
یہ کسی بشر کانہیں بلکہ رب البشر کاانصاف ہے 241
جیسا عمل  ویسا بدلہ 251
ظالموں کاانجام کیسا ہوا 253
ہر ظالم کےلیے عبرت 255
یقینا آخرت  کاعذاب زیادہ سخت اورباقی رہنے والاہے 259
بے شک تیرے رب کی پکڑیقینا بڑی سخت ہے 265
چالیس ہندوجو مسجد بابری کو منہدم کرنے کے بعداندھے ہوگئے 271
میں نے عمرو کاارادہ کیااوراللہ تعالی نےخارجہ کاارداہ کیا 273
اللہ تعالی ہی باکمال عدل اورفیصلہ کرنےوالا ہے 278
افسوس اس کوتاہی پرجو میں نےاللہ کےحق میں اختیار کی 288
میرے آقا میں نے اسے جنت پایا 294
لوگ پانچ کےمحتاج ہیں 295
امام ابو حنیفہ ﷫ کاورع 295
والد ہ کے احساسات کےلیے امام ابو حنیفہ ﷫ کاخوف 296
بادشاہ کے پاس جانے والے کے لیے ایک قیمتی نصیحت 297
اے نوجوان کیاہم نے تجھے ضائع کردیا؟ 297
اپنے مریضوں کاصدقے سے علاج کرو 299
مباحثے اورمناظرے میں ابو حنیفہ ﷫ کی فوقیت 301
امام ابو حنیفہ ﷫ جہم بن صفوان پر حجت قائم کرتے ہیں 304
اس نے سات جگہوں پر غلطی کی ہے 311
مجھے معلوم ہوگیا کہ یہ آدمی یقینا فقیہ ہے 312
یہ کس کےفتوے ہیں 313
وجود خالق کے منکرین پر اقامت حجت 314
رحمن عرش پر مستوی ہوا 314
خواب مسرت آفریں ہوتاہے  فریبی نہیں 315
کھڑا ہوجاتوعلم کاخزانہ ہے 316
مجھے معلوم ہوگیا کہ اللہ نے بلا وجہ تجھے رخصت نہیں نوازی 317
عفو اوردرگرز کی آخری بلندی 317
نبی مکرم ﷺ کے تذکرے کےوقت ان کی حالت ایسی ہی ہوتی تھی 318
نبی اکرم ﷺ کاادب اسی طرح ہوتاہے 319
حدیث رسول ﷺ کی تعظیم اسی طرح ہوتی ہے 319
اس نے مجھے باندھنا چاہا لیکن میں نے  اسے باندھ دیا 320
فرط ذکا کےباعث اس موقف سے گلوخاصی کورالی 320
یہ آدمی علم کے ایک عظیم مرتبے پر فائز ہے 322
انھیں بچھو نے ڈس لیا لیکن حدیث رسول اللہ ﷺ منقطع نہیں کی 322
رسول اللہ ﷺ کی عظمت کی خاطر سواری ترک کردی 323
ان کاقرآن کےساتھ ایسا ہی حال تھا 323
آپ پر تین دن کےروزے لازم ہیں 324
تجھے کوڑے مارے جائیں گے 324
بیشک کشادگی اللہ کےسامنے انکساری ہی سے آتی ہے 325
اگر میں دنیا سے صرف اپنی ایک چادر کامالک بھی ہوا تو اسی سے ان کی غم گساری کروں گا 326
امام مالک ﷫ کی فراست 326
عجیب خواب 327
وہ دنیا کےسورج کی مانند تھا 327
اگر تجھ سےاس نوجوان کی فقاہت فوت ہوگئی توڈرکہ قیامت تک نہ پا سکے گا 327
اخلاص غالب آتاہے 328
واللہ توعلم میں تیراندازی سےزیادہ ماہر ہے 329
آدھی کھالے اورآدھی پھینک دے 329
مخلوق کےذریعے خالق پر استدلال کرو 330
امام شافعی ﷫ کاایک عدیب ترین موقف 331
ایمان قول اروعمل ہے 332
سخاوت اورایثار کی نعمت 333
ہم نے اپنی بدعت ترک کی اوران کی اتباع کرلی 333
ان کادنیا میں زہد اسی طرح تھا 334
کتاب وسنت کو ترک کرنے والے تجھ پر لازم ہے 335
امام شافعی ﷫ کی امرا کےاتالیق کو وصیت 335
سچا بھائی چارہ اسی طرح ہوتاہے 336
ایک گراں قدر نصحیت ہے 338
لوگوں کےمتعلق حسن ظن رکھنا 338
کیاہی درست نہیں کہ ہم بھائی بھائی رہیں اگرچہ کسی مسئلے پر اتفاق نہ کرسکیں 338
مرض الموت میں امام شافعی ﷫ کی گفتگو 339
ایک واعظ کادل چسپ واقعہ 340
اگر میں لوگوں سےکوئی شے قبول کرتاہوتا توتجھ سے بھی وصول کرلیتا 342
اامام احمد ﷫ کےکپڑوں کی چوری کاقصہ 342
اللہ تعالی ان کبار ائمہ واعلام پر رحمت فرمائے 343
اگر لوگ اچھے انداز سے سوال کریں تو ہم کسی ایک کومحروم نہ رکھیں 343
ایک ہزار دینار کےبجائے دوہزار دینار 344
راستے میں موت 349
وہ گرمر گیا جب وہ گانا گا رہاتھا 352
وہ منشیات کے سبب اپنے بچے کو ذبح کردتیا ہے 352
ہم برے خاتمے سےاللہ کی پنا ہ مانگنے ہیں 353
اپنے آپ کو اورابنے گھروالوں کو آگ سے بچا لو 354
حرام عشق کابدترین انجام 361
یقینا یہ ایک الم ناک واقعہ ہے 364
ویڈیو کیسٹ جس نے میری زندگی برباد کردی 377
گناہ کی نحوست 382
یہ دوسرا قصہ ہے 383
دنیا سے بچ جاؤ عورتوں سے بچ جاؤ 384
ایڈز کی مجلس میں خوش آمدید 389
دیو رموت ہے 391
وہ اپنے بچے کودسویں منزل سے پھینک دیتی ہے 394
پسندکی شادی اورایک عجیب مصیبت 397
بیٹی کی پسند شادی پر باپ کےدماغ کی شریان پھٹ گئی 399
وہ دائمی شراب نوشی کےبعد سجدے کی حالت میں دم توڑگیا 400
اللہ نے جس کےلیے روشنی نہیں بنائی اس کےلیے کوئی روشنی نہیں 403
کیا اللہ اپنے بندوں کوکافی نہیں ؟ 405
ہم برے خاتمے سے اللہ کی پناہ چاہتے ہیں 406
شعلہ زن قبرستان 406
جنت کے طلب گار 407
مجھے اپنی رحمت سے جنت میں داخل فرما 408
معجزات اورکرامات
چاندکادو ٹکڑے ہونا 413
کھجور کےتنے کاگریہ وزاری کرنا 413
آپ ﷺ کی انگلیوں کےدرمیان سے پانی پھوٹ پڑا 415
کھانے کی تسبیح 416
اونٹ اورآداب مصطفی ﷺ 417
اونٹ نبی کریم ﷺ کےسامنے روتا اورشکایت کرتا ہے 418
بے دودھ بکری کےتھن سےدود ھ کااترنا 419
جنگلی جانوروں کانبی مکرم ﷺ کااحتر ام بجالانا 421
بھیڑیے کی شہاد ت رسالت 421
نبی کریم ﷺ چالیس جنتی آدمیوں جتنی طاقت رکھتے تھے 422
اگر وہ نبی کریم ﷺ کےقریب ہوتا توفرشتے اسے اچک لیتے 424
بچوں کی نبی مکرم ﷺ سےمحبت 424
رسول اللہ ﷺ کودھوکہ دینے والے زمین اگل دیتی ہے 425
اللہ آسمان سے بجلی گرادیتا ہے 426
قبول ہونے والی دعااور بابرکت بارش 427
دعائے نبوی کی برکت سےسیدنا ابو ہریرہ ﷜ کبھی حدیث نہ بھولے 428
شیطانی جن اور انسان سیدنا عمر ﷜ سےبھاگتے ہیں 429
اے ساریہ پہاڑ 431
عمر بن خطاب ﷜ کیطرف نیل کی طرف خط 432
ایسا عبور کہ تاریخ میں جس کی کوئی نظیرنہیں 433
اللہ پر پختہ اعتماد نے اس کی نظر لوٹا دی 436
آسمانی بارش اورقبول اسلام 436
سفینہ ﷜ رسول اللہ ﷺ کےغلام اورشیر 437
سیدنا حسن اورحسین ﷢ روشنی کی کرن میں چلتے جارہے تھے 438
سیدنا جعفر ﷜جنت میں فرشتوں کےساتھ اڑا رہے ہیں 439
فرشتے سیدنا حنظلہ ﷜ کو غسل دیتے ہیں 441
یہ خبیب ﷜ کےلیے اللہ کی طرف سےرزق ہے 443
صلہ بن اشیم ﷜ اورشیر 444
نوادرات وعجائبات
عجیب وغریب باتیں سننے کارسیا شخص 449
موت تک گھوڑے کی وفاداری 449
حفاظتی شیر اورچیتے 450
بندر حدود قائم کرتے ہیں 450
والدین سےنیکی کرنے ولا پرندہ 451
جانوروں میں ایثار 452
ایک کواآدمی کوموت سے بچاتا ہے 453
ایک بندر انسان کی خدمت کرتا ہے 454
ہاتھیوں کاانتقام 454
پرندے کی ذہانت یاسانپ کی موت ؟ 458
چیونٹی کی حرص 459
مچھر اورہاتھی 459
کتا،مرغا اورگدھا 460
کتے کی جاں نثاری 461
پرندہ اورکشتی کےمسافر 463
کتااوروٹی 464
کتا ارو اثردہا 465
قاری قرآن اورچیل 466
آدمی کی نجا وہندہ ایک مچھلی 467
تاجر اوردوکبوتر یاں 470
ایک گائے اوربادشاہ 474
ایک بیماربکری 475
ایک مچھلی اوربچہ 476
لقمے کےبدلے لقمہ 479
ایک کتا خیانت کرنےوالوں کوسز ادینا ہے 480
شیر اورخرگوش کی ذہانت 484
سانپ اوربندر 483
ایک گائے اورنیک بچہ 487
کتااپنے مالک کاانتقام لیتاہے 489
قاضی شکر اللہ سندھی اوران کاعجیب وغریب واقعہ 491
غیرمنقوظ وصیت 492
عجیب وغریب افعال 495
برف کاہوٹل 496
سمندر کی گہرئیوں میں ڈاکٹر مچھلیاں 496
کھوپڑیوں کی غلط کاری 498
پیسوں کی پیدائش 498
سب سے انوکھی بیماری 499
مریضوں کوہنساہنسا کر علا ج معالجہ کرنا 499
ڈاکٹر مچھلی 500
ایک انوکھا پودا 502
زبانیں نشانیاں ہیں 503
قریب تھاکہ نہ پیاس سےمرجاتا اورپانی اس کےسامنے تھا 503
تعجب خیز اورانوکھے اوقاف 504
ایک چیتے کےبچے کاقتل اوردس سےاوپر درندوں کاحملہ 506
اس نےشیر کےساتھ ایک بندے کمرے میں رات گزاری 508
نصرانی رومی ایک دادے اورمسلمان عربی پوتے کی ملاقات 511
کیا وہ بغیر بدلے اسے قتل کرناچاہتا ہے ؟ 514
دعائے مقبول 517

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
7.9 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam سیرت سیرت النبی ﷺ

رسول اللہ ﷺ کی مسکراہٹیں ( پروفیسر محمد رفیق )

رسول اللہ ﷺ کی مسکراہٹیں ( پروفیسر محمد رفیق )

 

مصنف : پروفیسر محمد رفیق چودھری

 

صفحات: 122

 

سیرت  النبی ﷺکا موضوع گلشن سدابہار کی طرح   ہے ۔اس  موضوع پر ہرنئی تحقیق قوس قزح کےہر رنگ کو سمیٹتی اور  نکھارتی نظر آتی ہے۔ سیرت طیبہ کا موضوع اتنا متنوع ہے کہ ہر وہ مسلمان  جو قلم اٹھانےکی سکت رکھتاہو،اس  موضوع پر لکھنا اپنی سعادت سمجھتا ہے۔ ہر قلم کار اس موضوع  کو ایک نیا اسلوب دیتا ہے،اور قارئین  کو رسول اللہﷺ کی  زندگی  کے ایک  نئے باب  سے  متعارف کرواتا ہے ۔ رہبر انسانیت سیدنا محمد رسول اللہ ﷺ قیامت تک آنے والےانسانوں کےلیے’’اسوۂ حسنہ‘‘ ہیں ۔ حضرت  محمد ﷺ ہی اللہ  تعالیٰ کے بعد ،وہ کامل  ترین ہستی ہیں جن کی زندگی  اپنے اندر عالمِ انسانیت کی مکمل  رہنمائی کا پور سامان رکھتی ہے ۔ گزشتہ چودہ صدیوں  میں اس  ہادئ کامل ﷺ کی سیرت وصورت پر ہزاروں کتابیں اورلاکھوں مضامین لکھے جا چکے ہیں ۔اورکئی ادارے صرف سیرت نگاری پر کام کرنے کےلیےمعرض وجود میں آئے  ۔ پورے عالمِ اسلام  میں  سیرت  النبی ﷺ کے مختلف گوشوں پر سالانہ کانفرنسوں اور سیمینار کا انعقاد کیا  جاتاہے   جس میں  مختلف اہل علم  اپنے تحریری مقالات پیش کرتے ہیں۔ ہنوذ یہ سلسلہ جاری وساری ہے ۔ زیر نظر کتاب’’ رسول اللہ ﷺ کی مسکراہٹیں‘‘    مجلہ ’’  محدث ‘‘ لاہور کے  معروف   مضمون نگار ،مصنف کتب کثیرہ جناب مولانا محمد رفیق چودھری ﷾ کی تصنیف ہے۔ موصوف نے  اس کتاب میں  رسول اللہ ﷺ  کے 72؍ایسے  واقعات بحوالہ قلم بند کیے ہیں کہ جن مواقع پر آپ   ﷺ نے ہنس کر اور مسکرا کر خوشی کا اظہار فرمایا۔ مصنف کتاب ہذا اس کتاب  کے علاوہ  تقریباً دودرجن کتب   کے مصنف ومترجم ہیں  جن میں قرآن کریم کا اردو  وانگلش ترجمہ اور تفسیر البلاغ بھی شامل ہے ۔ اللہ تعالیٰ ان کی تدریسی وتعلیمی اور تحقیقی وتصنیفی خدمات کو قبول فر ما ئے(آمین)

عناوین صفحہ نمبر
دیباچہ 9
حضرت  ابو ہریرہ ﷜ کے واقعے پرمسکرانا 12
اللہ تعالیٰ کے مسکرانے پر 14
ایک شخص کی جانب سے اللہ کی طرف مذاق کی نسبت کرنے پر 16
آخرت میں اللہ تعالیٰ کے سامنے ایک شخص کے اقرار گناہ پر 17
اللہ تعالیٰ سےایک شخص کے گواہ طلب کرنے پر 18
بدر میں جبرئیل ؑ کےاترنے پر 19
جبرئیل ﷤ کے ہنسنے پر 20
سورۃ انشراح نازل ہونے پر 21
سورۂ الکوثر نازل ہونے پر 22
سورۃ الفتح نازل ہونے پر 23
خطبہ جمعہ ارشاد فرماتےوقت 24
درود شریف کی بشارت سن کر 25
انصار کے جمع ہونے پر مسکرانا 26
حضرت انس ﷜ کودیکھ کر مسکرانا 27
حضرت ابوبکر اورحضرت عمر w کودیکھ کر 28
حضرت عمر ﷜ سےعورتوں کےڈرنے پر 29
حضرت عمر﷜ کی بات پر 30
حضرت عمر ﷜کی ایک  اور بات پر 31
حضرت عمر ﷜کی حکمت بھری بات سن کر 34
حضرت سعد ﷜کے تیر چلانے پر 36
حضرت ابی بن کعب ﷜کی غیرت پر 37
حضرت صہیب ﷜کاجواب سن کر 38
حضرت طلحہ ﷜ کی بات سن کر 40
حضرت عبد اللہ بن مغفل ﷜کی بات پر 42
حضرت رفاعہ ﷜کےوالد کی قسم پر 43
حضرت خالد بن ولید ﷜کےاسلام لانے پر 44
حضرت عدی بن حاتم ﷜کےاسلام لانے پر 46
حضرت کعب بن زبیر ﷜کےاسلام لانے پر 48
حضرت عکرمہ ﷜کےاسلام لانے پر 49
حضرت ابو المنذر جارود ﷜کےاسلام لانے پر 51
حضرت سلمہ rکے بیعت کرنے پر 52
حضرت حذیفہ ﷜سےجاسوسی کاواقعہ سن کر 54
حضرت نعیمان ﷜کےاونٹ ذبح  کرنے پر 56
حضرت جعفر ﷜کی آمد پر 57
حضرت ابوطلحہ ﷜کےباغ وقف کرنے پر 58
حضرت زید بن ارقم ﷜ کی تصدیق نازل ہونے پر 59
حضرت  ابوالہیثم﷜ کی بات سن کر 61
حضرت فضالہ بن عمیر ﷜کی بات سن کر 62
حضرت عباس ﷜کی حرص دیکھ کر 63
ایک صحابی کے دم کرنے پر 64
ایک انصاری کی بات پر 66
ایک شخص کےجواب پر 67
ایک سوار کی بات سن کر 69
ایک دیہاتی کی عجیب بات سن کر 70
ایک دیہاتی کی بات پر 71
صحابہ کرام کے بارش سے بچنے پر 72
صحابہ کرام کونماز پڑھتے دیکھ کر 73
طائف کے سفرکے دوران میں 74
صحابہ کرام کے جذبات دیکھ کر 75
حضرت عائشہ r کی پسند دیکھ کر 76
حضرت عائشہ rکی ایک بات پر 78
حضرت عائشہ r کے تہمت سے بری ہونے پر 79
حضرت عائشہ r کی سہیلیوں کے کھیلنے پر 80
حضرت عائشہ r کے تشبیہ دینے پر 81
حضرت عائشہ r کی ذہانت پر 82
حضرت عائشہ r کےایک فعل پر 83
حضرت ام حبیبہ rکاحال سن کر 84
حضرت زینب r کے نکاح کے موقع پر 87
حضرت ام عمارہ r کےحملہ کرنے پر 89
حضرت ام حرام r کے گھر میں 91
حضرت رفاعہ ﷜کی بیوی کی بات پر 93
ایک شخص سے خوش طبعی 94
ایک بڑھیا سے خوش طبعی 95
ایک یہودی کےغصے پر 96
ایک یہودی کی بات سن کر 99
ایک منافق کی آمد پر 100
منافق عبد اللہ بن ابی کے جنازے کے واقعہ پر 101
ایک یہودی عالم کی بات سن کر 103
شیطان کے اپنے سر پر مٹی ڈالنے پر 104
بسم اللہ کہنے سے شیطان کے قے کرنے پر 105
حضرت ابو لبابہ ﷜ کی توبہ پر 106
حضرت کعب بن مالک ﷜ کی توبہ پر 108

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
7.2 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam اسلام اعمال توحیدوشرک زبان سنت علماء

قرۃ عیون الموحدین جلد دوم

قرۃ عیون الموحدین جلد دوم

 

مصنف : عبد الرحمن بن حسن آل شیخ

 

صفحات: 355

 

اللہ تبارک وتعالیٰ کے تنہالائقِ عبادت ہونے ، عظمت وجلال اورصفاتِ کمال میں واحد اور بے مثال ہونے اوراسمائے حسنیٰ میں منفرد ہونے کا علم رکھنے اور پختہ اعتقاد کےساتھ اعتراف کرنے کانام توحید ہے ۔توحید کے اثبات پر کتاب اللہ اور سنت رسول ﷺ میں روشن براہین اور بے شمار واضح دلائل ہیں ۔ اور شرک کام معنی یہ کہ ہم اللہ کے ساتھ کسی کو شریک ٹہرائیں جبکہ اس نےہی ہمیں پیدا کیا ہے ۔ شرک ایک ایسی لعنت ہے جو انسان کوجہنم کے گڑھے میں پھینک دیتی ہے قرآن کریم میں شرک کوبہت بڑا ظلم قرار دیا گیا ہے اور شرک ایسا گناہ کہ اللہ تعالی انسان کے تمام گناہوں کو معاف کردیں گے لیکن شرک جیسے عظیم گناہ کو معاف نہیں کریں گے ۔شرک اس طرح انسانی عقل کوماؤف کردیتا ہےکہ انسان کوہدایت گمراہی اور گمراہی ہدایت نظر آتی ہے ۔نیز شرک اعمال کو ضائع وبرباد کرنے والا اور ثواب سے محروم کرنے والا ہے ۔ پہلی قوموں کی تباہی وبربادی کاسبب شرک ہی تھا۔ چنانچہ جس کسی نے بھی محبت یا تعظیم میں اللہ کے علاوہ کسی کواللہ کے برابر قرار دیا یا ملت ابراہیمی کے مخالف نقوش کی پیروی کی وہ مشرک ہے۔تردید شرک اور اثبات کےسلسلے میں اہل علم نے تحریر اور تقریری صورت میں بےشمار خدمات انجام دیں۔ ماضی میں شیخ الاسلام محمد بن الوہاب﷫ کی اشاعت توحید کےسلسلے میں خدمات بڑی اہمیت کی حامل ہیں ۔شیخ الاسلام ،مجدد العصر محمد بن عبد الوہاب ﷫ کی شخصیت کسی تعارف کی محتاج نہیں ہے۔آپ ایک متبحر عالم دین،قرآن وحدیث اور متعدد علوم وفنون میں یگانہ روز گار تھے۔آپ نے اپنی ذہانت وفطانت اور دینی علوم پر استدراک کے باعث اپنے زمانے کے بڑے بڑے علماء دین کو متاثر کیا اور انہیں اپنا ہم خیال بنایا۔آپ نے قرآن وسنت کی توضیحات کے ساتھ ساتھ شرک وبدعات کے خلاف علمی وعملی دونوں میدانوں میں زبر دست جہاد کیا۔آپ متعدد کتب کے مصنف ہیں۔جن میں سے ایک کتاب (کتاب التوحید) ہے۔مسائل توحید پر یہ آپ کی بہترین کتابوں میں سے ایک ہے،اور سند وقبولیت کے اعتبار سے اس کا درجہ بہت بلند ہے۔علماء کا اس بات پر اتفاق ہ کہ اسلام میں توحید کے موضوع پرکتاب التوحید جیسی کوئی کتاب نہیں لکھی گئی۔یہ کتاب توحید کی طرف دعوت دینے والی ہے ۔ایک طویل مدت سے دنیائے علم میں اس کی اشاعت جاری ہے اور اب تک عرب وعجم میں کروڑوں بے راہروں کو ہدایت کا راستہ دکھانے اور انہیں کفر وضلالت کے اندھیروں سے نکال کر توحید کی روشنی میں لانے کا فریضہ ادا کر چکی ہے۔ اس کتاب کی اہمیت کے افادیت کے پیشِ نظر متعد د اہل علم نےاس کی شروحات بھی لکھی ہیں اور کئی علماء نے اس کتاب کےمتعد د زبانوں میں ترجمہ بھی کیا ہے۔اردو زبان میں بھی اس کےمتعدد علماء نےترجمے کیے جسے سعودی حکومت اور اشاعتی اداروں نے لاکھوں کی تعداد میں شائع کر کے فری تقسیم کیا ہے۔ زیر تبصرہ کتاب ’’قرۃ عیون الموحدین ‘‘شیخ الاسلام محمد بن عبد الوہاب﷫ کے پوتے امام الموحّدین علامہ شیخ عبد الرحمٰن بن حسن ﷫ کے کتاب التوحید پر مختصر حاشیہ کا ترجمہ ہے ۔یہ حاشیہ اہل علم کے ہاں قرة عيون الموحّدين في تحقيق دعوة الانبياء والمرسلين‘‘ کے نام سےمشہور ومعروف ہے ۔محترم جناب عطاء اللہ ثاقب صاحب نے اس کتاب کو اردو قالب میں ڈھالا ہے۔

عناوین صفحہ نمبر
باب فضل التوحيد ومايكفي من السدنوب 53
باب من حقق التوحيد دخل الجنة بغيرحساب 78
باب الخوف من الشرك 98
باب الدعاءالي شهادة ان الااله الاالله 106
باب تفسيرالتوحيد وشهادة ان الااله الاالله 126
باب من الشرك لبس الحلقة والخيط ونحوهما 130
باب ماجاء في السرقي والتمائم 130
باب من تبرك  بشجر اورحجر ونحوهما 144
باب ماجاء في الذبح لغيرالله 158
باب لايذبح الله بمكان يذبيح فيه لغير الله 170
باب من الشرك النذرولغير الله 182
باب من الشرك الاستعاذة بغيرالله 195
باب من الشرك ان يسغيث بغيرالله لو يدعوبغيره 204
باب قول الله تعالي ايشركون مالايخلق شياوهم يخلقون 211
باب وقول الله تعالي حتي اذا فزع عن قلوبهم 218
باب لشفاعة 243
باب قو ل الله تعالي انك لاتهدي من احببت 256
باب ماجاء ان سبب كفر بني ادم وتركهم دينهم  هو الفق في الصالحيبن 267
باب ماجاء من القليظ فيمن عبدالله عند قبررجل  صالح فكيف اذاعبده 289
باب ماجاء الغلو في قبور الصالحين يصيترها اويشاناتعدي من دون الله 292
باب ماجاء في حيايةالمصطفي  جناب التوجيد رسدكل طريق يوصل الي شرك 306
باب ماجاء ان بعض هذا الامة يعبد الوثان 211
باب ماجاء في السحر 341

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
6.6 MB ڈاؤن لوڈ سائز

Categories
Islam اسلام اعمال توحیدوشرک زبان سنت علماء

قرۃ عیون الموحدین جلد اول

قرۃ عیون الموحدین جلد اول

 

مصنف : عبد الرحمن بن حسن آل شیخ

 

صفحات: 353

 

اللہ تبارک وتعالیٰ کے تنہالائقِ عبادت ہونے ، عظمت وجلال اورصفاتِ کمال میں واحد اور بے مثال ہونے اوراسمائے حسنیٰ میں منفرد ہونے کا علم رکھنے اور پختہ اعتقاد کےساتھ اعتراف کرنے کانام توحید ہے ۔توحید کے اثبات پر کتاب اللہ اور سنت رسول ﷺ میں روشن براہین اور بے شمار واضح دلائل ہیں ۔ اور شرک کام معنی یہ کہ ہم اللہ کے ساتھ کسی کو شریک ٹہرائیں جبکہ اس نےہی ہمیں پیدا کیا ہے ۔ شرک ایک ایسی لعنت ہے جو انسان کوجہنم کے گڑھے میں پھینک دیتی ہے قرآن کریم میں شرک کوبہت بڑا ظلم قرار دیا گیا ہے اور شرک ایسا گناہ کہ اللہ تعالی انسان کے تمام گناہوں کو معاف کردیں گے لیکن شرک جیسے عظیم گناہ کو معاف نہیں کریں گے ۔شرک اس طرح انسانی عقل کوماؤف کردیتا ہےکہ انسان کوہدایت گمراہی اور گمراہی ہدایت نظر آتی ہے ۔نیز شرک اعمال کو ضائع وبرباد کرنے والا اور ثواب سے محروم کرنے والا ہے ۔ پہلی قوموں کی تباہی وبربادی کاسبب شرک ہی تھا۔ چنانچہ جس کسی نے بھی محبت یا تعظیم میں اللہ کے علاوہ کسی کواللہ کے برابر قرار دیا یا ملت ابراہیمی کے مخالف نقوش کی پیروی کی وہ مشرک ہے۔تردید شرک اور اثبات کےسلسلے میں اہل علم نے تحریر اور تقریری صورت میں بےشمار خدمات انجام دیں۔ ماضی میں شیخ الاسلام محمد بن الوہاب﷫ کی اشاعت توحید کےسلسلے میں خدمات بڑی اہمیت کی حامل ہیں ۔شیخ الاسلام ،مجدد العصر محمد بن عبد الوہاب ﷫ کی شخصیت کسی تعارف کی محتاج نہیں ہے۔آپ ایک متبحر عالم دین،قرآن وحدیث اور متعدد علوم وفنون میں یگانہ روز گار تھے۔آپ نے اپنی ذہانت وفطانت اور دینی علوم پر استدراک کے باعث اپنے زمانے کے بڑے بڑے علماء دین کو متاثر کیا اور انہیں اپنا ہم خیال بنایا۔آپ نے قرآن وسنت کی توضیحات کے ساتھ ساتھ شرک وبدعات کے خلاف علمی وعملی دونوں میدانوں میں زبر دست جہاد کیا۔آپ متعدد کتب کے مصنف ہیں۔جن میں سے ایک کتاب (کتاب التوحید) ہے۔مسائل توحید پر یہ آپ کی بہترین کتابوں میں سے ایک ہے،اور سند وقبولیت کے اعتبار سے اس کا درجہ بہت بلند ہے۔علماء کا اس بات پر اتفاق ہ کہ اسلام میں توحید کے موضوع پرکتاب التوحید جیسی کوئی کتاب نہیں لکھی گئی۔یہ کتاب توحید کی طرف دعوت دینے والی ہے ۔ایک طویل مدت سے دنیائے علم میں اس کی اشاعت جاری ہے اور اب تک عرب وعجم میں کروڑوں بے راہروں کو ہدایت کا راستہ دکھانے اور انہیں کفر وضلالت کے اندھیروں سے نکال کر توحید کی روشنی میں لانے کا فریضہ ادا کر چکی ہے۔ اس کتاب کی اہمیت کے افادیت کے پیشِ نظر متعد د اہل علم نےاس کی شروحات بھی لکھی ہیں اور کئی علماء نے اس کتاب کےمتعد د زبانوں میں ترجمہ بھی کیا ہے۔اردو زبان میں بھی اس کےمتعدد علماء نےترجمے کیے جسے سعودی حکومت اور اشاعتی اداروں نے لاکھوں کی تعداد میں شائع کر کے فری تقسیم کیا ہے۔ زیر تبصرہ کتاب ’’قرۃ عیون الموحدین ‘‘شیخ الاسلام محمد بن عبد الوہاب﷫ کے پوتے امام الموحّدین علامہ شیخ عبد الرحمٰن بن حسن ﷫ کے کتاب التوحید پر مختصر حاشیہ کا ترجمہ ہے ۔یہ حاشیہ اہل علم کے ہاں قرة عيون الموحّدين في تحقيق دعوة الانبياء والمرسلين‘‘ کے نام سےمشہور ومعروف ہے ۔محترم جناب عطاء اللہ ثاقب صاحب نے اس کتاب کو اردو قالب میں ڈھالا ہے۔

 

عناوین صفحہ نمبر
باب فضل التوحيد ومايكفي من السدنوب 53
باب من حقق التوحيد دخل الجنة بغيرحساب 78
باب الخوف من الشرك 98
باب الدعاءالي شهادة ان الااله الاالله 106
باب تفسيرالتوحيد وشهادة ان الااله الاالله 126
باب من الشرك لبس الحلقة والخيط ونحوهما 130
باب ماجاء في السرقي والتمائم 130
باب من تبرك  بشجر اورحجر ونحوهما 144
باب ماجاء في الذبح لغيرالله 158
باب لايذبح الله بمكان يذبيح فيه لغير الله 170
باب من الشرك النذرولغير الله 182
باب من الشرك الاستعاذة بغيرالله 195
باب من الشرك ان يسغيث بغيرالله لو يدعوبغيره 204
باب قول الله تعالي ايشركون مالايخلق شياوهم يخلقون 211
باب وقول الله تعالي حتي اذا فزع عن قلوبهم 218
باب لشفاعة 243
باب قو ل الله تعالي انك لاتهدي من احببت 256
باب ماجاء ان سبب كفر بني ادم وتركهم دينهم  هو الفق في الصالحيبن 267
باب ماجاء من القليظ فيمن عبدالله عند قبررجل  صالح فكيف اذاعبده 289
باب ماجاء الغلو في قبور الصالحين يصيترها اويشاناتعدي من دون الله 292
باب ماجاء في حيايةالمصطفي  جناب التوجيد رسدكل طريق يوصل الي شرك 306
باب ماجاء ان بعض هذا الامة يعبد الوثان 211
باب ماجاء في السحر 341

ڈاؤن لوڈ 1
ڈاؤن لوڈ 2
6.7 MB ڈاؤن لوڈ سائز